Common frontend top

BN

ڈاکٹر طاہر اشرف


شنگھائی تعاون تنظیم کا اجلاس


شنگھائی تعاون تنظیم SCO کے موجودہ سربراہ کی حیثیت سے، بھارت نے مئی کے مہینے میں گوا شہر میں منعقد ہونے والے شنگھائی تعاون تنظیم کے اِجلاس میں شرکت کے لیے پاکستان کے وزیر خارجہ بلاول بھٹو زرداری اور چیف جسٹس آف پاکستان عمر عطا بندیال کو وزرائے خارجہ اور چیف جسٹس کی میٹنگ میں شرکت کے لیے مدعو کیا ہے، جس کا پاکستان کی طرف سے فی الحال جواب نہیں دیا گیا۔ ہندوستان نے گزشتہ سال ستمبر میں آٹھ رکنی شنگھائی تعاون تنظیم کی سالانہ rotation کی بنیاد پر صدارت سنبھالی تھی اور اس نے پاکستان اور چین سمیت SCO
پیر 30 جنوری 2023ء مزید پڑھیے

کیا روس عالمی طاقت کا کردار برقرار رکھ سکے گا؟

پیر 16 جنوری 2023ء
ڈاکٹر طاہر اشرف
روس عالمی سطح پر ایک غیر معمولی مقام اور اَثرورسوخ کا حامل ہے۔ اَلبتہ صدر ولادی میر پیوٹن کی قیادت میں روس نے بارہا یہ ظاہر کیا ہے کہ اَگر اِسے عالمی نظام میں کھڈے لائن لگانے کی کوشش کی گئی تو اس کے پاس بین الاقوامی نظام کو غیر مستحکم کرنے کی صلاحیت ہے۔ جس کی واضح مثال روس کے یوکرائن پر کیے گئے ،حالیہ حملہ ہے جس کے نتیجے میں شروع ہونے والی یوکرائن اور روس کے مابین جنگ ابھی تک جاری ہے۔ تاہم مشرق وسطیٰ اور اب یورپ جیسی جگہوں پر اپنی فوجی طاقت کے مظاہرے اور
مزید پڑھیے


2023 میں پاکستان کی خارجہ پالیسی کی ممکنہ ترجیحات

منگل 10 جنوری 2023ء
ڈاکٹر طاہر اشرف
یہ ایک مسلمہ حقیقت ہے کہ خارجہ پالیسی ہمیشہ مفادات کے تابع ہوتی ہے۔ اِس سلسلے میں پاکستان کو بھی کوئی اِستثناء حاصل نہیں ہے۔ افغانستان کی غیر یقینی صورتحال، ہندوستان کا پاکستان کی طرف متعصبانہ اور مسلسل ہٹ دھرمی کا رویہ، یوکرائن کی جنگ کے نتیجے میں جنم لینے والی ہلچل اور مشرق اور مغرب کے مابین بڑھتی ہوئی کشمکش، اور سب سے بڑھ کر اَمریکہ اور چین کے مابین بڑھتی ہوئی مسابقت سے عالمی سیاست میں ایک نئی سرد جنگ کے منڈلاتے خطرات کے تناظر میں پاکستان کی خارجہ پالیسی کے لیے 2023 کا سال خاصا
مزید پڑھیے


نیتن یاہو کی قیادت میں سخت گیر حکومت کا قیام

پیر 02 جنوری 2023ء
ڈاکٹر طاہر اشرف
اِسرائیل میں دائیں بازو کی پارٹیوں پر مشتمل حکومت کی تشکیل ہوگئی ہے اور لیکوڈ (Likud) پارٹی کے سربراہ بنیامین نیتن یاہو نے اِسرائیل کے وزیرِاَعظم کے طور پر چھٹی مرتبہ حلف اٹھایا ہے جس کے بعد وہ سب سے زیادہ مدت کے لیے رہنے والے اِسرائیلی وزیراعظم بن گئے ہیں حالانکہ انہیں اِس وقت بھی کرپشن کے مقدمات میں "ٹرائل" کا سامنا ہے۔ 120 نشستوں پر مشتمل اسرائیلی اسمبلی "نیسیٹ" (Knesset) میں نئتن یاہو کی قیادت میں سیاسی اتحاد نے 64 نشستوں پر کامیابی حاصل کی ہے جن میں لیکڈ پارٹی نے 32نشستیں جیتی ہیں اور ان کی
مزید پڑھیے


2022 کا عالمی سیاسی منظر نامہ

پیر 26 دسمبر 2022ء
ڈاکٹر طاہر اشرف
وقت گزرنے کے ساتھ عالمی سیاست میں تبدیلیاں آتی ہیں کیونکہ ریاستوں کے جغرافیئے، ریاستوں کی طاقت اور ان کے باہمی تعلقات عالمی سیاست میں ان کے کردار کو متعین کرتے ہیں جبکہ بین الاقوامی سیاست اور عالمی نظام کے خدوخال کی بھی ترتیبِ نَو ہوتی ہے۔ گزشتہ دو دہائیوں سے عالمی سیاست میں ہلچل کے نتیجے میں رونما ہونے والی تبدیلیوں سے جہاں اِیک طرف ترقی یافتہ اور طاقتور ملک نئی صف بندی کررہے ہیں وہیں دوسری طرف پاکستان سمیت ترقی پذیر ممالک کے لیے بھی الگ تھلگ رہنا مشکل ہے۔ ایک طرف کرونا وبا نے دنیا کو
مزید پڑھیے



