سعدیہ قریشی



پاکستانی ایسے ہی ہیں۔شاندار میزبان!


امریکہ سے تعلق رکھنے والا ڈریوبنسکی(drew Binsky) ایک ٹریول بلاگر ہے۔ وہ 162ملکوں کی یاترا کر چکا ہے۔ ملکوں ملکوں گھومتا اور اپنی سیر کی ویڈیوز بناتا ہے جسے اپنے یوٹیوب چینل پر اپ لوڈ کرتا ہے۔ سوشل میڈیا پر لاکھوں صارفین اس کے سفر کی دلچسپ ویڈیوز کے دیوانے ہیں۔

ڈریوبنسکی امریکی ریاست ٹیکساس کے میٹرو پولیٹن شہر ڈیلس میں پیدا ہوا۔ اور ایروزنا میں پلا بڑھا۔ اکنامکس اور انٹر پنیور شپ میں اس نے ماسٹرز کیا اور پھر اپنی ڈگری کے بالکل برعکس پیشہ اختیار کیا وہ کوریا میں انگریزی زبان پڑھانے پر مامور ہو گیا۔ بنسکی کہتا ہے
جمعه 05 اپریل 2019ء

بڑھک باز

بدھ 03 اپریل 2019ء
سعدیہ قریشی
بڑھکیں مارنے میں ان کا کوئی ثانی تھا نہ ہو گا۔ بڑھکیں مارنے اور یوٹرن لینے میں انہیں ملکہ حاصل ہے۔ اور صرف اپنی ہی نہیں ان کے پیرو کاروں جنہیں وہ محبت سے کھلاڑی، پکارتے ہیں۔ بڑھکیں مارنے‘ مخالفین کو صلواتیں سنانے اور تڑیاں لگانے میں بے مثال ہیں۔ اپوزیشن میں تھے تو پریس کانفرنسوں، دھرنوں، جلسوں اور ریلیوں میں بیانات کا یہ طوفان بلا خیز عوام میں خوب بکتا تھا اور سچی بات ہے اپوزیشن میں تھے تو یہ سب کچھ جچتا اور سجتا بھی تھا۔ میرا مطلب ہے یعنی صلواتیں‘ اور تڑیاں ساتھ ہی اونچی اونچی بڑھکیں۔! حالات کو بدل
مزید پڑھیے


غربت میں ’’شاندار‘‘ اضافہ

اتوار 31 مارچ 2019ء
سعدیہ قریشی
سیاست کے منظر نامے پر وہی ہو رہا ہے جو ہمیشہ سے ہوتا آیا ہے۔ بیانات‘ تقریریں‘ الزامات‘ مذمتیں‘پریس کانفرنسیں‘ سیاسی حلیفوں اور حریفوں سے ملاقاتیں‘ ٹرین مارچ‘ ریلیاں‘ جلسے‘ اگلی حکمت عملی طے کرنے کے لئے بات چیت‘ سیاسی دائو پیچ کھیلنے کی ہمہ وقت تیاریاں‘ سیاست کی بساط پر حریف کو شہ مات دینے کا لائحہ عمل۔ قبل از وقت ضمانتوں کی تیاریاں‘ قانون کی گرفت سے خود کو بچانے کے تمام خفیہ اور ظاہری حربے۔ ٹی وی چینلوں کے تھڑوں پر بیٹھ کر حریفوں سے آن کیمرہ دوبدو لڑائیاں اور آف کیمرہ معانقے۔ کہیں کہیں مگر ذائقہ
مزید پڑھیے


پورے سماج کو نفسیاتی علاج کی ضرورت ہے

جمعه 29 مارچ 2019ء
سعدیہ قریشی
آنسوئوں سے بھیگی متورم آنکھیں‘ استرے سے منڈھا ہوا سر اور جسم پر جگہ جگہ تشدد کے نشانات‘ ڈی ایچ اے ‘ رہبر کی رہائشی‘ ستم رسیدہ اسماء عزیز میڈیا کو اپنے اوپر ظلم کی کہانی سنا رہی تھی۔ وہ اگر اپنی کہانی بہت سارے لفظوں میں نہ بھی بیان کرتی تو اس پر بیتنے والے ظلم کی داستان اس کے چہرے مہرے سے عیاں ہو رہی تھی۔ ان گنت زخموں کے وہ نشان مگر میڈیا دیکھنے سے قاصر تھا جو اپنے شوہر کے ہاتھوں ذلت‘ رسوائی اور جبر سے اس کی روح پر لگے ہوں گے۔ میں سوچتی ہوں کہ کسی
مزید پڑھیے


اسی جھوٹ کا نام سیاست ہے

بدھ 27 مارچ 2019ء
سعدیہ قریشی
جارج آرول کی سیاست کے بارے میں کہی ہوئی یہ بات بہت مشہور ہے کہ: political language is designed to make lies sound truthful and murder respectable. سیاست کی زبان کو اس طرح سے اختراع کیا جاتا ہے کہ جھوٹ پر سچ کا گمان گزرے اور قتل معتبر لگے‘ اسی طرح ایک صاحب امریکی دانشور ہیں انہوں نے بھی کمال بات کی اور کہا ’’اگر عوام حکومت سے جھوٹ بولیں تو یہ مس کنڈیکٹ اور جرم ہو گا تاہم اگر حکومت عوام سے جھوٹ بولے اسے ’’سیاست‘‘ کہا جائے گا‘‘ امریکی دانش گاہ سے درآمد کی گئی یہ دونوں باتیں‘ وطن عزیز کی سیاست کے
مزید پڑھیے




