BN

سعدیہ قریشی


اگر دن ہی منانا تھا تو…!


چند روز پہلے ہمارے وزیراعظم نے اعلان کیا تھا کہ 9 اگست کو ٹائیگر فورس کا دن منایا جائے گا۔ اس دن سے میں اسی سوچ میں غلطاں ہوں کہ آخر ٹائیگر فورس نے ایسا کون سا کارنامہ سرانجام دیا ہے کہ قوم ٹائیگر فورس کا دن منائے۔ تو صاحبو! آج 9 اگست ہے۔ بروز اتوار ٹائیگر فورس کا دن پاکستان میں منایا جارہا ہے۔ اعلان تھا کہ 9 اگست کوٹائیگر فورس لاکھوں پودے لگا کر شجرکاری کا آغاز کرے گی۔ تو اگر اس دن کا مقصد درخت لگانا ہے تو پھر اسے شجرکاری ڈے کا نام کیوں نہ دیا گیا؟ وزیراعظم
اتوار 09  اگست 2020ء

چھوٹے بچوں کے لئے آن لائن کلاسیں

جمعه 07  اگست 2020ء
سعدیہ قریشی
اللہ کا کروڑوں بار احسان ہے کہ کورونا کا عذاب ٹل رہا ہے۔حالات قابو میں آ رہے ہیں اور زندگی کا چہرہ رفتہ رفتہ شادابی کی طرف لوٹ رہا ہے۔اور یہ ہی سچ ہے کہ زندگی جس نارمل صورت میں پہلے تھی اب وہ کورونا کے بعد ایک نئے نارمل کے ساتھ ہمارے سامنے ہو گی جسے new normalکا نام دیا گیا ہے۔ ہم حفاظتی ایس او پیز کے ساتھ زندگی کو گزاریں گے۔ لیکن امید ہے کہ جلد ہی ہمیں ان شکنجوں سے بھی چھٹکارا مل جائے گا۔ تعلیمی ادارے کھولنے کا مسئلہ ابھی جوں کا توں ہے۔ اگرچہ فیصلہ
مزید پڑھیے


ریفلیکشن

بدھ 05  اگست 2020ء
سعدیہ قریشی
لگی بندی مصروفیت کے یکسانیت بھرے شب و روز میں سانس لیتی ہوئی زندگی تہواروں کی چھٹیوں میں سستانے لگتی ہے۔ تہوار کی خوشی، مل بیٹھنے کے اگرچہ وہ قرینے ابھی واپس نہیں آئے لیکن پھر بھی سماجی فاصلے کو قائم رکھتے ہوئے‘معانقے اور مصافحے سے گریز کرتے ہوئے منہ پر ماسک چڑھائے‘ کچھ وقت میل ملاقات میں ضرور صرف کیا۔ کچھ عیدالاضحی کی چھٹی۔ اور کچھ کالم کے دنوں کی چھٹی ایسے وقت میں آئی کہ لکھنے میں پانچ دن کا وقفہ پڑا۔ یعنی آج پانچواں روز ہے کہ قارئین کی چوپال میں اپنی کہانی لئے حاضر ہیں۔ چھٹی جہاں ہمیں
مزید پڑھیے


دو سال کی پرانی یادیں

جمعه 31 جولائی 2020ء
سعدیہ قریشی
فیس بک ان دنوں جولائی کی دو سال پرانی یادوں کو دھرا رہی ہے اور یہ وہ یادیں ہیں جنہیں ہم کم از کم یاد کر کے اپنے جی کو مزید نہیں جلانا چاہتے۔ 25جولائی 2018ء کو چھپنے والا کالم میرے سامنے ہے ملک میں جنرل الیکشن کا جوش و خروش اور عام پاکستانی دو بڑی سیاسی جماعتوں کی کرپشن سے سخت نالاں‘ تبدیلی کی خواہش اور ایک نئے پاکستان کا خواب لے کر ووٹ ڈالنے نکلا تھا۔ پرانا کالم پڑھا تو اندازہ ہوا کہ مجھ جیسے حقیقت پسند نے کچھ نہ کچھ بہتری کی امید کپتان سے لگا لی تھی حالانکہ
مزید پڑھیے


پاکستان کو معذوری سے بچائیں۔ پولیو وکرز کا ساتھ دیں

منگل 28 جولائی 2020ء
سعدیہ قریشی
کبھی آپ نے پولیو ورکرز دیکھے ہیں؟ ان میں خواتین بھی ہوتی ہیں اور مرد حضرات بھی۔ پولیو ویکسین کا باکس پکڑے ایک رجسٹر اور قلم تھامے وہ پیدل چلتے جاتے ہیں۔ موسم کی سختیاں برداشت کرتے گھر گھر کا دروازہ کھٹکھٹاتے اور پانچ سال تک کے بچوں کا پوچھتے ہیں تاکہ کوئی بچہ پولیو کے قطرے پیئے بغیر نہ رہ جائے۔ ان پولیو ورکرز کو سارا دن مختلف مزاج کے لوگوں سے واسطہ پڑتا ہے۔ بہت معمولی معاوضے کے عوض یہ لوگوں کی گھوریاں بھی سہتے ہیں‘ جھڑکیاں بھی سن لیتے ہیں‘ ناخوشگوار باتیں بھی برداشت کرتے ہیں لیکن گھر گھر
مزید پڑھیے



