ظہور دھریجہ


نواب صادق خان عباسی کی برسی


زندہ قومیں اپنے مشاہیر کے تہوار جوش و خروش سے مناتی ہیں ۔ 24مئی ، محسن پاکستان ، نواب آف بہاولپور صادق محمد خان عباسی کا یوم وفات ہے ۔ یہ حقیقت ہے کہ سابق ریاست بہاولپور کی قیام پاکستان اور استحکام پاکستان کیلئے خدمات ناقابل فراموش ہیں ۔پاکستان کیلئے خدمات کا تذکرہ کریں تو پتہ چلتا ہے کہ قیام پاکستان سے پہلے نواب آف بہاولپور نے ریاست کی طرف سے ایک ڈاک ٹکٹ جاری کیا جس پرایک طرف مملکت خداداد بہاولپور اور دوسری طرف پاکستان کا جھنڈا تھا ،پاکستان قائم ہو تو قائداعظم ریاست بہاولپور کی شاہی
هفته 23 مئی 2020ء

بلوچستان میں دہشت گردی

جمعه 22 مئی 2020ء
ظہور دھریجہ
گزشتہ روز بلوچستان میں دہشت گردی کے دو مختلف واقعات میں 7 سکیورٹی اہلکار شہید ہو گئے ، بلوچستان میں دہشت گردی کا یہ پہلا واقعہ نہیں ، ایک عرصے سے پاکستان کے دشمن دہشت گردی کر رہے ہیں ۔ ان کے تانے بانے افغانستان سے ہوتے ہوئے بھارت سے جا ملتے ہیں ۔ ان حالات میں ملک کی سرحدوں کو مضبوط بنانے کی ضرورت ہے ۔ ایف سی کے ساتھ ساتھ بلوچستان حکومت کو بھی اپنا کردار ادا کرنا چاہئے ۔ ایک کورونا کا عذاب ہے ، دوسرا اس طرح کے واقعات نے پوری قوم کو مغموم کر کے
مزید پڑھیے


ثقافتی پالیسی کا احیا کیوں ضروری ہے ؟

بدھ 20 مئی 2020ء
ظہور دھریجہ
کسی بھی ملک کیلئے ثقافتی پالیسی کا احیا ضروری ہے کہ ثقافت زندگی کے تمام معاملات کا احاطہ کرتی ہے ۔ بد قسمتی سے قیام پاکستان کے بعد ثقافتی پالیسی نہیں بن سکی ۔ 1959ء میں فیض احمد فیض آرٹس کونسل کے سیکرٹری مقرر ہوئے تو انہوں نے کچھ کام کیا بعد میں کچھ کام ذوالفقار علی بھٹو کے دور میں ہوا ، اس کے بعد سے خاموشی ہے ۔ قومی ثقافتی پالیسی کا احیاء ہونا چاہئے، یہ کام وفاق کی طرف سے ہونا ہے۔ 18 ویں ترمیم کے بعد صوبوں کو صوبائی خود مختاری حاصل ہوئی ہے ، صوبوں
مزید پڑھیے


نظام تعلیم کیسا ہونا چاہئے؟

منگل 19 مئی 2020ء
ظہور دھریجہ
عمران خان کی حکومت تبدیلی کے نعرے پر برسراقتدار آئی ہے مگر تبدیلی نظر نہیں آئی۔ یہ ٹھیک ہے کہ اس وقت کورونا وائرس ہے لیکن گزشتہ دو برسوں میں کچھ نہیں ہوا اور تو اور تعلیمی پالیسی بھی نہیں بن سکی۔ کسی بھی ملک کی ترقی کیلئے تعلیم کو خصوصی اہمیت حاصل ہوتی ہے۔ تعلیم کے حوالے سے نظام تعلیم اور نصاب تعلیم کا کردار بنیادی ہوتا ہے۔ بد قسمتی سے پاکستان وہ واحد ملک ہے جہاں اب تک نظام تعلیم قائم نہیں کیا جا سکا۔ جو بھی حکمران آتا ہے سب کی اپنی اپنی سوچ اور اپنی اپنی
مزید پڑھیے


عورت پر ظلم کب تک ؟

اتوار 17 مئی 2020ء
ظہور دھریجہ
ایک خبر کے مطابق دائرہ دین پناہ میں زمانہ جاہلیت کی یاد تازہ ہو گئی ، جن نکالنے کے بہانے جعلی پیر تشدد کرنے کے ساتھ گرم راڈ سے عورت کے جسم کے مختلف اعضا داغتا رہا ، عورت چیخ پکار کرتی تو خاوند تشدد کے ذریعے چُپ کرانے کی کوشش کرتا رہا ۔ حالت غیر ہونے پر خاوند اپنی بیوی کو والدین کے گھر چھوڑ کر فرار ہو گیا ۔ اس دردناک واقعے کی تفصیل اس طرح ہے کہ تھانہ دائرہ دین پناہ ضلع مظفر گڑھ کے موضع کھائی سوئم کی زاہدہ بی بی کی شادی اعجاز بریار نامی
مزید پڑھیے



