Common frontend top

ڈاکٹر احمد سلیم


چھ روزہ جنگ کے نتائج!


جدید تاریخ اور بین الاقوامی تعلقات پر نظر رکھنے والا کوئی بھی طالب علم اس بات سے انکار نہیں کر سکتا کہ آج کا دن یعنی ۱۰ جون عالمی سیاست اور خاص طور پر مسلمانوں اور عرب ممالک کی سیاست کے لیے اہم ترین دین تھا۔ مسلمانوں کی موجودہ زبوں حالی اور عالمی معیشت پر صیہونی غلبے کی بنیاد آج کے دن رکھ دی گئی تھی جب دس جون 1967 کو چھ روزہ عرب اسرائیل جنگ کا خاتمہ تین بڑے عرب ممالک، مصر، اردن اور شام کی شکست پر ہوا تھا۔ جنگ کے نتیجے میں اسرائیل گولان کی پہاڑیوں، اردن
پیر 10 جون 2024ء مزید پڑھیے

3جون کا منصوبہ!

پیر 03 جون 2024ء
ڈاکٹر احمد سلیم
آج کے دن یعنی تین جون 1947 کو تقسیم ہند اور پاکستان کے قیام کا اصولی فیصلہ ہوا تھا جسے تاریخ میں ’’ تین جون کے منصوبے ‘‘ یا ’’ لارڈ مائونٹ بیٹن پلان ‘‘ کے نام سے یاد کیا جاتا ہے۔ دو اور تین جون کی درمیانی شب، کانگریس اور مسلم لیگ کے رہنمائو ں نے لارڈ مائونٹ بیٹن سے ملاقات کی ۔ ان ملاقاتوں میں مسلم لیگ سے برصغیر کے مسلمانوں کے رہنمائو ں کے طور پر قائد اعظم محمد علی جناح، لیاقت علی خان اور سردار عبدالرب نشتر، ہندوئوں کے نمائندہ کی حیثیت سے جواہر لعل نہرو،
مزید پڑھیے


زراعت کو صنعت کا درجہ اور جدت دیں!

پیر 27 مئی 2024ء
ڈاکٹر احمد سلیم
کسانوں کو گندم کا جو بھی ریٹ مل رہا ہو ہم اس بات سے انکار نہیں کر سکتے کہ پاکستان ایک زرعی ملک ہے۔یہ الگ بات ہے کہ دنیا کی بہترین زرخیز زمین اور کسی وقت دنیا کا سب سے بڑا نہری نظام رکھنے کے باوجود ہم نے اپنے بچوں کو کورس کی کتب میں پڑھایا تو ضرور کہ پاکستان ایک زرعی ملک ہے لیکن حقیقی طور پر کبھی زراعت کو حقیقی اہمیت نہیںدی ۔ آج حالات اس نہج پر پہنچ چکے ہیں کہ خریدار ہو تو گندم نہیںہوتی اور اب اگر گندم ہے تو خریدار نہیں۔ جس طرح
مزید پڑھیے


ہمارا ’’استاد‘‘

پیر 20 مئی 2024ء
ڈاکٹر احمد سلیم
کہنے کو استاد قوم کے معمار ہیں لیکن ہمارے معاشرے کی بدقسمتی اور تلخ حقیقت یہ ہے کہ قیام پاکستان سے اب تک جو پیشے سب سے زیادہ معاشی اور معاشرتی بد حالی کا شکار ہیں ان میں سے ایک ٹیچنگ ہے اور جو ادارہ سب سے زیادہ تنزلی کا شکارہے وہ محکمہ تعلیم ہے۔ ہمیں تو یہی معلوم نہیں کہ طالب علموں کو ’’پڑھانا‘‘ کیا ہے اور ’’سکھانا‘‘ کیا ہے۔ ہمارے یہاں اب کسی بڑے ادارے کے اچھے استاد کا تصور بھی کریں تو ذہن میں ایک ایسے شخص کی تصویر بنتی ہے جو کچھ
مزید پڑھیے


تعلیمی ایمرجنسی اور استاد کی عزت!

پیر 13 مئی 2024ء
ڈاکٹر احمد سلیم
گزشتہ دنوں اسلام آباد میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم صاحب نے ملک میں ’’ تعلیمی ایمرجنسی‘‘ نافذ کرنے کا اعلان کیا ہے۔ ویسے تو تعلیم ایک صوبائی معاملہ ہے لیکن انہوں نے یہ کہتے ہوئے کہ یہ ایمرجنسی تمام ملک کے لیے ہو گی اعلان کیا کہ ملک کے اڑھائی کڑوڑ سے زیادہ بچے جو بنیادی تعلیم کی نعمت سے محروم ہیں انہیں سکولوں میں داخل کر کے تعلیم کے زیور سے آراستہ کیا جائے گا۔ یونیسف کی ایک رپوٹ کے مطابق پاکستان کے دس برس کی عمر کے بچوں میں سے ستر فیصد سادہ تحریر
مزید پڑھیے



آئی کیوب قمراور یادماضی!

