BN

ریاض مسن


سب کا پاکستان


وزیر اعظم عمران خان کمالِ مہربانی سے عوام کو سیاسی بحث میں لے آئے ہیں جو انکے بقول اشرافیہ کے ظلم وجور کی چکی میں پچھلے چوہتر سال سے پِس رہی ہے۔ بات انہوں نے ٹھیک کی ہے لیکن اگر انکے مخالفین اس الزام سے بری ہونا چاہیں تو وہ اصرار کرسکتے ہیں، جو کہ وہ واقعتاً کرتے ہیں،کہ اشرافیہ اپنی سیاسی جدوجہد سے عوام کو اس مقام پر لے آئے ہیں جہاں ریاستی ادارے انہیں اندھا دھند نہیں روند سکتے۔ آئین ، جمہوریت اور صوبائی خود مختاری اور آزاد عدلیہ کی موجودگی میں وہ بہتر مستقبل کی امید کرسکتے
اتوار 09 مئی 2021ء

فریب

اتوار 02 مئی 2021ء
ریاض مسن
پاکستان میںکورونا وائرس کی تیسری لہر مسلسل شدت پکڑ رہی ہے،مثبت شرح میں مسلسل اضافہ اور وسائل کی کمی نے حکام کو باور کرادیا ہے کہ عوام کو اس موذی وبا سے بچانے کا ایک ہی راستہ ہے کہ وہ اپنا خیال خود رکھیں۔ ویکسین کی فراہمی میں غیریقینی صورتحال کے پیش نظر ایس او پیز کے معاملے میں سختی سے پیش آنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ لوگوں کو ماسک پہننے اور دیگر حفاظتی اقدامات کی پابندی کرانے کے لیے حساس شہروں میں فوجی دستے طلب کیے گئے ہیں تاکہ وہ اس سلسلے میں مقامی انتظامیہ کی مدد
مزید پڑھیے


تدبیر

اتوار 25 اپریل 2021ء
ریاض مسن
شیخ سعدی کی وہ مشہور حکایت تو آپ نے سنی ہی ہوگی کہ ایک لومڑی بھاگم بھاگ جارہی تھی، کسی نے پوچھ لیا کہ وہ کس مصیبت کی ماری تھی تو اس نے جواب دیا تھا کہ جنگل میں بادشاہ کے ہرکارے اور پیا دے اونٹوں کو پکڑ رہے ہیں۔ پوچھنے والے نے لومڑی اور اونٹ کی نسبت پر اعتراض کیا تو اس کا جواب تھا کہ اگر کسی بدخواہ نے ہوا ء اڑا دی کہ یہ اونٹ کا بچہ ہے تو وہ کہاں لیے وکیل ڈھونڈتی پھرے گی۔ وفاق اور تین صوبوں میں براجمان حکومت کی حالت بھی اسی
مزید پڑھیے


مشورہ

اتوار 18 اپریل 2021ء
ریاض مسن
ایک دیہاتی دکاندار شہر سے سودا سلف لانے کے لیے روزانہ شہر جایا کرتا تھا۔ایک دن راستے میں اسے ایک شخص ملا ، دعا سلام کے بعد اس نے پوچھا کہ اس نے گدھے پرکیا لادا ہوا ہے۔ دکاندار نے جواب دیا کہ خرزین کے ایک تھیلے میں سودا سلف ہے جبکہ دوسرے میں مٹی کے ڈھیلے ہیں۔ مٹی کے ڈھیلوں کا کیا کروگے کہ انہیں اپنے ساتھ لیے پھرتے ہو ؟ ایک تو یہ کسی کام کے نہیں اور دوسرے گدھے پر بوجھ بھی علیٰحدہ ہے ۔ اجنبی نے اسے مشورہ دیا کہ اگر وہ اپنا سامان ایک تھیلے
مزید پڑھیے


مفکرِ اعظم

اتوار 11 اپریل 2021ء
ریاض مسن
سقراط کوجمہوری نظامِ حکومت کا مخالف مانا جاتا ہے۔ موجودہ دور میں اس پر سب سے بڑا حملہ کارل پاپر کی جانب سے کیا گیا ہے جس نے اسے اپنی مشہور زمانہ کتاب "آزادہ معاشرہ اور اسکے دشمن " میں اسے غیر جمہوری سوچ کا امام قرارد یا ہے۔ یہ حقیقت ہے کہ سقراط جمہوریت کو ایتھنز کے وجودکے لیے خطرہ سمجھتا تھا ۔ وجہ یہ تھی کہ ریاستی معاملات پر تجارت پیشہ طبقے کی اجارہ داری تھی اور یہ طبقہ جمہوریت کے لبادے میں اپنے مفادات کو آگے بڑھا رہا تھا ۔ معاشرہ دولت جمع کرنے کی دوڑ میں
مزید پڑھیے