محترمہ امبر رشید اور عدم برداشت کا جہنم

جمعه 22 مارچ 2019ء
سعدیہ قریشی
شوہر اور جوان بیٹا کھودینے کے بعد دکھ اور اندوہ کی انتہا پر۔ وہ محترم خاتون صبر و رضا کی چادر اوڑھے جس سہولت اور سکون قلب سے بات کرتی تھیں اس نے ایک لمحے کے لیے مجھے گنگ کردیا۔میں نے صبر کو مجسم صورت میں کبھی نہیں دیکھا تھا مگر جب امبر رشید کی ویڈیو دیکھی‘ ان کی باتیں سنیں تو یقین آ گیا کہ صبر و رضا کس دولت کا نام ہے میرا رب یہ دولت کیسے انمول دلوں پر اتارتا ہے۔ قیامت کے اس دکھ میں ضبط کی انتہا دیکھنی ہو تو کوئی اس محترم خاتون کو دیکھ
مزید پڑھیے


جیسنڈا آرڈرن: ہجر کی دھوپ میں چھائوں جیسی!

بدھ 20 مارچ 2019ء
سعدیہ قریشی
ریاست ماں کے جیسی کا نعرہ ہماری سرزمین پر لگتا رہا اور اس کا عملی مظاہرہ ہمیں نیوزی لینڈ کی سرزمین پر دکھائی دیا، جب نیوزی لینڈ کی وزیراعظم کرائسٹ چرچ کے مسلمان متاثرین کے لیے مجسم ماں کے روپ میں ڈھل گئی۔ وحشت اور خوف کے لہولہان اذیت ناک منظروں کے درمیان یہ زخموں پر مرہم رکھنے جیسا اجلا منظر تھا۔ جیسے کوئی اپنا آنسوئوں کو اپنی پوروں میں جذب کر کے دکھ کی گھڑی میں آپ کو آپ کے ساتھ ہونے کا یقین دلائے۔ جیسنڈا آرڈرن کے نام سے بھی ہم واقف نہ تھے لیکن ان کی ہم درد اور
مزید پڑھیے


سفید فاموں کی بدترین دہشت گردی

اتوار 17 مارچ 2019ء
سعدیہ قریشی
ڈاکٹر استھرچو Esther Choo امریکی ریاست آرگن میں ایک امیگرینٹ ہیں۔ ڈاکٹر چو ریاست Oregon کے شہر پورٹ لینڈ میں ہیلتھ اینڈ سائنس یونیورسٹی میں ایک تجربہ کار فزیشن کے طور پر اپنی خدمات سرانجام دے رہی ہیں۔ انہوں نے 2017ء میں انڈی پینڈنٹ اخبار میں ایک مضمون لکھا کہ انہیں اپنی پیشہ وارانہ زندگی میں سفید فاموں کے نسلی امتیاز کی بدسلوکی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ اس کے لیے White supremacy کی اصطلاح استعمال کی جاتی ہے۔ ڈاکٹر چوکا کہنا ہے کہ سال میں دو تین بار انہیں ایسے سفید فام مریضوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے جو
مزید پڑھیے


غربت میں فی الفور کمی۔!

جمعه 15 مارچ 2019ء
سعدیہ قریشی
یہ ملک حکمران طبقے کے لئے بنا ہے وہ جو حکمرانی کر رہے ہیں۔ وہ جو حکمرانی کی کئی باریاں لے چکے اور ایک بار پھر اپنی باری کے انتظارمیں ہیں۔ اور وہ بھی جو کسی نہ کسی طور حکمرانی کے اس بندوبست کا حصہ ہوتے ہیں۔ جنہیں ہر حکومت میں ٹھیکے‘ کمیشن اور ثمرات حاصل ہوتے رہتے ہیں۔ تاجر‘ امرا‘ وزراء یہ ملک انہی کے لئے بنا ہے! باہر سے ایک دوسرے کے سیاسی مخالفین۔ ٹاک شوز اور سوشل میڈیا کو میدان جنگ بنائے۔ عوام کو ایک فریب میں مبتلا کرنے والے یہ شاطر سیاستدان اندر سے بالکل ایک ہیں۔
مزید پڑھیے


غیر روایتی فیمنسٹ!

بدھ 13 مارچ 2019ء
سعدیہ قریشی
گزشتہ کالم ’’بے سمت عورتوں کا مارچ‘‘ فیس بک پر پوسٹ کی تو اس پر ہماری ایک شاعرہ اور کالم نگار دوست نے اپنے دل کی بھڑاس یوں نکالی کہ کمنٹ میں پورا ایک مضمون لکھ ڈالا۔ اختلافی نقطہ نظر سے میں ہمیشہ لطف اندوز ہوتی ہوں کیونکہ اس سے کسی بھی ایشو کے کئی زاویے سامنے آتے ہیں اور بات کو سمجھنے میں مدد ملتی ہے۔ میں اپنے آدھے سچ پر یقین نہیں رکھتی بلکہ دوسروں کا آدھا سچ بھی سننے کا حوصلہ رکھتی ہوں اس لئے کہ جب آپ اپنی سوچ کے دروازے کھلے نہیں رکھیں گے آپ
مزید پڑھیے