BN

سرور باری


سیلاب سے اٹھتی آواز یں!!


سیلاب سے متاثرہ لوگوں کی ایک بڑی اکثریت ریاستی اداروں اور حکمران جماعتوں کی کارکردگی سے نالاں ہے۔ تاہم، ابتدائی سماجی رشتے ؛جیسے عزیزو اقارت ، دوستوں اور پڑوسیوں نے سیلاب زدگان کیساتھ سب سے زیادہ ہمدردی کا مظاہرہ کیا ہے۔ اس حوالے سے انہوں نے بہت عمدہ کردار ادا کیا لیکن انتہائی خاموشی کی ساتھ۔ سیلاب زدہ علاقوں میں پتن تنظیم کے تازہ ترین جائزہ سروے کے دوران یہ بنیادی نکات سامنے آئے ہیں۔ گیارہ سے پندرہ ستمبر کے دوران مقامی کارکنوں کے ذریعے تین صوبوں کے 14 اضلاع کے 38 آفت زدہ علاقوں میں کئے گئے پتن
هفته 24  ستمبر 2022ء مزید پڑھیے

سیلابی آفات: فلاحی ادارے اور این جی اوز

هفته 17  ستمبر 2022ء
سرور باری
ترقیاتی اور سماجی ترقی کی منصوبہ بندی میں جن دو با توں کا تواتر سے ذکر ملتا ہے وہ پائیداری اور عوامی شراکت ہے۔اکثر ماہرین کی نظر میں یہ دونوں تصورات ایک ہی سکے کے دو رخ ہیں، بلکہ اگر یہ کہا جائے کہ عوامی شراکت جتنی زیادہ ہو گی اتنا ہی استحکام پا ئیدار ہو گا تو غلط نا ہو گا۔ فیصلہ سازی اور عملی کام کی جتنی زیادہ ذمہ داری کمیونٹی خود لے گی اتنی ہی انکی صلاحیت بڑھے گی۔ اسی طرح این جی اوز یا حکومتی اداروں کا بوجھ بھی کم ہو گا۔لیکن یہ کہنا آسان اورکرنا
مزید پڑھیے


انتخابی قوانین کی مضحکہ خیزیاں

هفته 10  ستمبر 2022ء
سرور باری
18 اگست کو چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس عمر عطا بندیال نے کہا کہ "پارلیمنٹ میں بیٹھے افراد کو ایسی قانون سازی سے گریز کرنا چاہیے جس سے انکے اپنے مفادات وابستہ ہوں "۔نہ جانے انہوں نے یہ بات کس تناظر میں کہی، لیکن ان کی اس بات نے عوام کے دکھ درد کی عکاسی کی ہے۔ پھر بھی یہ ایک ادھورا سچ ہے۔ ستم ظریفی یہ ہے کہ وہ قوانین جو سماج میں اقتصادی، سیاسی اور مساوی حقوق کے ضامن ہیں ، انکی ڈھٹائی سے خلاف ورزی اور انہیں اکثر طاقتور کے ہاتھوں پامال کیاجاتا ہے۔ مثلاً عورت
مزید پڑھیے


آفات۔ مرض بڑھتا گیا جوں جوں دوا کی…(2)

منگل 06  ستمبر 2022ء
سرور باری
بس، موجودہ سیلاب کے انتظام کا فریم ورک عالمی سطح کے مشاورت کار، ماہرین اقتصادیات، ماہرین عمرانیات، ہائیڈرو لوجسٹ اور ڈبلیو بی، اے ڈی بی، اقوام متحدہ اور پاکستانی حکام کے ماہرین کی طرف سے ایک اجتماعی بیوقوفانہ طرز عمل دکھائی دیتا ہے۔ بس بہت ہو گیا۔ اب وقت آگیا ہے کہ عوامی مفادات پر مرکوز،جدت اور عوامی شمولیت و رائے پر مبنی حکمت عملی تیار کی جائے۔ اس کے حوالے سے ڈونرز بھی اتنے ہی ذمہ دار ہیں جتنے کہ ہم اپنی ناکامی کے اور چونکہ انہوں نے جو منصوبے بنائے تھے وہ اپنے مقاصد حاصل نہیں کر سکے،
مزید پڑھیے


آفات۔ مرض بڑھتا گیا جوں جوں دوا کی

هفته 03  ستمبر 2022ء
سرور باری

1950 سے اب تک پاکستان 29 بڑی سیلابی آفات سے تباہ ہو چکا ہے۔ ملک نے سیلاب سے بچاؤ کے ہزاروں اقدامات پر اربوں روپے خرچ کیے، پھر بھی نقصانات بڑھتے رہے۔ حالیہ تباہ کن آفتِ ہمیں اپنی سیلاب سے بچاؤ کی حکمت عملی کو از سرنو سوچنے کا موقع فراہم کررہی ہے کیونکہ قومی سطح پر یہ بری طرح ناکام ہو چکی ہے۔ یہ ہر ایک کی اجتماعی ناکامی ہے جس نے اس کی تشکیل میں حصہ لیا، اس کے لیے فنڈز فراہم کیے اور اس پر عمل کیا۔ سب سے پہلے اور سب سے اہم بات، ہمارے پالیسی
مزید پڑھیے