کیا جرم سے سمجھوتا جائز ہے؟

اتوار 04 اپریل 2021ء
ریاض مسن
اپنی لگ بھگ دو دہائیوں پر محیط صحافتی زندگی میں کالم نگاری سے عشق رہا۔ اخبارات سے تعلق کی ابتدا یہیں سے ہوئی اور پھر یوں کہیں کہ کہیں کے نہیں رہے۔ مطلب ، ملازمت کی بھی تو اس لیے کہ کالم نگاری چلتی رہے۔ ایک فائدہ یہ ہوا کہ اس صحافتی "رگڑے" سے بچ گیا جواس وقت نواردوں کو لگتا تھا۔ رپورٹنگ کی طرف مجھے اسلام آباد سے نکلنے والے ایک اخبار ، جس سے میں نے کالم نگاری کی ابتدا کی تھی ،کے چیف ایڈیٹر لائے۔ انہوں نے مجھے دو شعبوں میں سے ایک چننے کا کہا۔ کرائم
مزید پڑھیے


پیچھے کیا رہ گیا ہے

اتوار 28 مارچ 2021ء
ریاض مسن
کشمیر اور پنجاب کی سرحد پر توپوں کی گھن گھرج کا خاتمہ، یوم پاکستان پر مودی کا پیغام تہنیت، چین اور روس کی مغربی تہذیب کو دی گئی للکار اور شنگھائی تعاون تنظیم کے پرچم تلے اس سال پاکستان میں دہشت گردی کے خلاف ہونے والی مشقیں۔ لگتا ہے تاریخ کا پہیہ پھر سے گھومنا شروع ہوگیا ہے، ہواوں کا رخ بدل رہا ہے، تبدیلی کا معاملہ ایک صحافی کی چھٹی حس کا نہیں بلکہ سائنسی طریقہ تحقیق کی روشنی میں نظر آنیوالے والے ناقابل تردید سچ کا ہے۔ ہوسکتا ہے کہ کچھ لوگ تبدیلی کی آہٹ کو محسوس نہ کرسکیں
مزید پڑھیے


پیپلز پارٹی دو راہے پر؟

جمعه 26 مارچ 2021ء
ریاض مسن
پاکستان کی تیسری بڑی سیاسی جماعت، پاکستان پیپلز پارٹی، اس وقت بظاہر دوراہے پر لگتی ہے۔ اس نے اپنے لیے راستے کا انتخاب کرنا ہے جس میں ایک طرف حزب اختلاف کا منہ زور ور ہَتھ چْھٹ قسم کا اتحاد، پاکستان جمہوری تحریک، ہے جو موجودہ پارلیمان کو ناجائز قرار دے کر اسے رخصت کرنے کے درپے ہے تو دوسری طرف اس کے، بطورسیاسی پارٹی ، اپنے مفادات ہیں جن سے فرار ممکن نہیں۔ پاکستان جمہوری تحریک کی تخلیق اور اسکے مقاصد واضح ہیں اور یہ بھی کہ اس حکومت مخالف تحریک کے پیچھے کون سے عوامل
مزید پڑھیے


اصلاحات یا انتخابات؟

اتوار 21 مارچ 2021ء
ریاض مسن
حال ہی میں ہالینڈ میں انتخابات ہوئے ہیں۔ یہ انتخابات قبل از وقت کرائے گئے ہیں کیونکہ مخلوط حکومت پر مخالفین کا الزام تھا کہ اس نے کورونا وائرس کی روک تھام میں لاک ڈاون کا استعمال غیر ذمہ داری سے کیا جس کی وجہ سے کاروبار اور معمولات زندگی متاثر ہوئے ۔ کوئی تحریک نہیں چلی ، جلسے جلوس نہیں ہوئے، عوام کے رائے جاننے کے لیے حکمران اتحاد نے از خود انتخابات کا فیصلہ کیا تاکہ حقیقت حال واضح ہوسکے۔حکمران پارٹی اور حلیف زیادہ اعتماد کے ساتھ واپس آئے ہیں۔ دائیں اور بائیں بازو کی جماعتوں کو کاری
مزید پڑھیے


باب القائد

اتوار 14 مارچ 2021ء
ریاض مسن
باب القاعد سرکاری شعبے میں قائم چوٹی کے تعلیمی ادارے قائد اعظم یونیورسٹی اسلام آباد کا صدر دراوزہ ہے۔ یہاں پہنچ کر نوے ڈگری کے فرق سے دو راستے نکلتے ہیں، کسی پر بھی بغیر رکے چلتے جائیں تو واپس یہیں پر پہنچیں گے۔ یہ ایک گول دائرہ ہے۔ جو پچھلی دو دہائیوں میں دو گنا بڑھ چکا ہے۔ قائد اعظم یونیورسٹی اسلام آباد نے ترقی کی نئی منزلیں طے کی ہیں جن میں نئے ڈیپارٹمنٹس کا قیام اور چار دیواری اہم ہیں۔ طلبا کی تعداد میں ہوشربا تو نہیں لیکن نوے کی دہائی، جب مجھے اس کے ہاسٹلز میں
مزید پڑھیے








اہم خبریں