کیا اَمریکہ اَفریقی ممالک میں چین کے اَثرورسوخ کو زائل کرسکے گا؟

پیر 19 دسمبر 2022ء
ڈاکٹر طاہر اشرف

اَمریکہ اور چین کے مابین برِاَعظم اَفریقہ میں اَثرورسوخ کے مقابلہ کی نئی جنگ شروع ہوگئی ہے، جس کی تازہ مثال اَمریکی صدر جو بائیڈن اور اَفریقی ممالک کے رہنماؤں کے مابین 13 دسمبر سے 15دسمبر تک واشنگٹن میں منعقد ہونے والی تین روزہ سربراہی کانفرنس ہے۔ قابلِ ذکر بات یہ ہے کہ گزشتہ آٹھ سالوں کے دوران ہونے والی اِس سطح کی یہ پہلی کانفرنس ہے جس میں تقریباً پچاس اَفریقی رہنماؤں نے شرکت کی ہے۔ اَمریکہ معدنی ذخائر سے مالا مال برِاَعظم اَفریقہ میں اپنا اثرسوخ دوبارہ بڑھانا چاہتا ہے۔ بین الاقوامی امور کے ماہرین کے مطابق اَفریقی
مزید پڑھیے


چینی صدر کے دورہ سعودی عرب کے ممکنہ اثرات

منگل 13 دسمبر 2022ء
ڈاکٹر طاہر اشرف
چینی صدر شی جن پنگ نے سعودی عرب اور امریکہ کے درمیان دیرینہ دو طرفہ تعلقات میں بڑھتی ہوئی رکاوٹوں کی موجودگی میں 7 سے 9 دسمبر تک سعودی عرب کا تین روزہ دورہ کیا ہے۔ اِس دورہ نے چین،سعودی دوطرفہ تعلقات کی مسلسل بڑھتی ہوئی اہمیت کو اجاگر کیا ہے اور یہ ظاہر کیا ہے کہ سعودی عرب اَمریکہ سے ڈِکٹیٹشن لینے کے لیے تیار نہیں ہے۔ قابل ذکر بات یہ ہے کہ 5 اکتوبر کو اوپیک ، گروپ کے فیصلے کے تناظر میں صدر بائیڈن نے سعودی عرب کو متنبہ کیا تھا لیکن امریکہ کے دباؤ کو نظر
مزید پڑھیے


میکرون،بائیڈن ملاقات کے ممکنہ اثرات

پیر 05 دسمبر 2022ء
ڈاکٹر طاہر اشرف
چونکہ قوموں اور ملکوں کے رویوں کی بنیاد انسانی فطرت پر تشکیل ہوتی ہے اِس لیے افراد کی طرح عالمی سیاست کے میدان میں ملک بھی اپنے مفاد کو عزیز رکھتے ہوئے اِسی کے تحفظ کو یقینی بناتے ہیں۔ اِس کی تازہ مثال فرانس کے صدر میکرون کے حالیہ دورہ اَمریکہ کی دی جاسکتی ہے جس کے دوران انہوں نے فرانس سمیت یورپی یونین کے ملکوں کے تجارتی مفادات کے تحفظ کی بات کی ہے اور اَمریکی حکومت کی طرف سے اَمریکی کمپنیوں کو دی جانے والی تجارتی رعایتوں پر تحفظات کا اِظہار کیا ہے۔ اِسی طرح یوکرائن،
مزید پڑھیے


بالی میں گروپ۔20 کا سربراہی اِجلاس

پیر 21 نومبر 2022ء
ڈاکٹر طاہر اشرف
اِنڈونیشیا کی میزبانی میں گروپ آف ٹونٹی کا دو روزہ سربراہی اِجلاس بدھ 16 نومبر کو اِنڈونیشیا کے جزیرے بالی میں ختم ہوا ہے۔ دنیا کے بیس بڑے صنعتی اور تجارتی ممالک کے رہنماؤں پر مشتمل G-20 کا اِس سال کا سربراہی اِجلاس یوکرائن جنگ اور اَمریکہ اور چین کے مابین بڑھتی ہوئی مسابقت کے تناظر میں منعقد ہوا ہے۔ انڈونیشیا کی G-20 صدارت کی مناسبت سے، اِس سال کی سربراہی اجلاس کا موضوع تھا "ایک ساتھ دوبارہ بحال کریں۔ مضبوطی سے بازیافت کریں"۔ یہ 17 ویں سالانہ سربراہی کانفرنس تھی اور دراَصل متعدد وزارتی اجلاسوں اور ورکنگ گروپس کا
مزید پڑھیے


بھارت میں اقلیتوں کے حقوق اور عالمی برادری کی ذمہ داری

پیر 14 نومبر 2022ء
ڈاکٹر طاہر اشرف
جمعرات یکم نومبر کو اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل (UNHRC) میں یونیورسل پیریڈک ریویو (UPR) کے دوران ہندوستان کے انسانی حقوق کے ریکارڈ پر تحفظات کا اِظہار کرتے ہوئے، بھارت پر زور دیا ہے کہ وہ مذہبی امتیاز اور جنسی تشدد پر سخت موقف اپنائے۔ اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل (UNHRC) میں یونیورسل پیریڈک ریویو کے تحت رکن ممالک کا ہر چار سال بعد اجلاس منعقد ہوتا ہے ،جو رکن ممالک کے انسانی حقوق کے ریکارڈ کو جانچنے کا طریقہ کار ہے۔کوئی بھی رکن ریاست سوال پوچھ سکتا ہے اور زیر غور ریاست کو سفارشات دے سکتا ہے۔
مزید پڑھیے








اہم خبریں