تحقیق کی ضرورت

هفته 16 مئی 2020ء
ظہور دھریجہ
پوری دنیا کورونا جنگ کے خلاف بر سر پیکار ہے ۔بڑی بڑی حکومتیں اور سلطنتیں کورونا سے چھپ کر گھروں میں بیٹھ گئی ہیں ۔ اصل ضرورت تحقیق اور ریسرچ کی ہے ، خصوصاً ان حالات میں کہ عالمی ادارہ صحت نے یہ کہہ کر انسانیت کو چونکا دیا ہے کہ ہو سکتا ہے کہ کورونا کبھی ختم نہ ہو ۔ تحقیق اور ریسرچ تب ہوگی جب تحقیق کے بند دروازوں کو کھولا جائے گا اور اپنے ذاتی نظریات و خیالات کو ایک طرف رکھ کر ہر بات کی اصلیت کو جاننے کی کوشش کی جائے گی ۔ بڑے بڑے فرعون
مزید پڑھیے


وزیراعلیٰ سردار عثمان بزدار کی ڈیرہ غازی خان آمد

جمعه 15 مئی 2020ء
ظہور دھریجہ
وزیراعلیٰ سردار عثمان خان بزدار ڈیرہ غازی خان پہنچے ، دورے کے دوران عمائدین علاقہ سے ملاقاتوں کے ساتھ ساتھ متعدد منصوبوں کا سنگ بنیاد شامل ہے ، ان میں 4 ارب روپے کی لاگت سے سردار فتح محمد بزدار انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی ، پل ڈاٹ کی کشادگی ، جدید انٹر سٹی بس ٹرمینل کی تعمیر ، سوشل سکیورٹی ہسپتال و دیگر منصوبوں کا سنگ بنیاد شامل ہے۔ ڈیرہ غازی خان وزیراعلیٰ کا گھر ہے ، وہاں کے مسائل پر توجہ ضروری ہے کہ ان کی آمد سے پہلے اپوزیشن کی طرف سے پروپیگنڈہ ہو رہا تھا کہ وزیراعلیٰ
مزید پڑھیے


مولانا طارق جمیل کی بھولی بسری یادیں

جمعرات 14 مئی 2020ء
ظہور دھریجہ
مولانا طارق جمیل بہت بڑی مذہبی شخصیت کا نام ہے ، وہ کس سوچ اور کس مزاج کے آدمی ہیں ؟ اس کا اظہار ان کی گفتگو اور ان کے عمل سے ہوتا ہے ۔ پچھلے دنوں مولانا طارق جمیل کو میڈیا پر متنازعہ بنانے کی کوشش کی گئی اور پرنٹ و الیکٹرانک میڈیا کے ساتھ ساتھ سوشل میڈیا پر بہت چرچا رہا ۔ مولانا طارق جمیل کے حوالے سے جہاں چند میڈیا اینکر کا رویہ درست نہیں تھا ، وہاں سوشل میڈیا پر بعض حضرات نے انتہا کر دی اور وہ گالم گلوچ تک چلے گئے ، تجزیہ نگاروں
مزید پڑھیے


سندھ کارڈ کیوں؟

بدھ 13 مئی 2020ء
ظہور دھریجہ
2 ماہ بعد اسلام آباد میں قومی اسمبلی کا اجلاس ہوا تو اس میں دھواں دھار تقریریں سننے کو ملیں ۔ پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے الزام لگایا کہ ’’ کورونا کے مسئلے پر وفاق سندھ سے زیادتی کر رہا ہے ۔ وزیراعظم کنفیوژ ہیں اور ذمہ داری پوری نہیں کر رہے ‘‘۔ اس کے جواب میں وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے اپنے خطاب میں کہا کہ ’’ اب سندھ نہیں پاکستان کارڈ چلے گا ۔ ‘‘ انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی خود کو قومی جماعت کہتی تھی مگر پی پی کے رہنما
مزید پڑھیے


ریڈیو کی اہمیت کو نظرانداز نہ کیا جائے

منگل 12 مئی 2020ء
ظہور دھریجہ
کورونا نے چکرا کر رکھ دیا ہے ۔ حکومت کو اب سمجھ نہیںآ رہی کہ کیا کھولنا ہے ، کیا بند کرنا ہے ؟ کورونا لاک ڈاؤن کے موقع پر پاکستان براڈ کاسٹنگ کارپوریشن نے سنٹرلائزیشن کرتے ہوئے ملک کے تمام ریڈیو اسٹیشنوں سے نشر ہونے والے پروگرام بند کر دیئے اور صرف اسلام آباد سے پروگرام نشر ہو رہے ہیں ۔ حالانکہ ریڈیو سے کورونا آگاہی مہم کے لئے مقامی زبانوں کی نشریات کا ہونا نہایت ضروری ہے ۔سماجی فاصلہ ضروری ہے مگر ریڈیو سے تو سماجی فاصلہ خودبخود موجود ہوتا ہے کہ اسٹوڈیو میں اکیلا آدمی پروگرام نشر
مزید پڑھیے