BN

سعد الله شاہ



غیر سنجیدہ منظر نامہ


مجھے اچھا نہیں لگتا کوئی تجھ سا نہیں لگتا میں ایسے بات سنتا ہوں کہ تو جھوٹا نہیں لگتا امید ہے آپ شعروں کے اختصار و اعجاز کو محسوس کر سکیں گے کہ کوشش تو میں نے یہی کی ہے کہ بات کا ابلاغ اشارے کنائے ہی میں ہو جائے کہ پی ٹی آئی کے شعلہ نوا مقررین کے بلاغت نظام کی مجھے بات کرنا ہے۔ ابلاغ میں بعض اوقات پوری بات بھی ادھوری لگتی ہے اور کبھی ادھوری بھی پوری یگانہ یاد آئے ’’بات ادھوری مگر اثر دونا ۔اچھی لکنت زبان میں آئی لیجیے ایک عنفوان شباب کا شعر بھی ذھن و دل
هفته 28 دسمبر 2019ء

احساس اور ……………

جمعرات 26 دسمبر 2019ء
سعد الله شاہ
محفل سے اٹھ نہ جائیں کہیں خامشی کے ساتھ ہم سے نہ کوئی بات کرے بے رخی کے ساتھ اپنا تو اصل زر سے بھی نقصان بڑھ گیا سچ مچ کا عشق مر گیا اک دل لگی کے ساتھ یہ احساس کا ردعمل ہے یا پھر کچھ اور! احساس کبھی آنے والی صورت حال کی طرف اشارہ کرتا ہے اور کبھی صورت حال کے انجام پر چونکتا ہے۔ میں نے اس احساس فکر کی بنیاد داخل سے اٹھائی کہ خارج میں مجھے جانا ہے اور آپ کو اس بحث میں شریک کرنا ہے۔ احساس کو چھونا کیا ہوتا ہے، احساس کا لمس روح کو
مزید پڑھیے


سمز کانووکیشن اور یاسمین راشد

منگل 24 دسمبر 2019ء
سعد الله شاہ
اکیس دسمبر کی دھند میں لپٹی ہوئی صبح اور سروسز انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز(SIMS) جسے عرف عام میں سمز کہا جاتا ہے کی کانووکیشن ایک خوشگوار اور یادگار تجربہ سے کم نہ تھا۔ ہم جس ایڈیٹوریم میں مشاعرے پڑھتے آ رہے ہیں وہاں آج ینگ ڈاکٹرز کی یہ اوتھ سیری منی اپنی نوعیت کی ایک شاندار تقریب تھی۔ میں اسے روایتی انداز میں بیان نہیں کروں گا کہ پہلے مجھے اس ہونہار ڈاکٹر کا تذکرہ کرنا اچھا لگے گا کہ جس نے 26گولڈ اور سلور میڈلز حاصل کئے۔ غیر معمولی لیاقت کا حامل یہ ڈاکٹر مراد محمود جسے معنوی
مزید پڑھیے


اکثریت فوج کے ساتھ کھڑی ہے

اتوار 22 دسمبر 2019ء
سعد الله شاہ
ہر طرف تھا شور برپا اور لوگوں کا ہجوم ہم نے گویا شہر سارا اپنی جانب کر لیا کتنی خوش اسلوبیوں سے اس نے کاٹا یہ سفر پائوں پڑنے والے ہی نے آخر میرا سر لیا سنگین غداری کیس میں سابق صدر پرویز مشرف کو سزائے موت کا تفصیلی فیصلہ آیا اور شور کچھ اور ڑھ گیا کہ اس کے کئی مضمرات بھی سامنے آ گئے۔ شکاری کا نشانہ چوک گیا ہے یا پھر شکاری خود نشانے پر آ گیا۔ ایسے ہی محسوس ہوتا ہے کہ شکاری مچان سے شیر کی کمر پر گرا ہے اور شیر کی کمر سے اب اسے کون اتارے
مزید پڑھیے


پنجاب یونیورسٹی کا مشاعرہ

هفته 21 دسمبر 2019ء
سعد الله شاہ
جنوں کی تیز بارش میں تجھے پانے کی خواہش میں میں دل کی سطح پر اکثر کھلی آنکھوں کو رکھتا تھا بڑھا دیتی ہیں عمروں کو نہ جانے یہ کتابیں کیوں میں چھوٹا تھا مگر سر پر کئی صدیوں کا سایہ تھا جب میں پنجاب یونیورسٹی نیو کیمپس کے فیصل ایڈیٹوریم میں مشاعرہ پڑھنے کے لئے اس کے رہائشی علاقے کی طرف سے داخل ہوا تو بارش ہو رہی تھی۔ دسمبر کی اس بارش نے مجھے کیا کچھ یاد دلا دیا کہ جب میں انہی سڑکوں پر موسم اور وقت سے بے نیاز شاموں کو گھوما کرتا تھا اور مشق سخن جاری رہتی
مزید پڑھیے




