BN

سعد الله شاہ

اخلاص کیا ہے

جمعه 25 مئی 2018ء
بات ہو رہی تھی اخلاص کی کہ یہ بابِ صدق سے ہے کہ یہی اسلام کی اساس ہے۔ کیسی خوبصورت بات ہے کہ نیت کی تہہ میں بھی صدق ہے اور ہمیں بتایا گیا کہ اصل چیز نیت ہے کہ یہ انسان کو بعض اوقات پانی منزل تک بغیر عمل کے بھی پہنچا دیتی ہے۔ یعنی نیت اور عمل تو لازم و ملزوم ہیں مقصد کو حاصل کرنے کے لیے مگر نیت کو عمل کی مہلت نہ بھی ملے مقصد براری ہو جاتی ہے۔ آپؐ نے ایک غزوہ کے بعد صحابہ سے کہا کہ کچھ لوگ نے ہمارے ہر ہر
مزید پڑھیے


مدینہ میری منزل ہے

جمعرات 24 مئی 2018ء
میری کوشش بار آور ہوئی کہ میرے دیرینہ دوست یعقوب پرواز جنہوں نے خاصی بزرگی اوڑھ لی ہے میرے ٹی وی پروگرام میں تشریف لائے۔ اس مرتبہ نعتیہ محفل تھی۔ میرے لیے تعجب کی بات تھی کہ انہوں نے اپنی مشہور نعت ترنم سے پڑھنا شروع کی تو ایک سماں باندھ دیا۔ خوبی ان کی یہی کہ وہ کوئی باقاعدہ نعت خواں نہیں۔ ایک بے ساختہ اور فطری انداز کہ جیسے آمد رحمت ہوئی۔ اسی طرح ان کے لفظوں میں ڈھل رہی تھی۔ سو زوگداز سے لبریز، محبت و مودت میں بھیگی ہوئی اور فکر و تدبر میں گندھی ہوئی: جس
مزید پڑھیے


سپیشل افطاری

بدھ 23 مئی 2018ء
کئی قسم کے لوگ ہوتے ہیں۔ کچھ اپنے لیے جیتے ہیں، کچھ دوسروں کے لیے اپنا آپ وقف کردیتے ہیں اور کچھ ایسے بھی ہوتے ہیں جو دوسروں کو بھی جینے نہیں دیتے۔ اس مخلوق میں بڑی ورائٹی ہے۔ اللہ نے تو موت اور حیات کو اس لیے پیدا کیا وہ دیکھے کون احسن عمل کر کے لایا ہے۔ اس سے پہلے کہ بات کسی اور طرف نکل جائے میں بتادوں کہ غزالی ٹرسٹ کے سید عامر محمود کا تعلق انہی خوش قسمت لوگوں میں ہوتا ہے جن کے دل میں انسانیت کا درد ڈال دیا گیا ہے اور وہ
مزید پڑھیے


جوتے کی پذیرائی

منگل 22 مئی 2018ء
میں حیران ہوں کہ ہمارے ہاں جوتے کو اس قدر پذیرائی کیوں ملتی ہے۔ ابھی چند یوم پہلے ہی تو میں نے اس جوتے کا ذکر کیا تھا جو میٹل کا بنا ہوا تھا اور اس میں اسرائیلی وزیراعظم نے اپنے جاپانی مہمان وزیراعظم کو چاکلیٹ اور سویٹ پیش کی تھی۔ اس جوتا ڈش پر جاپان نے بہت احتجاج کیا تھا کہ ان کے ہاں جوتے انتہائی ناپسندیدہ شے ہے کہ وہ اپنے دفتروں اور گھروں میں بھی جوتے پہن کر نہیں آتے۔ باہرہی اتار دیتے ہیں چہ جائے کہ ان کے وزیراعظم کے دستر خوان پر یعنی ڈائننگ ٹیبل
مزید پڑھیے


رمضان المبارک، سب کی تربیت کا مہینہ

پیر 21 مئی 2018ء
حیدرآباد سے دعا علی کا فون آیا کہ آپ نے رمضان پر کوئی کالم نہیں لکھا۔ میں نے کہا کہ ایسی بات نہیں رمضان شریف کا تذکرہ میرے کالم میں ہے۔ کہنے لگی ایسا کالم پڑھنا چاہتے ہیں جو خالص ماہ صیام کے حوالے سے ہو، اسے سیاست کے ساتھ آلودہ نہ کیا جائے۔ اس کی بات اپنی جگہ درست اور میں اس کی خواہش کا احترام کرتے ہوئے کچھ نہ کچھ تحریر کروںگا مگر ذہن میں یہ بات رہے کہ ’’جدا ہوویں سیاست سے تو رہ جاتی ہے چنگیزی‘‘ یہ مہینہ تو سب کی تربیت کے لیے ہے۔ رات ہی
مزید پڑھیے


