عارف نظامی


سوشل میڈیا پر پابندی کا قانون یا؟


جب سے موجودہ حکومت برسر اقتدار آئی ہے میڈیا کی طنابیں مسلسل کَسی جا رہی ہیں اور اب سوشل میڈیا کی باری بھی آ گئی ہے ۔کابینہ کے حالیہ اجلاس میں سوشل میڈیا کو ریگولیٹ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔اس مجوزہ قانون کے تحت یو ٹیوب ،فیس بک ،ٹویٹر ،ٹک ٹاک اور دیگر سوشل میڈیا کمپنیوںکے لئے تین ماہ میں پاکستان میں دفاتر کھولنا لازمی قرار دیا گیا ہے ۔اس سلسلے میں قانون توکافی عرصے سے تیار کیا جا رہا تھا گویا کہ وہ اینکر خواتین وحضرات جن کے لیے مروجہ چینلز کے راستے بند کرا دیئے گئے
پیر 17 فروری 2020ء

ہر شعبہ میں رجعت قہقری

هفته 15 فروری 2020ء
عا رف نظا می
ڈیڑھ سال میں تحریک انصاف کی حکومت کا واحد طرہ امتیاز یہ ہے کہ قومی زندگی کا قریباً ہر شعبہ رجعت قہقری کا شکار ہے بالخصوص اس عرصے کے دوران بندہ مزدور کے اوقات تلخ سے تلخ ترین ہوتے گئے اورامید کی کوئی کرن بھی نظر نہیں آ رہی ۔ایسا لگتا ہے کہ چھ ارب ڈالر کے پیکج کے عوض ملک کو آئی ایم ایف کے ہاتھ گروی رکھ دیا گیا ہے ۔ہمارے پالیسی ساز جمود کا شکار نظر آتے ہیں کیونکہ بظاہر سارے فیصلے بین الاقوامی مالیاتی ادارہ ہمارے اوپر تھونپ رہا ہے اور سرکار عالیہ بخوشی کورنش بجا
مزید پڑھیے


انقلابات ہیں زمانے کے!

بدھ 12 فروری 2020ء
عا رف نظا می
تازہ خبر آئی ہے ،خضر ہمارا بھائی ہے۔ عمران خان اور چودھری برادران بھائی بھائی ہو گئے ہیں۔ چودھری پرویز الٰہی جو کل تک چودھری محمد سرور ،عثمان بزدار اور شفقت محمود پر مشتمل کمیٹی سے مذاکرات کرنا تو کجا اسے تسلیم کرنے کو بھی تیار نہیں تھے ،اچانک جھاگ کی طرح بیٹھ گئے ،نئی کمیٹی سے مذاکرات کے پہلے دور میں ہی سب کچھ طے ہو گیا۔اب مذاکرات کے مابعد چودھری صاحب کا لہجہ یکسر تبدیل ہو گیا ہے ۔ جہانگیر ترین کمیٹی سے(جن کے باقاعدہ منٹس بننے کے بعد فوری طور پر عمل درآمد شروع ہو گیا تھا)
مزید پڑھیے


ناک میں بھی دم

پیر 10 فروری 2020ء
عا رف نظا می
92 نیوزکی سالگرہ پر سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویز الٰہی کا انٹرویو کرنے کا موقع ملا۔یہ دعوے کہ معاملات روبہ اصلاح ہیں اور جلد صلح ہو جائے گی،چودھری صاحب کی خاصی محتاط گفتگوکے باوجود یہی اندازہ ہوا معاملات ٹھیک نہیں ہیں اور برف ہنوز نہیں پگھلی۔چودھری صاحب نے اپنا موقف دہرایا کہ تحریک انصاف اور مسلم لیگ (ق) کے درمیان باقاعدہ ایک تحریری معاہدہ ہوا تھا جس پر ابھی عملدرآمد نہیں ہوا۔پرویز خٹک،جہانگیر ترین اور ارباب شہزاد پر مشتمل کمیٹی نے اتحاد کے وقت ہونے والے تحریری معاہدے کی روشنی میں معاملات طے کر لئے تھے۔اس ضمن میں عمران خان
مزید پڑھیے


عوام کے سڑکوں پر نکلنے کا انتظار؟

بدھ 05 فروری 2020ء
عا رف نظا می
حکومت کے ان دعووں کے باوجود کہ مشکل فیصلے کر لئے اب2020 ء اقتصادی ترقی کا سال ہو گا، معاملات رجعت قہقہری کی طرف ہی گامزن ہیں۔یہ خبر قطعاً حیران کن نہیں کہ ماہ جنوری میں افراط زر کی شرح ریکارڈ 14.56 تک پہنچ گئی ۔یہ شرح گزشتہ بارہ برسوں میں سب سے زیادہ ہے، اشیائے خورونوش کی قیمتوں میں گزشتہ ماہ 23.6 فیصد اضافہ ہوا۔گندم اور چینی کے نرخوں میں اضافے کی بنا پر اعدادوشمار قطعاً غیر متوقع نہیں ہیں۔سٹیٹ بینک اور مشیر خزانہ حفیظ شیخ کا دعویٰ ہے کہ یہ عارضی عمل ہے اور بالآخر قیمتیں معمول پر
مزید پڑھیے



