BN

افتخار گیلانی


افغانستان: بل رچرڈسن اور زلمے خیل زاد کے سفارتی مشن


17اپریل 1998، کی ایک خنک دار صبح کو افغانستان کے دارالحکومت کابل کے ائیر پورٹ پر ایک امریکی طیارہ نے لینڈ کیا۔ تقریباًدو دہائیوں کے بعد کسی اعلیٰ امریکی عہدیدار کا افغانستان کا یہ پہلا دورہ تھا۔ 1996ء میں کابل پر طالبان کے کنٹرول کے بعد عالمی برادری نے افغانستان کو تو پوری طرح سے الگ تھلگ کرکے رکھ دیا تھا۔ ائیرپورٹ پر افغانستان میں پاکستانی سفیر عزیر احمد خان اور طالبان کے اعلیٰ راہنما امریکی مہمان کے استقبال کیلئے رن وے پر کھڑے تھے۔ افغانستان میں امن کے حوالے سے اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی لکدر براہمی کی ناکامی
منگل 10 مارچ 2020ء

بھارت: ہندو مسلم فسادات، وہی قاتل وہی منصف

بدھ 04 مارچ 2020ء
افتخار گیلانی
خیر میں علاقے میں پہنچا تو مغرب کی اذان ہو رہی تھی۔ پہلوان صاحب وہیں کرسی پر براجمان تھے ، جب ان کو معلوم ہوا کہ میں بس ڈاکومنٹ واپس کرنے آیا ہو توانہوں نے میرے ساتھ آنے کی زحمت گوارا نہیں کی۔ دروازہ پر دستک دی تو معلوم ہوا کہ دستاویزات کا مالک مسجد میں نمار ادا کرنے گیا ہوا ہے۔ میں بھی مسجد میںجاکر نماز میں شامل ہوگیا۔ میں جب نماز مکمل کر رہا تھا ، تو محسوس ہوا کہ کئی آنکھیں مجھے بغور دیکھ رہی ہیں۔ میں پچھلے کئی روز سے اس علاقے میں اپنے سینئر اور
مزید پڑھیے


بھارت: ہندو مسلم فسادات، وہی قاتل وہی منصف

منگل 03 مارچ 2020ء
افتخار گیلانی
بھارت میں فرقہ وارانہ فسادات کا برپا ہونا کوئی نئی بات نہیں ہے۔ اعداد و شمار کے مطابق 1947ء میں آزادی کے بعد سے پچھلے 73سالوں میں ملک کے طول و عرض میں 58400فسادات پھوٹ پڑے ہیں۔ بڑے فسادات جہاں 50یا اس سے زیادہ افراد ہلاک ہوئے کی تعداد لگ بھگ 110 کے قریب ہے۔ نیشنل کرائم ریکارڈ بیورو کے مطابق 2008ء سے 2018ء کے دس سالوں کے وقفہ کے درمیان کم و بیش 8ہزار فسادات ریکارڈ کئے گئے ہیں۔یعنی ایک طرح سے ملک میں ہر روز دو فسادات ہوئے ہیں۔ ان سبھی فسادات میں پولیس کا رول حالیہ دہلی
مزید پڑھیے


کشمیری زبان و ثقافت پر یلغار ، یونیسکو سے فریاد

بدھ 26 فروری 2020ء
افتخار گیلانی
کشمیری زبان کے رسم الخط کو قدیمی شاردا اور پھر دیوناگری میں تبدیل کرنے کی تحویز اس سے قبل دو بار 2003ء اور پھر 2016ء میں بھارت کی وزارت انسانی وسائل نے دی تھی۔ مگر ریاستی حکومتوں نے اس پر سخت رخ اپنا کر اسکو رد کردیا۔ بی جے پی کے لیڈر اور اسوقت کے مرکزی وزیر پروفیسر مرلی منوہر جوشی نے 2003ء میں تجویز دی تھی کہ کشمیر زبان کیلئے دیوناگری کو ایک متبادل رسم الخط کے طور پر سرکاری طور پر تسلیم کیا جائے اور اس رسم الخط میں لکھنے والوں کیلئے ایوارڈ وغیرہ تفویض کئے جائیں۔
مزید پڑھیے


کشمیری زبان و ثقافت پر یلغار ، یونیسکو سے فریاد

منگل 25 فروری 2020ء
افتخار گیلانی
بھارت میں وزیر اعظم نریندر مودی کے برسر اقتدار آنے سے قبل یا اسکے فوراً بعد کشمیر، بھارتی مسلمانوں اور پاکستان کے حوالے سے جو خدشات ظاہر کئے جا رہے تھے ، ایک ایک کرکے وہ سبھی درست ثابت ہو رہے ہیں۔ غالباً2014 ء اور 2015ء میں جب ان خطرات سے آگاہ کرانے کیلئے میں نے مودی کا کشمیر روڑ میپ ، کشمیر میں ڈوگرہ راج کی واپسی وغیرہ جیسے موضوعات پرکالم لکھے توکئی افراد نے قنوطیت پسندی کا خطاب دیکر مجھے یہ باور کرانے کی کوشش کی کہ کانگریس کی کمزور اور پس وپیش میں مبتلا سیکولر حکومت کے
مزید پڑھیے



