BN

خالد ایچ لودھی



کیسی اپوزیشن‘ کس کے خلاف اتحاد؟


2018ء کے قومی انتخابات کے بعد پاکستان میں نئی حکومت بننے جا رہی ہے اس کے ساتھ ہی ملک میں اپوزیشن کا متحدہ محاذ بھی بن گیا ہے اس اتحاد میں زیادہ تر وہ لوگ ہیں جو کہ ان انتخابات میں بری طرح شکست کھا کر اپنا پارلیمانی وجود گنوا بیٹھے ہیں متحدہ اپوزیشن کے قیام کی وجہ یہ بتائی گئی ہے کہ انتخابات میں دھاندلی ہوئی ہے۔ دھاندلی تو یقینا ہوئی ہے لیکن اس بار دھاندلی کسی اور نے نہیں بلکہ خود ووٹرز نے کی ہے ان ووٹرز نے نہ صرف اپنا بلکہ اپنے بچوں کا مستقبل بچانے کی
پیر 06  اگست 2018ء

عمران خان کی دل کی باتیں

پیر 30 جولائی 2018ء
خالد ایچ لودھی
قیام پاکستان سے قبل برکی اور لودھی خاندان جالندھر کے علاقے دھوگڑی اور بستی پٹھاناں میں آباد تھے۔ بنیادی طور پر یہ خاندان پٹھان ہیں۔ ان خاندانوں کی آپس میں رشتہ داریاں تھیں، اس پٹھان قبیلے کے بیشتر لوگوں نے نیازی قبیلے کے ساتھ بھی خاندانی رشتہ داریاں قائم کر رکھی تھیں۔ نیازی قبیلے کو نیازی آف میانوالی کہا جاتا تھا۔ برکی خاندان سے عمران خان کا گہرا تعلق ہے یعنی عمران خان کی والدہ محترمہ برکی اور والد محترم نیازی تھے۔ ان خاندان کے لوگ زیادہ تر فوج اور سول سروس میں اعلیٰ عہدوں پر فائز رہے۔ اب بھی
مزید پڑھیے


ممکنہ مخلوط حکومت کے امکانات

بدھ 25 جولائی 2018ء
خالد ایچ لودھی
آج انتخابات کا دن ہے اب زمینی حقائق بتا رہے ہیں کہ قومی انتخابات کے نتائج کے بعد ملک میں ممکنہ طور پر مخلوط حکومت ہی کے امکانات زیادہ نظر آ رہے ہیں پارلیمنٹ میں 342 کی تعداد ہوتی ہے جبکہ کسی بھی سیاسی جماعت کو سادہ اکثریت حاصل کرنے کے لیے 137ممبران درکار ہونگے موجودہ حالات میں کوئی بھی سیاسی جماعت اس پوزیشن میں نہیں کہ وہ اکیلے حکومت سازی کر سکے معلق پارلیمنٹ کا وجود خود کمزور حکومت کا باعث بنے گا یہ ملک کی بدقسمتی ہو گی کیونکہ غیر ملکی طاقتیں پاکستان میں کمزور حکومت کے قیام
مزید پڑھیے


ذوالفقار علی بھٹو کی تقاریر اور موجودہ سیاسی منظر نامہ

جمعرات 19 جولائی 2018ء
خالد ایچ لودھی
قومی انتخابات کو اب صرف چند روز باقی رہ گئے ہیں پورے ملک میں سیاسی سرگرمیاں عروج پر ہیں اور امیدواروں کی عوامی رابطہ مہم بھی جاری ہے اس کے ساتھ یہ پورا ملک اندوہناک واقعات کی وجہ سے سوگ کی کیفیت میں ہے دہشت گردی کے خدشات ایک بار پھر پورے ملک میں غیر یقینی کی صورت حال پیدا کر رہے ہیں دہشت گردی کے حالیہ واقعات پاکستان کے سیاسی مستقبل پر وار کرنے کی گہری سازش کا نتیجہ ہیں سانحہ مستونگ نے پورے ملک کو ہلا کر رکھ دیا ہے۔ بلوچستان میں سرحد پار سے در اندازی کے
مزید پڑھیے


پارک لین (لندن) سے اڈیالہ جیل (راولپنڈی) تک

پیر 16 جولائی 2018ء
خالد ایچ لودھی
پاکستان کے عوام گزشتہ ستر سالوں سے دعائیں کر رہے تھے عوام کی یہ آرزو پوری ہوگئی کہ قانون امیر و غریب، طاقت ور اور کمزور کے لیے یکساں نافذ ہو۔ اس قانون کا اطلاق صرف غریب اور پسماندہ طبقات تک ہی محدود نہ ہو، اب انصاف ہوتا ہوا دکھائی دیتا ہے جس کی ایک جھلک 13 جولائی کو پوری قوم نے دیکھی۔ وہی لاہور ایئرپورٹ جس جگہ ہائوس آف شریف کے پروٹوکول اور استقبال کے لیے وزیراعلیٰ سے لے کر چیف سیکرٹری اورآئی جی تک قطار میں کھڑے رہتے تھے، اس روز حکومت پاکستان کے سرکاری اہلکاروں نے میاں
مزید پڑھیے