پیر 06 مئی 2024ء
ڈاکٹر احمد سلیم
پاکستان کا سیٹلائٹ مشن ’’ آئی کیوب قمر‘‘ خلا میں روانہ کر دیا گیا جسے پاکستان کے ’’ انسٹی ٹیوٹ آف سپیس ٹیکنالوجی ‘‘ ، جو کہ اسلام آباد میں قائم ایک پبلک یونیورسٹی ہے نے ’’ سپارکو‘‘ اور چین کی ’’ شنگہائی یونیورسٹی‘‘ کے تعاون سے تیار کیا ہے اور اسے چین کی نیشنل سپیس ایجنسی کے تعاون سے خلا میں بھیجا گیا ہے۔اس منصوبے میں مذکورہ یونیورسٹی کے سو کے قریب طلبہ نے اپنے اساتذہ کی نگرانی میں حصہ ڈالا ہے۔ پروگرام کے مطابق سیٹلائٹ پانچ دنوں میں چاند تک پہنچ جائے گا اور تین
مزید پڑھیے


ایرانی صدر کا دورہ پاکستان!

پیر 29 اپریل 2024ء
ڈاکٹر احمد سلیم
نئی حکومت کے قیام کے بعد رواں برس کا اب تک کا سب سے بڑا سفارتی واقعہ بلاشبہ ایرانی صدر ’’سید ابراھیم رئیسی‘‘ کا تین روزہ سرکاری دورہ پاکستان ہے۔ فلسطین، مشرق وسطی کی صورتحال ، چندہفتے قبل ہونے والی پاک ایران سرحدی کشیدگی اور ایران اسرائیل تنازعہ جیسے واقعات اس دورے کی اہمیت میںمزید اضافہ کر دیتے ہیں۔ اپنے دورے کے دوران ایرانی صدر نے صدر پاکستان، وزیر اعظم پاکستان سمیت پاکستان کی سول اور ملٹری قیادت سے ملاقاتیںکی۔ وزیر اعظم پاکستان سے ملاقات کے بعد مشترکہ اعلامیہ میںکہا گیا کہ آئندہ پانچ برسوں میں پاک
مزید پڑھیے


’’ارتھ ڈے‘‘ اور ہماری زمین!

منگل 23 اپریل 2024ء
ڈاکٹر احمد سلیم
فلسطین، یوکرائین ، برما، سوڈان ، یمن ، شام، کانگو سمیت اس وقت دنیا میں کم از کم 32مقامات پر مسلح جنگیں چل رہی ہیں۔ ان مسلح تنازعات میں ہر برس کم از کم اڑھائی لاکھ لوگ ہلاک ہو جاتے ہیں۔ ان کی وجہ بظاہر مذہب بتائی جائے یا نظریاتی اختلاف، اصل میں اس کے پردے میں یہ زمین کے کسی نہ کسی ٹکڑے اور قدرتی وسائل پر قبضہ کرنے کی سعی ہے۔ سوچنے اور سمجھنے کی ضرورت ہے کہ انسان زمین کے ٹکروں کے لیے تو جان لے بھی رہا ہے اور جان دے بھی رہا ہے لیکن
مزید پڑھیے


عالمی مالیاتی ادارہ اور ہماری معیشت

پیر 15 اپریل 2024ء
ڈاکٹر احمد سلیم
گزشتہ کئی حکومتوں کی طرح موجودہ نئی قائم ہونے والی حکومت کے لیے بھی سب سے بڑا چیلنج ’’ معیشت ‘‘ ہے۔ وزیر اعظم کے دورہ سعودی عرب کے دوران اخباری رپوٹوں کے مطابق اس بات کا اعادہ کیا گیا ہے کہ سعودی عرب پاکستان میں پانچ بلین ڈالر کی سرمایہ کاری کرے گا۔ دوسری جانب ایک اور رپوٹ کے مطابق عالمی مالیتی ادارے(IMF)کی جانب سے کہا گیا ہے کہ پاکستان کے ساتھ تین ارب ڈالر کے ’’ سٹینڈ بائی ایگریمنٹ‘‘ کے لیے بات چیت حتمی نتیجے پر پہنچنے والی ہے۔ ساتھ ہی انہو ں نے کچھ چیزوں کی نشاندہی
مزید پڑھیے


فلسطین: ماضی سے آج تک!

پیر 08 اپریل 2024ء
ڈاکٹر احمد سلیم
فلسطین میں آج جو کچھ ہو رہا ہے وہ دراصل مسلمانوں، یہودیوں اور عیسائیوں کے مابین ہزاروں برس پرانا تنازعہ ہے۔ تینوں ابراھیمی مذاہب کے لیے مقدس ترین شہر یروشلم کی تاریخ چار پانچ ہزار برس پرانی ہے۔ ایک ہزار برس قبل مسیح میں حضرت دائود ؑ نے اس علاقے کو فتح کر کے یہاں اپنی حکومت قائم کی۔ ان کے بعد انکے سب سے چھوٹے بیٹے حضرت سلیمانؑ نے یہاں ایک عبادت گاہ تعمیر کی جسے پہلا ہیکل یا ’’ ہیکل سلیمانی‘‘ کہا جاتا ہے۔ تعمیر کے قریب قریب ساڑھے پانچ سو برس
مزید پڑھیے








اہم خبریں