سندھ اسمبلی میںتذکرہ ایک جانور کا

هفته 19 مئی 2018ء
لکھنا تو میں کسی اور موضوع پر چاہتا تھا مگر سراج درانی کے استفسار نے ہمیں کھینچ لیا کہ انہوں نے ایم کیو ایم کے عبدالرئوف صدیقی سے پوچھ لیا ’’کیا کبھی گدھے کا گوشت کھایا ہے‘‘ تفصیل میں دیکھا تو ان کے درمیان دلچسپ مکالمہ تھا۔ رئوف صدیقی نے اپنی بجٹ تقریر میں گدھوں کا تذکرہ چھیڑ دیا تو سپیکر آغا سراج درانی نے پوچھا، کیا آپ نے بھی گدھے کا گوشت کھایا ہے کیونکہ آپ نے بجٹ تقریر میں سب سے اہم بات یہ کی کہ گدھے بہت ہو چکے ہیں اور ہر طرح کا گدھا موجود ہے۔
مزید پڑھیے


محبت میں محمد(ﷺ) کا حوالہ

جمعه 18 مئی 2018ء
درویش اپنی تعریف سن کر بولا کہ کبرِ پارسائی سب سے بڑا گناہ ہے۔ بات یہ ہے کہ خیر کسی بھی زبان سے ادا ہو وہ خیر ہے۔ دوسری بات یہ کہ کسی کے ماضی پر اس کا حال نہ دیکھا جائے ہدایت کی گنجائش تو ہر وقت موجود ہے اور بھٹکنے کے بارے میں آپ تھوڑی طے کرتے ہیں ۔ معزز قارئین! میں نے جب یہ سنا کہ کبرِ پارسائی سب سے بڑا گنا ہے تو مجھے اسی وقت ایک گونا اطمینان ہو گیا کہ شکر ہے اس کبر کی میرے اندر تو کوئی گنجائش ہی نہیں۔ یہ فکر
مزید پڑھیے


جہالت کے انداز

جمعرات 17 مئی 2018ء
کبھی اشرف قدسی نے کہا تھا: اعلان جہل کر تجھے آسودگی ملے دانشوری تو خیر سے ہر گھر میں آ گئی واقعتاً یہ جہالت عجیب چیز ہے اور یہ معمولی شے بھی نہیں کہ آخر اس کا علم سے مقابلہ ہے اور یہ ایسی کیفیت یا سطح ہے کہ اسے سمجھنے میں بعض اوقات علم بھی جواب دے جاتا ہے اور بے بس نظر آتا ہے۔ ان کے تو کیا کہنے جو جہالت کو علم سمجھتے رہے اور ابو جہل کہلائے۔ یہ بھی تو کہا گیا کہ علم حاصل کرنا اصل میں اپنی جہالت کو ختم کرنا ہے گویا جب علم کی روشنی
مزید پڑھیے


آدھے ادھورے خواب

بدھ 16 مئی 2018ء
ڈاکٹر شاہد صدیقی صاحب سے پہلی ملاقات اس وقت ہوئی جب وہ محترم عرفان صدیقی کے ہمراہ میرے ہاں آئے کہ صدیقی صاحب کی کتب میرے پبلشرز سے شائع ہو رہی تھیں۔ شاہد صاحب پہلی ہی نظر میں ایک نستعلیق شخصیت کی صورت دل میں اتر گئے۔ پھر پتہ چلا کہ ان کا سبجیکٹ بھی انگریزی ہے اور Lumsمیں پڑھا رہے ہیں۔ میری ان کے ساتھ انگریزی کی مناسبت بھی بن گئی۔ اس کے بعد ان سے نیشنل بک فائونڈیشن کے کتاب میلہ میں ملاقات ہوئی۔ یہ تو معلوم ہوتا رہا کہ وہ ترقی کے زینے طے کرتے ہوئے وائس
مزید پڑھیے


مدر ڈے سیلی بریشن

منگل 15 مئی 2018ء
Mother's day یعنی مائوں کا دن آیا اور گزر گیا۔ اکثر لوگوں نے اپنی اپنی بساط کے مطابق یہ دن منایا۔ میں تو اپنی ماں کو روز یاد کرتا ہوں۔ میرا معمول ہے کہ میں مغرب کی نماز کے بعد ان کے لیے سورۃ الملک تلاوت کرتا ہوں۔ کبھی کبھی ایسا محسوس ہوتا ہے کہ وہ جانے کے بعد بھی میری رہنمائی کرتی ہیں۔ غالباً بائیس یا تئیس رمضان کو آج سے چھ سال قبل ان کی وفات ہوئی مگر وہ اپنے ہونے کا احساس قدم قدم پر دلاتی ہیں۔ غلط کام پر وہ بے دھڑک روک دیتیں اور اچھے
مزید پڑھیے