Common frontend top

اقتدارجاوید


ٹیکس ہی ٹیکس!


جبرو پچاس کی دہائی کی فلم تھی اس کے گانے بھی سپر ہٹ ہوئے ، جیسے تیرے عشق نچایا کر کے تھیا تھیا۔یہ سپر ہٹ فلم تھی اسے سکیدار نے لکھا تھا اور یہ اس کی پہلی فلم تھی۔اکمل اور یاسمین کی فلم دہائیوں تک چلی۔اس کے ڈسٹری ڈسٹریبوٹرز کو جب کبھی پیسوں کی ضرورت پڑتی یہی فلم مارکیٹ کے سینماؤں میں "شرطیہ نئے پرنٹوں کے ساتھ" کے عنوان کے اشتہار کے ساتھ پیش کر دی جاتی۔کچھ یہی حال ہمارے وزرائے خزانہ کا ہے جو پچھلے چار عشرے سے شرطیہ نئے پرنٹوں کے ساتھ نئے نئے ٹیکس نافذ کرتے ہیں۔ اور
منگل 16 جولائی 2024ء مزید پڑھیے

بیسویں صدی کا ادبی منصور

منگل 09 جولائی 2024ء
اقتدارجاوید
میں نے اردو کے بڑے شعرا کی ترتیب میں میر، غالب اور اقبال کے بعد یگانہ کو رکھا تو آدھے سے کہیں زیادہدوستوں نے اس ترتیب کو جیسے سنا ان سنا کر دیا۔بہت سوں نے حیرت کا اظہار کیا۔ اس کی بنیادی وجہ ہے کہ یگانہ اردو غزل کا وہ مسنگ لنک ہے جسے آج اردو غزل کا قاری ناشناس نظروں سے دیکھتا ہے یا ایک خاص رویے نے اسے یگانہ ناشناس بنا دیا ہے۔ ایک دو نے گویا ایک خدشے کا اظہار کیا کہ فراق کہاں گئے۔اس کا جواب شمس الرحمان فاروقی کے پاس تھا کہ انہوں نے یگانہ
مزید پڑھیے


دانستہ

جمعه 28 جون 2024ء
اقتدارجاوید
کراچی سے ہمارا تعلق کبھی احمد صغیر صدیقی کی وجہ سے تھا اتنی دور بیٹھ کر بھی کراچی اپنا اپنا لگتا تھا۔تب فہیم شناس کاظمی شاید زیر ِتعلیم تھے اور نواب شاہ میں مقیم تھے۔ایک معزز ترین خاندان کے چشم و چراغ ایک تہذیب کے نمائندہ۔اب اس دیو ہیکل شہر سے اگر خوشبو کا جھونکا ادھر پنجاب کی جانب آتا ہے تو وہ اسی کی وساطت سے آتا ہے۔چند ماہ قبل وہ اپنے وطن مالوف آئے۔ تب ان کے ساتھ تتلی کی طرح اڑتے چلے جاتے ہیں لمحے پھولوں کی طرح دیکھتے رہتے ہیں انہیں ہم اس شعر کی غایت بھی ساتھ تھی۔فاطمہ
مزید پڑھیے


مورخ چپ ہے اور تاریخ نوحہ کناں

جمعه 21 جون 2024ء
اقتدارجاوید
پاکستان کی تاریخ بقول شخصے ایک چیستان ہے۔ایک معمہ ہے ایک گورکھ دھندا ہے۔اس گورکھ دھندے اور معمے کی گرہ کشائی سے ہی اپنے ماضی کی غلطیوں کا ازالہ ہو سکتا ہے۔انہی گورکھ دھندوں اور لاینحل معموں کو کھولنے کا جنون دراصل مستقبل میں ان گورکھ دھندوں سے بچنے کی ایک سبیل، ایک کوشش ہے۔" جب مورخ کے ہاتھ بندھے تھے" میں درجنوں واقعات کی از سرِ نو بازیافت کی گئی ہے جو ہماری قومی زندگی کی راہ کھوٹی کرنے کا سبب بنے۔پاکستان کی سیاسی تاریخ الف لیلہ ہے اور سسٹم وہ قہرمان ہے جو اپنے جنون اور اطمینان
مزید پڑھیے


وادی ِجن

جمعرات 13 جون 2024ء
اقتدارجاوید
نبی پاک ﷺ کے شہر میں چوتھے دن کا آغاز کیا ہوا ہمیں مدینے کی گلیوں میں جانے، انہیں دیکھنے اور محسوس کرنے کا موقع مل گیا۔نبی پاکﷺکا شہر بڑی بڑی شاہراہوں، انڈر پاسز، سگنلز (اشاروں) اور بڑی بڑی عمارتوں سے بھرا پڑا ہے۔ہمیں اقبال عظیم کی نعت کے اشعار یاد آئے: کہ گلیوں میں قصداً بھٹک جائیں گے مگر لگتا تھا اب نبی کریم ﷺ کے زمانے کی گلیاں کہاںاب وہ گلیوں کا پرانا نظارہ کہاں۔لیکن ہمیں مدینے کی گلیوں میں جانے کا اعزاز مل ہی گیا۔رات کو ہی رضوان بھائی سے وادی ِجن جانے کا پروگرام بنا لیا تھا۔جب
مزید پڑھیے



