BN

ڈاکٹر اشفاق احمد ورک


نظم آباد


ہم نے ایک زمانے میں روایتی قسم کے ’اُردو بازاری‘ شعری انتخابات کے ردِ عمل کے طور پر 25 سال دورانیے (2005ئ۔1980ئ) کی جدید غزل کا انتخاب ’’غزل آباد‘‘ کے عنوان سے کیا تھا، جس میں دس مستند و باخبر شعرا پر مشتمل ایک جیوری قائم کی۔ اس میں بیس شاعروں کی دس دس غزلیں، اُن کے احوال کے ساتھ شامل کیں۔ اس طرح ہمیں بیٹھے بٹھائے دو سو اچھی غزلوں کا منافع ہو گیا، جس کا سُود ہم آج تک محبتوں اور مزاجوں کی صورت بھگت رہے ہیں۔اس کے بعد پراپرٹی پسند لوگوں کے اس دیس میں ہمارا ’نظم
اتوار 25  ستمبر 2022ء مزید پڑھیے

تین افسر، تین کتابیں

اتوار 18  ستمبر 2022ء
ڈاکٹر اشفاق احمد ورک
کتاب سے متعلق ایک دانشور کا یہ جملہ مجھے ہمیشہ ہانٹ کرتا ہے کہ: ’’ایک اچھی کتاب پڑھ لینے سے انسان اپنے ہم عمروں سے ایک سال بڑا ہو جاتا ہے۔‘‘ اس کا یہ مطلب ہر گز نہیں کہ کتابوں کے روز روز کے تذکرے سے آپ میری عمر کا تعین کرنا شروع کر دیں۔ یہ تو اپنے اپنے تجربات کی حامل تین محبتیں ہیں، جو احباب کی جانب سے حال ہی میں موصول ہوئی ہیں اور جن کے مطالعے نے مجھے تازہ کیا ہے۔ بریگیڈیئر حامد سعید اختر ایک ہمہ جہت شخصیت ہیں۔ ان کی کس کس جہت کا ذکر
مزید پڑھیے


اِس دیس میں ہوا ہے یارو کیا کیا ملتوی!

پیر 12  ستمبر 2022ء
ڈاکٹر اشفاق احمد ورک
تازہ خبر تو یہی ہے کہ ضمنی الیکشن بعض نامعلوم خدشات کے پیشِ نظر ملتوی کر دیے گئے ہیں۔ اگرچہ بعض وفاداروں نے اس کی کئی وجوہات گنوائی ہیں۔ کوئی کہتا ہے، بانیِ پاکستان کے یومِ وفات کے احترام میں، کسی کا خیال ہے، حیدر آباد دکن پہ قبضے کے صدمے کی وجہ سے، کسی کا قیافہ ہے کہ نائن الیون کی اکیسویں برسی کے سوگ میں لیکن حکیم جی کا کہنا ہے کہ ہمارے ہاں ہر چیز کی صرف دو ہی وجوہات ہوتی ہیں: ایک حکومتی وجہ دوسری اصل وجہ۔ اس کی حکومتی وجہ تو ظاہر ہے حالیہ سیلاب
مزید پڑھیے


اِبتلاؤں سے وہ نہیں ڈرتا

اتوار 04  ستمبر 2022ء
ڈاکٹر اشفاق احمد ورک
خبر ہے کہ برطانوی رکن پارلیمنٹ کلاڈیا ویب نے حالیہ بارشوں اور تباہ کاریوں کے باعث ہونے والی مہنگائی اور بھاری نقصانات کے پیشِ نظر دنیا سے پاکستان کے قرضے معاف کرنے کی درخواست کی ہے۔ اس خبر نے میرے احاطۂ خیال میں پنپنے والی تجاویز کو اچھی خاصی کُمک بخشی ہے، جن کی بنا پر روز بروز مزید خطرناک ہوتے سابقہ وزیرِ اعظم عمران خان کے طوفانی عزائم کے آگے بند باندھا جا سکتا ہے۔ ایک محتاط اندازے کے مطابق اس وقت وطنِ عزیز کے نوے فیصد عوام ، عمران کے ساتھ کھڑے ہیں۔ یہ اعداد و شمار ہم
مزید پڑھیے


یہ جو اقبال ؔ سے محبت ہے

اتوار 28  اگست 2022ء
ڈاکٹر اشفاق احمد ورک
سیالکوٹ میرے لیے محبتوں اور عقیدتوں کا شہر ہے۔ یہ میری پہلی ملازمت کا شہر ہے اور کہتے ہیں کہ پہلی ملازمت بھی پہلی محبت کی طرح ہوتی ہے، اس لیے یہ میری پہلی محبت کا شہر ہے۔ میرے لیے اعزاز کی بات ہے کہ 1889ء میں اقبال جس شہر میں پڑھ رہا تھا، اس سے ایک صدی بعد میں اس شہر میں پڑھانے کے لیے آ گیا۔ مَیں اس شہر میں سات سو تیرہ دن مقیم رہا، یہ شہر اَب تک مجھ میں رہ رہا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ جب بھی موقع ملتا ہے، مَیں پہلی ترجیح کے
مزید پڑھیے