میں صدقے جاواں وچلی توں

پیر 03 فروری 2020ء
عا رف نظا می
سی پی این ای کی قائمہ کمیٹی کے اجلاسوں کی سائیڈ لائن پر وزیراعظم، وزیراعلیٰ، سپیکر ،گورنر اور لیڈر آف اپوزیشن سے ملاقاتوں کی روایت عرصہ دراز سے چلی آ رہی ہے۔ چودھری پرویز الٰہی اپنی خاندانی وضع داری نبھاتے ہوئے میڈیا سے دوستانہ انٹر ایکشن اور ان کی میزبانی کرتے رہتے ہیں ۔بدھ کو ان کا فون آیا کہ جمعہ کو ساڑھے بارہ بجے میرے ساتھ گپ شپ کے لیے آئیںجس پر میں نے کہا ساتھیوں سے مشورہ کر کے عرض کرونگا۔ انھوں نے انکشاف کیا ان کا سٹاف پہلے ہی رابطے کر چکا ہے۔ ہمارا خیال تھا یہ
مزید پڑھیے


آئی جی سندھ پولیس کا نیا تنازع

هفته 01 فروری 2020ء
عا رف نظا می
سندھ کے آئی جی پولیس کلیم امام کے تبادلے اور ان کی جگہ نئے آئی جی کی تقرری نے وفاق اور سندھ حکومت کے درمیان نیا تنازع کھڑا کر دیا ہے۔یہ عجیب طرفہ تماشا ہے کہ کلیم امام کے تبادلے اور ان کی جگہ مشتاق مہرکے نام پر وزیراعظم عمران خان کے حالیہ دورہ کراچی کے موقع پر اتفاق رائے ہو گیا تھا لیکن اس سے اگلے ہی روز کابینہ کا اجلاس ہوا تو خان صاحب نے اچانک پینترا بدلا اور فیصلہ صادر کیا کیونکہ کابینہ نہیں مانتی لہٰذا کلیم امام کے تبادلے کا فیصلہ موخر کیا جاتا ہے ۔واضح
مزید پڑھیے


ترقیاتی فنڈز کی سیاست؟

بدھ 29 جنوری 2020ء
عا رف نظا می
وزیراعظم عمران خان کو غالبا ً یہ احساس ہو گیا تھا کہ ان کی جماعت کا اندرونی خلفشار بڑھتا جا رہا ہے اور خطرات اپوزیشن اور اتحادیوں کی طرف سے نہیں بلکہ اپنوں سے ہی پیدا ہو رہے تھے نیز ان کے محرکات اتنے خطرناک ہو سکتے ہیںکہ پنجاب اور بلوچستان کی حکومتیں خطرے میں پڑ سکتی ہیں۔ قابل ذکر بات یہ ہے کہ خیبر پختونخوا جہاں تحریک انصاف کو دوتہائی اکثریت حاصل ہے بھی انتشار سے نہ بچ سکا۔اسی بنا پر اتوار میجر سرجری کا دن ثابت ہواسب سے پہلے تو خیبر پختونخوا کے تین وزراء شہرام ترکئی، عاطف
مزید پڑھیے


عملی اقدامات ورنہ قصہ پارینہ

پیر 27 جنوری 2020ء
عا رف نظا می
تحریک انصاف کی حکومت کرپشن کے حوالے سے رپورٹ پر ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل پر خاصی برہم ہے ۔اس رپورٹ کے مطابق 2019 ء میں کرپشن کے تاثر میں تین پوائنٹس اضافہ ہوا۔ اس لحاظ سے غصہ بجا ہے کہ خان صاحب کی حکومت کا تو بنیادی نکتہ ہی یہ ہے کہ ہم کرپشن کا خاتمہ کرنے آئے ہیں۔ وہ قریباً بلا ناغہ اپنی تقاریر میں دہراتے رہتے ہیں کہ وہ کرپٹ سیاستدانوں جن سے ان کی مراد پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ (ن) کی قیادت ہوتی ہے کو نہیں چھوڑونگا ۔ابھی ڈیووس میں بھی انھوں نے فرمایا ہے کہ کرپشن ایسا
مزید پڑھیے


کوئی بتلائے کہ ہم بتلائیں کیا ؟

هفته 25 جنوری 2020ء
عا رف نظا می
ورلڈ اکنامک فورم ایسا ادارہ ہے جو سوئٹرز لینڈ کی سکی ریزورٹ ڈیووس میں ہر سال دنیا کی چوٹی کی لیڈر شپ کو اکٹھا کرتا ہے ۔اس فورم کے بانیKlaus Schwab کے ویژن پر مبنی یہ اجتماع جنوری1988ء سے ہر سال منعقد ہو رہا ہے ۔رواں برس اس کا ایجنڈا ماحولیاتی تبدیلی کے بارے میں تھا ،اس کی افادیت اپنی جگہ لیکن ڈیووس کا اصل میلہ وہاں آنے والے مہمان سجاتے ہیں، اس کی سائیڈ لائن پر سربراہان حکومت و مملکت اور دنیا کی ٹاپ لیڈر شپ ایک دوسرے سے سلسلہ جنبانی آگے بڑھاتی ہے۔ پا کستان کے سربراہان مملکت
مزید پڑھیے