ایوا کوڈو کا پودا

بدھ 05 جون 2024ء
اقتدارجاوید
حکایت آغاز ہوئی اور مٹی سے خوشبو آئی۔۔دوست نے مٹی سے پوچھا تم خوشبو ہو یا عنبر ہو تجھ سے کیسی خوشبو کی لپٹیں اٹھ رہی ہیں۔مٹی تو مٹی تھی گھبرا گئی اور کہا مجھ میں کہاں خوشبو ہونی تھی میں تو نکاری مٹی ہوں مگر میں ایک عرصہ پھولوں کی ہم نشین رہی ہوں۔پھولوں کی معیت میں دن رات گزارے ہیں۔میرا ذاتی کوئی کمال نہیں بس یہ خوشبو اسی یار ِدلنشین کی دین ہے۔ مسلم کھتریوں کی وہ لڑی جو شمسی کہلاتی ہے اس نے مٹی کی طرح پھولوں کی صحبت میں زندگی بسر کی ہے۔ شمسی یوں تو
مزید پڑھیے


کچھ عبرت حاصل کیجیے

جمعه 31 مئی 2024ء
اقتدارجاوید
اولیویا برطانوی ماں باپ کی اکلوتی اولاد ہے۔برطانیہ نے اپنے شہریوں کے لیے ایسی ایسی سہولیات فراہم کی ہیں کہ ہمارے ہاں اس کے بارے میں سوچا بھی نہیں جا سکتا۔ویسے برطانیہ کی ایٹمولوجی بھی بہت دلچسپ ہے۔چار صدیاں قبل مسیحی رومن کے زیر تسلط تھا، اس وقت برطانوی لوگوں کو British کی بجائے Prittanoiکہا جاتا تھا۔جس کا مطلب خاص لوگ تھا۔اس وقت خاص لوگوں کا کیا مفہوم لیا جاتا تھا اس سے قطع نظر اب وہ واقعی خاص لوگ ہیں۔تعلیم، صحت اور سوشل ویلفیئر سسٹم کی بنیاد ہی سماجی بھلائی اور سماجی مساوات ہے۔نبی کریم ﷺ کے قول مبارک
مزید پڑھیے


ایک تاریخ ‘ایک عہد‘ ایک جریدہ

هفته 18 مئی 2024ء
اقتدارجاوید
ادیب ابن ادیب، شاعر ابن شاعر اور صاحب ِکتاب بن صاحب ِکتاب ہونے کی مثالیں ادب میں کم کم ہی دستیاب ہیں۔اس وقت ادبی دنیا کے مسلمہ اور صف ِاول کے ادبا میں اس کی مثالیں اور بھی کم ہیں۔گمان ہے ادیبوں کی ہی اگلی نسل میں سے کوئی ایک آدھ ہی اس قافلے میں شریک شامل ہوا ہو گا۔ فیض، راشد، مجید امجد، جوش، فراز، ظفر اقبال، حسن منظر، کشور ناہید، عبداللہ حسین، خالدہ حسین، جون ایلیا، افتخار عارف اور انیس ناگی کی اگلی نسل اس ادبی میراتھن میں موجود نہیں ہے۔البتہ اقبال، مولانا ظفر علی خان، احمد
مزید پڑھیے


وکالت

منگل 14 مئی 2024ء
اقتدارجاوید
آپ وکیلوں کا لباس دیکھ لیں سارا سال محرم چلتا رہتا ہے۔صرف ایک قیامت کے دن والی کچہری ہے جہاں اپنے وکیلوں کی ایک نہیں چلنے والی۔ وکیل اور دلیل کا چولی دامن کا ساتھ ہے دلیل ہی چولی بنتی آئی ہے۔کیس وکیل ہارتا ہے سزا سائل کو ہو جاتی ہے۔وکالت کے امتحان کے بارے میں اقبال خاموش ہیں اور دنیا کی امامت کے لیے سبق پھر پڑھ کر صداقت کا شجاعت کا عدالت کا کہہ دیا مگر وکالت کے امتحان کا ذکر نہیں کیا۔تب وکالت کا امتحان بہت آسان ہوتا تھا۔ٹکے بھاؤ سیر ملتی تھی۔کراچی کا ایک کالج
مزید پڑھیے


کالے شیشوں والی عینک

بدھ 08 مئی 2024ء
اقتدارجاوید
چند دن قبل مجھے ثقل ِسماعت کا محض شبہ ہوا مگر بعد ازاں میں از خود اس کا گرفتار ہوتا چلا گیا۔پہلے پہل تو میں ایک شاک کی کیفیت سے گزرا مگر اب نارمل ہوتے ہوتے شانت سا ہو کر اللہ میاں کا شکر گزار بندہ بن گیا ہوں۔" بہرا " ہو کر یا بن کر ہزار مصیبتوں سے آزاد ہو گیا ہوں۔اس سے پیشتر اگر میرے بارے میں کوئی ناگوار تبصرہ کرتا تو میرے کان کھڑے ہو جاتے اور نتھنے ہلنے بلکہ کانپنے لگتے۔بسا اوقات ہاتھا پائی کی خواہش بھی دل میں سر اٹھانے لگتی۔ایک بار تو جذباتی ہو
مزید پڑھیے








اہم خبریں