BN

ڈاکٹر طاہر اشرف


اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کا 77 واں سیشن


اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کا سالانہ 77 واں اجلاس شروع ہے۔ اَگرچہ دنیا کو اِس وقت ماحولیاتی آفات، معاشی عدم استحکام، بنیادی خوراک اور ایندھن کی قلت، ثقافتی جنگیں اور پاپولسٹ قوم پرستی، اور بین الاقوامی تنازعات جیسے ہنگامی عالمی چیلنجوں کا سامنا ہے اور اِن چیلنجوں سے نمٹنا ہی اَقوام متحدہ جیسی عالمی تنظیم کے قیام کے بنیادی مقاصد میں شامل ہے مگر یوکرائن اور تائیوان جیسے جیو پولیٹیکل اِیشوز، جن کے گرد عالمی طاقتوں کے مفادات براہِ راست آپس میں ٹکراتے ہیں، کی وجہ سے اَقوامِ متحدہ اپنے بنیادے اَہداف کے حصول میں کامیاب نہیں ہورہی ہے
پیر 26  ستمبر 2022ء مزید پڑھیے

شنگھائی تعاون تنظیم اور توقعات

پیر 19  ستمبر 2022ء
ڈاکٹر طاہر اشرف
15اور 16 ستمبر کو ازبکستان کے شہر سمرقند میں منعقد ہو نے والے شنگھائی تعاون تنظیم کے سربراہی اِجلاس میں ماحولیاتی تبدیلی سمیت عالمی سیاست کے اہم موضوعات اور رکن ملکوں کو درپیش چیلینجز پر تبادلہ خیال کیا گیا ہے۔ SCO کی کونسل آف ہیڈز آف اسٹیٹ کا 2019ء کے بعد یہ پہلا باالمشافہ اِجلاس ہے، جس میں رکن ملکوں کے سربراہان نے شرکت کی ہے۔ اِس سربراہی اِجلاس کی اہمیت اِس وجہ سے بھی بڑھ گئی کہ یہ اِجلاس روس اور یوکرائن کے مابین جاری جنگ اور امریکہ اور چین کے درمیان بڑھتی ہوئی کشیدگی کے پس
مزید پڑھیے


موسمیاتی تبدیلی: پاکستان کی اَقوامِ متحدہ اور عالمی برادری سے توقعات

پیر 12  ستمبر 2022ء
ڈاکٹر طاہر اشرف
اَقوامِ متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوٹیرس نے دنیا کی صورتحال "انتہائی غیر منصفانہ" قرار دیتے ہوئے دنیا سے ان ممالک کی مدد کے لئے اپنا کردار ادا کرنے کا مطالبہ کیا ہے جنہوں نے عالمی ماحول کو خراب نہیں کیا۔ انہوں نے یہ ریمارکس سیلاب سے تباہ ہونے والے پاکستان کے متعدد علاقوں کا دورہ کرنے کے بعد دیے ہیں، جب انہوں نے پاکستان میں بارشوں اور سیلاب کے نتیجے میں ہونے والی تباہی کے بارے میں آگاہی پیدا کرنے کے لیے پاکستان کا دو روزہ دورہ کیا۔ سیکرٹری جنرل نے کہا کہ انسانیت فطرت کے خلاف جنگ لڑ رہی
مزید پڑھیے


پاک امریکہ تعلقات کس سمت جا رہے ہیں؟

پیر 05  ستمبر 2022ء
ڈاکٹر طاہر اشرف
امریکی وزیر خارجہ کے سینئر مشیر ڈیرک چولیٹ نے کہا ہے کہ امریکہ پاکستان سے یہ نہیں کہتا کہ وہ اپنے اور چین میں سے کسی ایک کا انتخاب کرے بلکہ یہ چاہتا ہے کہ ممالک "ایک انتخاب کرنے کے قابل ہوں"۔ تاہم، انکے بقول واشنگٹن کو تشویش ہے کہ چین کے ساتھ باہمی تعلقات میں داخل ہونے والی قوموں کے چین کے ساتھ دوطرفہ تعلقات کا انجام اچھا نہیں ہوگا۔ واشنگٹن میں پاکستانی اخبار کو دیئے گئے ایک خصوصی انٹرویو میں انہوں نے کہا ہے کہ "ہم جس چیز پر توجہ مرکوز رکھنا چاہتے ہیں وہ یہ ہے کہ
مزید پڑھیے


اَفریقی ممالک کے ساتھ چین کے بڑھتے ہوئے روابط

پیر 29  اگست 2022ء
ڈاکٹر طاہر اشرف
چائنا-افریقہ بزنس کونسل کی رپورٹ کے مطابق، چین گزشتہ 13 سالوں سے افریقہ کا سب سے بڑا تجارتی شراکت دار رہا ہے اور 2021 میں افریقہ کا چوتھا سب سے بڑا دو طرفہ سرمایہ کار تھا۔ افریقہ کی ترقیاتی حکمت عملی، جیسے کہ افریقی یونین (AU) کا ایجنڈا 2063 اور افریقی کانٹینینٹل فری ٹریڈ ایریا۔ بی آر آئی اور اے ایف سی ایف ٹی اے کا گہرا تعاون افریقہ کو ایک مزید مربوط براعظم بنانے کے ساتھ ساتھ افریقہ کو عالمی سپلائی چین(Supply Chain) سے جوڑنے میں اہم کردار ادا کرے گا۔ چین کو افریقہ کی ضرورت کیوں ہے؟ چین نے
مزید پڑھیے