عدم برداشت کے آتش فشاں کو کیسے ٹھنڈا کریں

اتوار 26 جولائی 2020ء
سعدیہ قریشی
عدم برداشت کی وحشت کو رواداری کی خوبصورتی میں کیسے بدلیں۔ گزشستہ ہفتے ایک ویڈیو بہت وائرل ہوئی۔ ایک بدبخت‘ وحشت کے عالم میں اپنی ماں کو بری طرح پیٹ رہا تھا۔ سچی بات ہے کہ مجھ سے تو ایک بار بھی اسے مکمل دیکھا نہیں گیا۔ ایک آدھ سیکنڈ کے بعد میں نے اسے بند کردیا۔ اس کے بعد اس خبر کا فالواپ بھی مین سٹریم میڈیا اور سوشل میڈیا پر مسلسل آتا رہا۔ بدقسمت ماں کا انٹرویو بھی سنا اور اس سین کی بات چیت بھی جس نے اس دلخراش ناقابل بیان منظر کی ویڈیو بنا کر
مزید پڑھیے


ایموجیز:جذبات کے اظہار کی تصویری زبان

جمعه 24 جولائی 2020ء
سعدیہ قریشی
بھائی جان کا ہم چار چھوٹے بہن بھائیوں پر ہمیشہ ایک رعب سا رہا ہے۔ اب جبکہ ہم چار چھوٹے بہن بھائی بھی کافی بڑے ہو چکے ہیں تو اس رعب والے رویے میں کافی کمی آ چکی ہے۔ لیکن اس کے باوجود ان کی شخصیت کے گرد بڑے ہونے اور کچھ کچھ Bossyہونے کا ایک ہالہ سا ضرور موجود ہے۔بہن بھائیوں میں بڑے ہونے کا انہیں کچھ زیادہ ہی احساس تھا کہ وہ کبھی ہمارے ساتھ کھیلوں میں شریک نہیں ہوتے تھے‘بچپن والی مستیاں جو اوپر تلے کے بہن بھائی مل کر کرتے ہیں انہوں نے ہمیشہ اس سے
مزید پڑھیے


’’مائنس عوام‘‘

بدھ 22 جولائی 2020ء
سعدیہ قریشی
یہ مائنس ون اور مائنس ٹو والے سیاسی ڈھونگ اور کھیل تماشے‘ سب عوام کو بیوقوف بنانے کے علاوہ اور کیا ہیں۔ حقیقت یہ ہے کہ اقتدار اور طاقت کی اس کہانی میں خود عوام 73 سالوں سے مائنس ہو چکے ہیں۔ سو عوام کو سمجھ لینا چاہیے کہ یہاں بظاہر مائنس فلاں اور مائنس فلاں ہوتا رہے گا لیکن اصل ہاتھ تو عوام کے ساتھ ہو چکا ہے جن کے نام پر ووٹ مانگے جاتے ہیں‘ جن کی زندگیاں آسان بنانے کے دعوے کئے جاتے ہیں جن کو سیڑھی بنا کر شہر اقتدار میں قدم رنجا فرمایا جاتا ہے‘ وہی
مزید پڑھیے


شخصیت نہیں فوٹو کاپیاں

اتوار 19 جولائی 2020ء
سعدیہ قریشی
بھیڑ چال میں ہمارا کوئی ثانی نہیں‘ ہم مکھی پر مکھی مارنے والی قوم ہیں۔ ہماری تخلیقی صلاحیتوں کی تان ریپلیکا پر آ کرٹوٹتی ہے۔ ہم سے ماہر نقل خور قوم شاید ہی روئے زمین پر کوئی اور ہو۔ ہم انفرادیت کی چادر اتار کر پھینک چکے‘ اب ٹرینڈز کی ٹاپ اورجینز پہنے اترائے پھرتے ہیں۔ ہمسائے کا منہ لال دیکھ کراپنا منہ ’’چپیڑ‘‘ مار کر لال کرنے کو ہم طعنہ نہیں بلکہ اپنا فخر سمجھتے ہیں۔ ایسا لگتا ہے کہ ہماری کوئی روایت نہیں تھی۔ کوئی ماضی نہیں تھا‘ ہماری جڑیں کسی زمین پر پیوست نہ تھیں۔ ہم گلدان میں
مزید پڑھیے


تربیت روح سے جڑا ہوا عمل ہے

جمعه 17 جولائی 2020ء
سعدیہ قریشی
گزشتہ جمعے کو بچوں کی تربیت کے حوالے سے کالم لکھا تو اس پر غیر معمولی ردعمل آیا۔ والدین کی اس موضوع میں دلچسپی تو فطری تھی مگر مجھے حیرانی ہوئی کہ کچھ طالب علموں کی ای میلز بھی مجھے موصول ہوئیں اور انہوں نے بھی اس موضوع میں دلچسپی ظاہر کی۔ اس پر مجھے ایک لطیفہ یاد آ گیا کہ ایک بچہ کتابوں کی ایک دکان پر جا کر کہتا ہے کہ بچوں کی تربیت کے بارے میں کوئی کتاب آپ کے پاس ہے۔ دکان دار حیران ہو کر پوچھتا ہے بیٹا!آپ نے کیا کرنی ہے۔ تو بچہ معصومیت
مزید پڑھیے