مشرف غدار نہیں

جمعرات 19 دسمبر 2019ء
سعد الله شاہ
ایسے لگتا ہے کہ کمزور بہت ہے تو بھی جیت کر جشن منانے کی ضرورت کیا تھی اس جشن پر تو بعد میں بات کرتے ہیں جو ن لیگ اور پیپلز پارٹی پرویز مشرف کی سزائے موت کے فیصلے پر منا رہی ہے پہلے ایک وضاحت ضروری سمجھتا ہوں کہ ’’غداری‘‘ کا لفظ سزائے موت سے زیادہ بدتر یا شدید ہے۔ بات تو ساری احساس کی ہے۔ ایک کہانی میں ہم پڑھا کرتے تھے کہ ایک کردار پر جھوٹا الزام تھا اور وہ اس الزام سے بری ہونے کے بعد بھی جھوٹا مشہور ہو گیا اس نے اسے دل پر لیا اور
مزید پڑھیے


زمستان میں بھی خزاں نہیں تھی

منگل 17 دسمبر 2019ء
سعد الله شاہ
ہے تندو تیز کس قدر اپنی یہ زندگی کتنے ہی حادثات سرشام ہو گئے مسئلہ یہ ہے کہ اب کیا ہو گا ہو چکی اپنی پذیرائی بھی بات یوں ہے کہ مجھے ان دونوں سوچوں نے پریشان کر دیا اور نتیجتاً میں ادارس ہو گیا۔ آدھا دسمبر گزر چکا اور اسے ہم موسم سرما کہتے ہیں اور یہ موسم خزاں کے بعد آنے والا موسم ہے مگر کیا کیا جائے کہ خزاں ختم ہی نہیں ہوئی اور یہ اس یخ بستہ موسم میں بھی در آئی ہے کہ چندپات شاید درختوں میں رہ گئے تھے۔ بعض جگہ واقعتاً زمستاں ایسے آتا ہے کہ سب
مزید پڑھیے


وجدان کی ایک شام

اتوار 15 دسمبر 2019ء
سعد الله شاہ
عطاء الحق قاسمی نے کہا تھا کہ کوئی ان کی تعریف کرے تو انہیں برا لگتا ہے اور اگر کوئی ان کی تعریف نہ کرے تو انہیں یہ اس سے بھی برا لگتا ہے۔ بہرحال ہمیں بھی اچھا لگا کہ معروف ادبی تنظیم وجدان نے ہمارے ساتھ ایک شام منائی۔ اس سے پیشتر ڈاکٹر صغریٰ صدف نے پلاک میں اور ڈاکٹر رفاقت علی نے آئی آر ڈیپارٹمنٹ پنجاب یونیورسٹی میں شام کا اہتمام کیا تھا۔ اس تقریب کی خوشی مجھے اس لئے ہوئی کہ یہ سرکاری شعبہ کی طرف سے نہیں بلکہ ایک نامور ادبی تنظیم وجدان جس کے چیئرمین
مزید پڑھیے


پنجاب کارڈیالوجی پر وکلاء کی یلغار

هفته 14 دسمبر 2019ء
سعد الله شاہ
یہ شہر سنگ ہے یہاں ٹوٹیں گے آئینے اب سوچتے ہیں بیٹھ کے آئینہ ساز کیا کتنا وحشت ناک منظر تھا۔ عقل و خرد مائوف۔ اس طرح تو کوئی دشمن بھی حملہ آور نہیں ہوتا کہ بیماروں اور مریضوں کی زندگیاں چھین لے۔ لگتا تھا کہ ہندوئوں نے کوئی بلوہ کر دیا ہے۔ اب کسی کو امان نہیں اپنی آنکھوں پہ یقین نہیں آ رہا تھا کہ قانون جاننے والے اور لوگوں کو انصاف دلانے والے وکلا اس طرح پنجاب کارڈیالوجی پر ’’دن خون‘‘ ماریں گے۔ اسلام کے یہ ’’شاہین و مردان حق‘‘ نعرے لگاتے ہوئے کہ اب ڈاکٹروں کا بائی پاس
مزید پڑھیے


دسمبر اور کچھ یادیں

بدھ 11 دسمبر 2019ء
سعد الله شاہ
نہ جانے دسمبر میں کیا ہے کہ سب اسے محسوس کرتے ہیں۔ اب تو اس میں سردی بھی نہیں ہوتی۔ وگرنہ ایک زمانہ تھا کہ اس میں کورا پڑتا تھا، دانت بجتے تھے اور منہ سے دھوئیں نکلتے تھے۔ جب سے گلوبل وارمنگ ہوئی ہے موسم بدل گئے ہیں تو اس کا اثر دسمبر پر بھی پڑا ہے کہ وہ ٹھٹھرتی راتیں رخصت ہو گئی ہیں۔ مجھے بچپن یاد ہے کہ ہم دسمبر کے مہینے میں رات کو لحاف اوڑھ کر بیٹھتے اور گنے چوستے۔ بہن بھائیوں میں لمبا چھلکا اتارنے کا مقابلہ ہوتا۔ اب تو ہمارے بچوں کو گنڈیری
مزید پڑھیے