BN

افتخار گیلانی



کرپشن سے نجات کیسے ہو؟


اسی دوران ایک ایسا واقعہ پیش آیا، جن سے مجھے اس سوال کا تشفی بخش جواب مل گیا۔ دس دن کے دورے کا آخری ڈنر ڈینش انسٹی ٹیوٹ آف ہیومن رائیٹس میں طے تھا۔ اس ادارے کے ایک سرکردہ رکن ایک پاکستانی نژاد پروفیسر بھی اس ڈنر میں شامل تھے جو کوپن ہیگن یونیورسٹی سے درس و تدریس کی ڈیوٹی سے ریٹائرڈ ہوچکے تھے۔ میں نے جب ان سے یہ سوال کیا تو کچھ دیر غور و فکر کرنے کے بعد انہوں نے کہا کہ حتمی جواب شاید وہ بھی نہیں دے پائیں گے، مگر بتایا کہ وہ
بدھ 26 جون 2019ء

کرپشن سے نجات کیسے ہو؟

منگل 25 جون 2019ء
افتخار گیلانی
بھارت اور پاکستان میں تقریباً ہر انتخاب میں بدعنوانی ایک اہم موضوع ہوتی ہے۔ انتخابی مہم کے دوران تقریروں اور اپنے منشوروں میں سیاسی پارٹیاں بد عنوانی سے پاک وصاف انتظامیہ فراہم کرنے کے وعدے کرتی ہیں۔ مگر اقتدار میں آکر جلد ہی ان کو احساس ہوتا ہے کہ دریا میں تیرتے ہوئے مگرمچھ سے بیر نہیں رکھا جاسکتا ہے۔ سیاستدانوں کو علم ہے کہ انتخابات کے دوران قوم پرست جذبات کو ابھارنا اور کرپشن سے چھٹکارا دینے کے نعرے سے مڈل کلاس کو اچھی طرح سے رجھایا جا سکتا ہے۔ یہ اب ایک آزمودہ ہتھیار بن چکا
مزید پڑھیے


کون ہیں بھارت کے نئے وزیر خارجہ جے شنکر

بدھ 12 جون 2019ء
افتخار گیلانی
ریٹائرمنٹ کے فوراً بعد ہی جے شنکر نے کارپوریٹ گروپ ٹاٹا کے بیرون ملک مفادات کے ڈویژن کے سرابراہ کا عہدہ سنبھالا۔ اس حوالے سے بھارتی فضائیہ کیلئے ایف ۔16طیاروں کی خریداری کیلئے امریکی فرم لاک ہیڈ مارٹن کیلئے وکالت کا کام کر رہے تھے۔ لاک ہیڈ مارٹن کو کنٹریکٹ ملنے سے ٹاٹا کو ان دیکھ ریکھ ،پرزے سپلائی کرنے اور بھارت میں ان طیاروں کو تیار کرنے کا کام مل جاتا۔ بتایا جاتا ہے کہ 1980ء میں واشنگٹن میں بھارتی سفارت خانہ میں پوسٹنگ کے دوران ہی امریکی انتظامیہ نے ان پر نظر کرم کی بارش شروع کر
مزید پڑھیے


کون ہیں بھارت کے نئے وزیر خارجہ جے شنکر

منگل 11 جون 2019ء
افتخار گیلانی
بھارت کے موجودہ وزیر خارجہ سبرامنیم جے شنکر سابق وزیر اعظم من موہن سنگھ کے چہیتے آفیسر تھے۔ آخر کیوں نہ ہوتے۔ بھارتی فارن آفس میں امریکہ ڈیسک کے سربراہ کے ہوتے ہوئے انہوں نے بھارت ۔امریکہ جوہری معاہدہ کو حتمی شکل دینے اور اسکو امریکی کانگریس سے منظوری دلوانے میں کلیدی رول ادا کیا تھا۔ انعام کے طور پر 2013ء میں من موہن سنگھ نے ان کا نام خارجہ سیکرٹری کے لئے تجویز کیا، جس کی کانگریس پارٹی کے اندر سے سخت مخالفت ہوئی۔ وزیر اعظم کو بالآخر سرخم کرکے سجاتا سنگھ کو خارجہ سیکرٹری بنانا پڑا۔ ایک طرح
مزید پڑھیے


امیت شاہ : کشمیر کیلئے امتحان کی گھڑی

بدھ 05 جون 2019ء
افتخار گیلانی
بطور وزیر داخلہ کشمیر کی صورت حال تو امیت شاہ کیلئے چیلنج ہوگی، مگر کشمیریوں کیلئے بھی ان سے نمٹنا ایک بڑے امتحان سے کم نہیں ہوگا۔ پاکستانی حکمرانوں اور افسروں کی کشمیری راہنمائوںکے ساتھ ملاقاتوںپر پابندی لگانے کے بعد مودی حکومت کی اگلی کوشش مسئلہ کشمیر کو دوطرفہ مذاکرات کے عمل سے خارج کروانے کی ہوگی۔ افواہیں گشت کررہی ہیں کہ جس طرح 1973ء کے شملہ سمجھوتہ میں آنجہانی وزیراعظم اندراگاندھی نے اس مسئلے کی بین الا قوامی نوعیت کو بھارت اور پاکستان کے درمیان دوطرفہ معاملے میں تبدیل کرواکے تاریخ میں اپنا نام درج کروایا تھا، اسی طرح
مزید پڑھیے