اِک شیر کی آمد ہے؟

اتوار 21  اگست 2022ء
ڈاکٹر اشفاق احمد ورک
جب سے سنا ہے کہ درجن بھر سیاسی اتحادیوں میں سب سے سِر کڈھویں جماعت کے مقبول ترین لیڈر بہ نفسِ نفیس اپنے ایک گھر سے دوسرے گھر پدھارنے کے لیے کمر بستہ ہیں، دل کی دھڑکنیں تیز ہونا شروع ہو چکی ہیں۔ یہ بھی سنا ہے کہ اس نیک کام کے لیے انھیں صلح و صفائی کے ماحول کی متمنی بہت سی ملی جلی ہستیوں نے فیض احمد فیض کا یہ شعر سنا کے قائل کیا ہے: ویراں ہے مے کدہ ، خُم و ساغر اداس ہیں تم کیا گئے کہ روٹھ گئے دن بہار کے ہمارے دل میں صلح صفائی کا
مزید پڑھیے


یہ کس کا پاکستان ہے؟

اتوار 14  اگست 2022ء
ڈاکٹر اشفاق احمد ورک
دوستو! اگر کسی گھر میں پچھتر سال کا کوئی نڈھال بوڑھا، جس نے اچھے برے حالات میں پورے خاندان کو اپنے پروں کے نیچے پناہ دی ہو، جس نے اپنے بچوں کے مستقبل کے لیے زمانے کا گرم و سرد سہا ہو، وہ اولاد کے جوان ہونے پر صحن میں بے یارو مددگار پڑا ہو۔ وہ بھی اس حالت میں کہ کتے، کوے، گدھ اس کا گوشت نوچ نوچ کے کھائے جا رہے ہوں۔آس پڑوس کے ہم عمروں نے اس کا چھِبیاں دے دے کے جینا حرام کیا ہو۔ شریکا اُسے بدنام کرنے کا ہر طریقہ آزمانے پہ تُلا بیٹھا
مزید پڑھیے


ہے یہی میری نماز…

اتوار 07  اگست 2022ء
ڈاکٹر اشفاق احمد ورک
نماز، جو کلمہ طیبہ نصیب ہونے کے بعد دینِ اسلام کا سب سے اہم رُکن اور فریضہ ہے۔ نماز جسے دین کا ستون کہا گیا، نماز جسے دل کا سکون کہا گیا۔ نماز جو برائی اور بے حیائی میں انسان کی محافظ ہے۔ جاننے والے جانتے ہوں گے کہ جب شاعرِ مشرق کو مسجدِ قرطبہ کہ جہاں سات سو سال تک اذان اور قرآن کی آواز گونجتی رہی، کی زیارت کا موقع ملا تو وہاں اس وقت گھنٹیوں کی صدائیں اور صلیبوں کی ادائیں راج کر رہی تھیں۔ اقبال کے دل میں شدید خواہش جاگی کہ وہ وہاں نماز ادا
مزید پڑھیے


جانورستان

اتوار 31 جولائی 2022ء
ڈاکٹر اشفاق احمد ورک
میرا ایک لنگوٹیا دوست، یونیورسٹی کا کلاس فیلو، بے تکلف بڈی، ایک دن حیران کُن انداز میں چڑیا گھر کے مین گیٹ سے برآمد ہوا تو ہم سمجھے شاید اس کے اندرونی جذبات کا ظاہر کی دنیا میں انکشاف ہو جانے کے بعد محکمہ جنگلی حیات والوں نے اسے کسی دلچسپ حیوانی، نفسانی موازنے کی غرض سے طلب کیا ہے۔ ویسے بھی دنیا بھر کے ماہرینِ نفسیات اس امر پہ متفق ہیں کہ اگر اس اشرف المخلوق کے باطنی مکاشفات، کبھی ظاہری جذبات کا بدن اوڑھ لیںتو روئے کائنات پر چڑیا گھر کم پڑ جائیں۔ چڑیا گھر کی بات چلے
مزید پڑھیے


کب راج کرے گی خلقِ خدا؟

پیر 25 جولائی 2022ء
ڈاکٹر اشفاق احمد ورک
سترہ جولائی، جسے بعض لوگ ’خطرہ جولائی‘ کے نام سے بھی یاد کر رہے ہیں، میں بپھرے ہوئے عوامی جذبات اور الیکشن پر اُس کے اثرات کا عالم تو تمام لوگوں نے کھلی آنکھوں سے مشاہدہ کیا۔ ایک دیہاتی ہونے کے ناطے میرا دیہاتوں، شہروں کے بہت سے عام اور خاص لوگوں سے رابطہ رہتا ہے۔ ربع صدی سے کالم نگاری سے وابستہ ہونے کی وجہ سے بہت سی سیاسی ہستیوں کی دریدہ دہنی اور بوسیدہ ذہنی حالت سے بھی بخوبی واقف ہوں۔ کچھ عرصہ سرکاری ملازمت میں رہنے کی بنا پر سرکاری اداروں کی پست کارکردگی اور
مزید پڑھیے








اہم خبریں