75 سال کی کہانی

هفته 27  اگست 2022ء
سرور باری
ولیم پرویز کا شکریہ جو میرے مضمون کا ترجمہ کر دیتے ہیں ،یوں میں اردو کے قارئین سے مخاطب ہو پاتا ہوں ۔اگست کا اختتام ہو رہا ہے اور پاکستان کے مسائل کی بحث طول پکڑ رہی ہے ۔ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کے مطابق اس وقت پاکستان میں سیاسی بدعنوانی اعلیٰ ترین سطح پر پہنچ چکی ہے۔ انتخابی عمل دولت اور اثر رسوخ حاصل کرنے کا بہترین ذریعہ بن چکا ہے، اس کی وجہ سے ادارے کمزوراور غربت کے خاتمہ کی تمام کوششیں ناکام ثابت ہوئی ہیں۔ آزادی کی پچھہترویں سالگرہ کے موقع پر
مزید پڑھیے


سیلابی آفت ہماری حماقت کا نتیجہ !

هفته 20  اگست 2022ء
سرور باری
فطرت کے بارے میں بھرپور فہم رکھنے کے باوجود انسان اس کے ساتھ رہنے میں ناکام رہے ہیں۔ محض اس لیے کہ وہ اس پر قبضہ کرنے کی کوشش کرتے رہے ہیں اور ایسے تمام اعمال سے آفت کا خدشہ بڑھ جاتا ہے، جو غور طلب معاملہ ہے۔مثلاً اگر زلزلہ کسی ایسے پہاڑی علاقے میں آئے جو آباد نہ ہو اور جس میں کوئی انفراسٹرکچر نہ ہو یا سیلاب کا پانی کسی صحرا میں داخل ہو جائے اور جہاں کوئی آباد نہ ہو تو کسی قسم کا نقصان نہیں ہوگا۔ 1997 کے سیلاب کے بعد، پتن تنظیم نے سرگودھا اور مظفر
مزید پڑھیے


ضمنی انتخابات کے انعقاد کا تجزیہ !

هفته 23 جولائی 2022ء
سرور باری
مشہور مقولہ ہے کہ دنیا میں کوئی فری لنچ نہیں، اور پاکستان میں کوئی فری الیکشن نہیں،کم از کم ہماری زندگی میں تو یہ ممکن نہیں۔ الیکشن پر خرچ کیا گیا پیسہ،ہزار گنا وصول کرنے کے لیے خرچ کیا جاتا ہے۔ کچھ اندازوں کے مطابق اوسطاً قومی حلقے کا ہر امیدوار انتخابی مہم پر دس سے پندر ہ کروڑ روپے خرچ کرتا ہے جبکہ قانونی حد صرف چالیس لاکھ ہے اورمیں یہ بات اعتماد کیساتھ کہہ سکتا ہوں کہ انتخابی مہم پر شاہانہ خرچ کرنے والے امیدوار ہر قسم کی دھاندلی میں ملوث پائے جاتے ہیں۔ حال
مزید پڑھیے


زحمت میں بدلتی رحمت

هفته 16 جولائی 2022ء
سرور باری
پاکستان مختلف نوع کی آفات کا شکار ملک ہے۔ سیلاب، زلزلے، تودے گرنا، بادل پھٹنا، خشک سالی اور طوفان۔ ابھی، مون سون کے موسم کے آغاز میں ہی ہمارے شہر زیر آب آ چکے ہیں۔ کراچی جہنم جیسی تباہی سے دوچار ہے۔ گزشتہ سال بھی کچھ مختلف نہیں تھا اور اْس سے پہلے کا سال بھی۔ بلوچستان کے وسیع علاقے بھی تباہی کا شکار ہیں۔ آفات کے باعث حکمرانوں کو شرمندگی کا سامناضرور کرنا پڑتا ہے، لیکن وہ اسے سنجیدگی سے نہیں لیتے۔ موسمیاتی تبدیلی اور شدید بارشوںکی وجہ سے جلد ہی دریاؤں میں پانی کی سطح بلند ہونا شروع
مزید پڑھیے


حالیہ بلدیاتی الیکشن میں سامنے آنے والے نقائص

هفته 09 جولائی 2022ء
سرور باری
پاکستان میں ووٹرز کی مرضی اور انتخابات کے نتائج کو متاثر کرنے کے لیے 160 سے زائد غیر قانونی اور غیر اخلاقی ذرائع استعمال کیے جاتے ہیں۔ 20 ضمنی انتخابات کے تجزیے سے، حال ہی میں ہونے والے بلدیاتی اور عام انتخابات کے پچھلے راؤنڈز میں کسی نہ کسی شکل میں الیکشنز ایکٹ 2017 کے تقریباً ہر سیکشن اور ہر اصول کی خلاف ورزی کا انکشاف ہوا ہے۔ اس کا عمل دخل وہاں پر زیادہ وسیع پیمانے پر ہوتا ہے جہاں طاقت اور پیسہ یکجا ہو جائیں۔ پتن ترقیاتی تنظیم کی ملک میں دھاندلی کے طریقوں پر تحقیق کا بنیادی
مزید پڑھیے








اہم خبریں