امیت شاہ : کشمیر کیلئے امتحان کی گھڑی

منگل 04 جون 2019ء
افتخار گیلانی
دہشت گردی کے الزامات میں ملوث پرگیہ سنگھ ٹھاکر کو جب حکمران بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے بھوپال سے انتخابی میدان میں اتارا، تو ایک ساتھی نے ازراہ مذاق لقمہ دیا کہ بھارت کیلئے ایک نیا وزیر داخلہ تیار ہو رہا ہے۔ وہ ایسے بھارت کی منظر کشی کر رہے تھے، جس میں اتر پردیش کے حالیہ وزیر اعلیٰ اجے سنگھ بشٹ یعنی یوگی آدتیہ ناتھ وزیر اعظم اور پرگیہ سنگھ ٹھاکر وزارت داخلہ کے تخت پر برا جمان ہونگے۔ مجھے یاد آیا، کہ محض چند برس قبل ہم نیوز رومز میں اسی طرح تفریح کے طور پر
مزید پڑھیے


بھارت کے انتخابی نتا ئج: کیسے مار لی مودی نے بازی

بدھ 29 مئی 2019ء
افتخار گیلانی
معروف تجزیہ کار سعید نقوی کے مطابق موجودہ انتخابی نتائج نے بھارت کے چہرے سے نقلی سیکولرازم کا نقاب اتار دیا ہے ۔اس سیکولر ازم کی آڑ میں پچھلی سات دہائیوں سے مسلمانوں کے ساتھ جو کچھ کیا گیا، اس کی عکاسی 2005ء میں جسٹس راجندر سچر کمیٹی نے کی تھی۔ ان کا کہنا ہے کہ ایک ڈیکلیرڈ اور دیانت دار ہندو اسٹیٹ ایک کھوکھلی سیکولر اسٹیٹ سے بدرجہا بہتر ہے۔ ان انتخابات میں تو سیکولر جماعتوں نے بھی مسلمانوں سے ووٹ مانگنے سے پرہیز کیا۔ اسکے باوجود ہندو ووٹروں نے ان کو کوئی پذیرائی نہیں بخشی۔اتر
مزید پڑھیے


بھارت کے انتخابی نتا ئج: کیسے مار لی مودی نے بازی

منگل 28 مئی 2019ء
افتخار گیلانی
توقع کے عین مطابق بھارت میں ہندو قوم پرست بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) اقتدار میں واپس آگئی ہے اور وزارت عظمیٰ کا تاج ایک بار پھر نریندر مودی کے سر پر بندھ چکا ہے۔ مگر جس طرح کا مینڈیٹ بی جے پی کو حاصل ہوا ہے، اسکی توقع کسی کو نہ تھی۔ امید تھی کہ اپوزیشن کانگریس کم از کم مدھیہ پردیش، راجستھان اور چھتیس گڑھ جیسے صوبوں میں بہتر کارکردگی کا مظاہر ہ کرے گی، جہاں پچھلے سال کے آواخر میں ہوئے صوبائی اسمبلیوں کے انتخابات میں اس نے بی جے پی کو شکست دیکر اقتدار پر
مزید پڑھیے


ایک یہودی عالم سے بات چیت

منگل 21 مئی 2019ء
افتخار گیلانی
مشرق وسطیٰ میں جہاں اس وقت امریکہ اور ایران کے مابین کشیدگی عروج پر ہے، وہیں فلسطین کے حوالے سے صدر ٹرمپ، یورپی یونین، ان کے عرب حلیف اور اسرائیل ایک فارمولہ کو حتمی شکل دینے میں مصروف ہیں، جس کو ’’ڈیل آف سنچری‘‘ کا نام دیا جا رہا ہے۔ چند ماہ قبل دہلی کے دورہ پر آئے ایک یہودی عالم ڈیوڈ روزن نے عندیہ دیا تھا کہ سابق امریکی صدر بارک اوبامہ جس خاکہ کو تیار کرنے میں ناکام ہو گئے تھے، ٹرمپ ، سعودی عرب و دیگر عرب ممالک کے تعاون سے فلسطین کے حتمی حل کے قریب
مزید پڑھیے


2019کے انتخابات: مسلمانوں کیلئے سبق

بدھ 15 مئی 2019ء
افتخار گیلانی
آخر مسلمان بی جے پی کو ووٹ کیوں نہیں دیتے ہیں؟ سہارنپور کے مدرسہ مظاہر العلوم میں استاد اور جید عالم مولانا شاہد الحسینی کا کہنا ہے کہ فسادات یا عدم تحفظ کے احساس سے زیا دہ مسلمانوں کے خلاف نظریاتی یلغار سے وہ خوف زدہ ہیں۔ ’’ایسے حالات بنائے گئے ہیں، جہاں میڈیا حکومت کی شہ پر مسلمانوں اور ان کی شریعت کو عفریت بنا کر پیش کر رہا ہے۔پارلیمنٹ کے پچھلے اجلاس میں کسی بھی عالم یا فقہ سے متعلق ادارہ سے مشورہ کئے بغیر تین طلاق پر پابندی اور اسکو جرم کے زمرے میں ڈال کر
مزید پڑھیے