دہلی انتخابات : عمران خان کیلئے بھی پیغام

بدھ 19 فروری 2020ء
افتخار گیلانی
انتخابی مہم کے دوران عآپ کے کارکنان محلوں و بستیوں میں گھوم گھوم کر یہی عوام کو بتاتے پھر رہے تھے کہ اگر واپس دس ہزار روپے بجلی کا بل دینا ہے تو بے شک بی جے پی کو ووٹ دینا۔عآ پ کا ایک اور بڑا کارنامہ سرکاری اسکولوں کی بہتری تھی۔ کہاں وہ پانچ سال پہلے کے سرکاری اسکول، جہاں ٹاٹ پر بچے پڑھتے تھے اور کئی اسکولوں میں تو ٹاٹ اور بلیک بورڈ تک ناپید تھے۔ اب ہر سرکاری اسکول میں پرائیوٹ اسکولوں کی طرز پر کرسی بنچ ، ڈیجیٹل بورڈ اور کمپیوٹرز فراہم کر دیئے گئے
مزید پڑھیے


دہلی انتخابات : عمران خان کیلئے بھی پیغام

منگل 18 فروری 2020ء
افتخار گیلانی
غالباً ایک دہائی قبل کا واقعہ ہے۔ میں نئی دہلی میں تہلکہ میڈیا گروپ میں بطور رپورٹر کام کر تا تھا کہ ایک دن چیف ایڈیٹر ترون تیج پال نے اپنے کمرے میں بلاکر گلے میں مفلر اور پائوں میں ہوائی چپل پہنے ایک شخص سے متعارف کرواکر بتایا کہ ا ن کے پاس سرکاری ٹیکس ا داروں میں کرپشن کے حوالے سے کوئی اہم خبر ہے۔ ان سے تفصیلات لیکر اور تحقیق کرکے رپورٹ فائل کرلوں۔ معلوم ہوا کہ یہ حضرت سابق جوائنٹ کمشنر انکم ٹیکس اور بدعنوانی کے خلاف مہم کے ایک سرگرم کارکن اروند کیجریوال تھے۔
مزید پڑھیے


بھارت کے سویلین اعزازات اور کشمیر

بدھ 12 فروری 2020ء
افتخار گیلانی
کشمیر سے بھی آرٹ، کلچر اور زبان کے شعبہ میں کسی ایسے شخص کی موجودگی سے لوگ نابلد تھے۔ میں نے قیاس لگایا کہ ہو نہ ہو یہ ایوارڈ تاریخ جموں کے مصنف مولوی حشمت اللہ لکھنوٗی کو دیا گیا ہوگا ۔ میں نے ایک مختصر پروفائل لکھ کر خبر بھیج دی۔ اگلے روز صبح سویرے کشمیر ٹائمز کے ایڈیٹر وید بھیسن کا فون آیا اور وہ سخت غصہ میں تھے۔ ان کا کہنا تھا کہ تاریخ جموں کے مصنف حشمت اللہ تو 1928ء میں ڈوگرہ حکومت کی ملازمت سے ریٹائرڈ ہوگئے تھے اور یہ کتاب بھی انہوں نے 1936ء
مزید پڑھیے


بھارت کے سویلین اعزازات اور کشمیر

منگل 11 فروری 2020ء
افتخار گیلانی
بھارت میں ہر سال 26جنوری یعنی یوم جمہوریہ کے موقعہ پر سویلین، پولیس اور دفاعی اعزازات کا اعلان کیا جاتا ہے۔ تحلیل شدہ ریاست جموں و کشمیر سے اس سا ل سویلین یعنی پدما ایوارڈ سابق ممبر پارلیمان اور پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی کے لیڈر مظفر حسین بیگ کو دیا گیا۔ آخر ان کو یہ ایوارڈ کیوں دیا گیا ؟ اس پر چہ مگوئیوں کا بازار گرم ہو گیا ہے۔ جب شیخ عبداللہ جیسے لیڈر ، جس نے کشمیر کو بھارت کی گود میں ڈالنے میں ایک کلیدی کردار کے بطور کا م کیا، کو کبھی ایوارڈ کا حقدار نہیں سمجھا
مزید پڑھیے


ٹرمپ کا فلسطین پلان ، اوسلو اکارڈ کو دفنانے کا سامان

بدھ 05 فروری 2020ء
افتخار گیلانی
حیفہ کے پاس سمندر سے صاف پانی کشید کرنے کا دنیا کا سب سے بڑا پلانٹ لگا کر پانی کے معاملے میں پہلے ہی اسرائیل اس تک خود کفالت اختیار کر چکا ہے کہ وہ اب اردن کو بھی پانی سپلائی کرتا ہے۔ اسرائیل نے اب اردن اور مصر کو گیس کی ترسیل شروع کر دی ہے۔ اس وقت مصر کو اسرائیل سے 85ملین کیوبک میٹر گیس فراہم ہورہی ہے جس سے اسرائیل سالانہ 19.5بلین ڈالر کماتا ہے۔ ستم ظریفی یہ ہے بس چند سال قبل تک اسرائیل ، مصر سے تیل و گیس خریدتا تھا۔ حیفہ سے
مزید پڑھیے