چین کے بارے میں امریکی خارجہ پالیسی

پیر 22  اگست 2022ء

عالمی نظام ہمیشہ سے تغیر پزیر رہا ہے اور اسکی بنیادی وجہ یہ ہے کہ اِس نظام کی بنیادی اِکائی ریاست ہے جس کا رویہ ہمیشہ یکساں نہیں رہتا بلکہ داخلی اور خارجی عوامل کے زیرِاَثر تبدیل ہوتا رہتا ہے۔ ریاستیں اپنے وجود کی بقا اور اپنے مفادات کے تحفظ کے لیے کوشاں رہتی ہیں اور ان کا ہر عمل اِسی مقصد کے حصول کے لیے ہوتا ہے۔ ملکوں کی خارجہ پالیسیاں اِنہی مقاصد کے حصول کے لیے بنائی گئی سٹریٹیجی کا نام ہے۔ لہٰذا کسی بھی ملک کی خارجہ پالیسی کا تبدیل ہونا ایک قابلِ فہم عمل ہے جس
مزید پڑھیے


اَفغانستان : طالبان حکومت کا ایک سال

پیر 15  اگست 2022ء
ڈاکٹر طاہر اشرف
گزشتہ سال 15اگست کو کابل پر طالبان کے قبضہ ہونے اور بالآخر 31 اگست کو اَمریکہ اور نیٹو کی افواج کے افغانستان سے اِنخلا کے بعد طالبان اور اِمریکہ کے مابین بیس سال سے افغانستان میں جاری لڑائی ختم ہوگئی۔ اگرچہ جنگ اور قبضہ ختم ہو چکا ہے مگر افغانستان میں معاملات مکمل طور پر حل نہیں ہو ئے جنکی ذمہ داری اَمریکہ اور طالبان سمیت دونوں فریقین پر ہے۔ اس سال 2 اگست کو صدر جو بائیڈن نے القاعدہ کے سربراہ ایمن الظواہری کو کابل میں انکے ٹھکانے پر ڈرون حملے میں ہلاک کرنے کا اعلان کیا، الظواہری
مزید پڑھیے


پیلوسی کے دورۂ تائیوان کے بعد جنگ کے اِمکانات؟

پیر 08  اگست 2022ء
ڈاکٹر طاہر اشرف
اَمریکی ایوان نمائندگان کی سپیکر نینسی پیلوسی نے جو امریکی صدر کے بعد قیادت میں دوسرے نمبر پر ہیں، چین کی دھمکیوں کے باوجود کہ یہ دورہ امریکہ کے لیے قیمت لے کر آئے گا، 3 اگست کو تائیوان کا دورہ کیا ہے۔ چین نے نینسی پیلوسی اور ان کے قریبی خاندان پر غیر متعینہ پابندیوں کا اعلان کیا ہے جبکہ ان پابندیوں کے بارے میں کوئی تفصیلات نہیں ہیں۔ تاہم، یہ پابندیاں عام طور پر علامتی نوعیت کی ہوتی ہیں۔ چین نے آبنائے تائیوان میں اب تک کی سب سے بڑی فوجی مشقوں کا آغاز کر دیا ہے
مزید پڑھیے


شنگھائی تعاون تنظیم اور علاقائی تعاون

پیر 01  اگست 2022ء
ڈاکٹر طاہر اشرف
28 اور 29 جولائی کو ازبکستان کے شہر تاشقند میں منعقد ہو نے والے شنگھائی تعاون تنظیم کے کونسل آف فارن منسٹرز کے اِجلاس میں تنظیم کے وزرائے خارجہ نے شنگھائی تعاون تنظیم کے قیام کے 20 سال بعد درپیش اہم موضوعات پر تبادلہ خیال کیا ہے، جن میں اِس کی رکنیت میں توسیع، ایس سی او سیکرٹریٹ کے میکانزم میں بہتری، اور SCO کا عالمی اقتصادی اور سیاسی پیش رفت اور SCO ممالک کے لیے چیلنجز کے بارے میں موقف۔ شنگھائی تعاون تنظیم کے وزرائے خارجہ نے سماجی و اقتصادی تعاون کے مختلف شعبوں سے متعلق تجاویز کی توثیق
مزید پڑھیے


پوٹن کا دورہ ایران

پیر 25 جولائی 2022ء
ڈاکٹر طاہر اشرف
روس کے صدر ولادی میر پوٹن نے 24 فروری کو یوکرائن پر روس کے حملے کے بعد سابق سوویت یونین سے باہر کسی ملک کا دورہ کیا ہے تو وہ ایران کا دورہ ہے جہاں انہوں نے ایرانی قیادت اور ترک صدر رجب طیب اردگان سے ملاقاتیں کی ہیں۔ اردگان، روس کے صدر ولادی میر پوٹن اور ایران کے صدر ابراہیم رئیسی نے شام پر اختلافات کو دور کرنے کے لیے 19 جولائی کو تہران میں اِیک سربراہی اجلاس منعقد کیا۔ یہ سہ فریقی سربراہی اِجلاس شام میں اِیک دہائی سے زائد عرصے سے جاری تنازع کے خاتمے کے
مزید پڑھیے








اہم خبریں