برطانیہ سے وی آئی پی مجرموں کی پاکستان واپسی

جمعه 13 جولائی 2018ء
خالد ایچ لودھی
28جولائی 2017ء کو میاں نواز شریف نااہل قرار پائے تھے اب فاضل احتساب عدالت نے اپنے فیصلے میں ’’مجھے کیوں نکالا؟‘‘ کا جواب دے دیا ہے یہ 174صفحات پر مشتمل فیصلہ ہے جو کہ فاضل احتساب عدالت نے دیا ہے قومی احتساب آرڈیننس کی دفعات کے تحت میاں نواز شریف‘ مریم نواز اور (ر) کیپٹن صفدر کو مجرم قرار دیا گیا ہے ان وی آئی پی مجرموں کو جو سزائیں ہوئی ہیں ان کی تفصیل اب ہر کسی کو معلوم ہے اس کے علاوہ دیگر وی آئی پی مجرم حسن نواز‘ حسین نواز اور میاں صاحب کے سمدھی اسحاق ڈار
مزید پڑھیے


پاکستان میں مثالی احتساب کا آغاز

منگل 10 جولائی 2018ء
خالد ایچ لودھی
پاکستان کی سیاسی تاریخ کا ایک باب ختم ہوا چاہتا ہے۔ جنرل ضیاء الحق کی سرپرستی میں میاں نوازشریف کو پاکستان کی سیاست میں اتارا گیا تھا جنرل ضیاء الحق نے یہ تک کہہ دیا تھا کہ میری عمر بھی میاں نوازشریف کو لگ جائے اور پھر یہ بھی کہا تھا کہ میاں نوازشریف کا ’’کلہ‘‘ مضبوط ہے اس طرح ہائوس آف شریف سیاست کی سیڑھیاں چڑھتے ہوئے اپنے بزنس امپائر کو بھی فروغ دیتا چلا گیا، اس خاندان کے ہر فرد نے اپنے اپنے طور پر مختلف سیکٹرز میں انڈسٹریاں لگائیں، دیکھتے ہی دیکھتے یہ خاندان ماضی کے بائیس
مزید پڑھیے


ہائوس آف شریف کا’’پیرس‘‘ ڈوب گیا

جمعه 06 جولائی 2018ء
خالد ایچ لودھی
قدرت بھی اب ہائوس آف شریف کا ساتھ دینے کو تیار نہیں۔ لاہور میں بارش کیا ہوئی کہ اس بارش نے خادم اعلیٰ کے 10سالہ ترقی یافتہ دور کی چند گھنٹوں میں قلعی کھول کر رکھ دی لاہور شہر میں کشتیاں چلا کر لاہوریوں کو محفوظ مقامات پر لے جایا گیا۔ شہر لاہور کی معروف ترین شاہراہ مال روڈ پر لاہور ہائی کورٹ کی بلڈنگ اور جنرل پوسٹ آفس کے سامنے زمین دھنسنے سے سڑک پر خاصا بڑا گڑھا پڑ گیا یہ وہ جگہ ہے جس کو بتایا جا رہا ہے کہ اس جگہ سے اورنج ٹرین کا زیر زمین
مزید پڑھیے


پاکستان کی معاشی تباہی کے ذمہ دار کون؟

پیر 02 جولائی 2018ء
خالد ایچ لودھی
فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) ایک عالمی ادارہ ہے اس ادارے میں امریکہ‘ برطانیہ‘ بھارت‘ چین اور ترکی سمیت 25ممالک جن میںخلیج تعاون کونسل اور یورپی کمیشن شامل ہیں اس ادارے کا قیام1989ء میں عمل میں لایا گیا تھا اور اس ادارے کا بنیادی مقصد بین الاقوامی مالیاتی نظام کو دہشت گردی‘ کالے دھن کو سفید کرنے اور اس قسم کے دیگر خطرات سے محفوظ رکھنا ہے۔ ابھی حال ہی میں (ایف اے ٹی ایف)کے اجلاس میں پاکستان کو دہشت گردوں کی مالی معاونت کرنے والے ممالک کی گرے لسٹ میں شامل کرنے کا فیصلہ کیا گیاہے۔ پیرس
مزید پڑھیے


احتسابی عمل کے بغیر قومی انتخابات کی اہمیت ؟

بدھ 27 جون 2018ء
خالد ایچ لودھی
الیکشن کمیشن آف پاکستان کی طرف سے جاری کردہ تفصیلات کے مطابق ہمارے قومی رہنمائوں اور عوام کے خادموں کے اثاثوں کو دیکھ کر ایسا لگتا ہے کہ ہمارے ملک کے کم وبیش تمام کے تمام عوامی نمائندے ارب پتی اور کھرب پتی ہیں، ان میں خال خال ہی کوئی لکھ پتی ہوگا حالانکہ ان اثاثوں میں ابھی بھی بہت کچھ چھپایا گیا ہے، ان تمام اثاثوں کے منظر عام پر آنے کے بعد میں نے برطانوی پارلیمنٹ کے ممبران کے علاوہ ہائوس آف لارڈز کے ممبران سے بھی خود پارلیمنٹ ہائوس جا کر تفصیلی ملاقاتیں کیں، جن ممبران کو
مزید پڑھیے