عبدالرفع رسول



ٹریک ٹوڈپلومیسی یاخاموش سفارتکاری


پاکستان کے دارالحکومت اسلام آباد میں ریجنل پیس انسٹی ٹیوٹ(آر پی آئی)کے زیراہتمام بھارت اور پاکستان کے مابین ٹریک ٹو مذاکرات کا پہلا دور چار سال کے طویل عرصے کے بعدجمعہ 12جولائی 2019 کوپاکستان کے دارالحکومت اسلام آباد میں منعقدہوا۔ 2015ء میں یہ سلسلہ ٹوٹ چکاتھا ۔ ٹریک ٹو سفارتکاری میںشریک چھ رکنی وفد بھارتی وفد بذریعہ واہگہ لاہور اور وہاں سے اسلام آباد پہنچا۔ وفد میں دو صحافی، دو لیکچرارز اور دو تھنک ٹینک کے ڈائریکٹرز شامل تھے۔ ٹریک ٹو مذاکرات کا پہلادوربروزہفتہ13جولائی کو ختم ہوا۔اس میں یہ طے پایاکہ دوسرا دور ستمبر میں دہلی میں ہو گا۔ آر
جمعرات 18 جولائی 2019ء

لہوسے آزادی کی شمع جلانے والے

پیر 15 جولائی 2019ء
عبدالرفع رسول
تحریک اور افراد کے لئے نظرئیے کی پختگی اور عقیدے کی گہرائی سب سے مضبوط ہتھیار ہوتا ہے ۔ اگر کسی جدوجہد کا ہدف نظرئیے سے عاری ہو تو وہ جدوجہد ہر گز عدل پر قائم نہیں رہ سکتی۔ کوئی شخص خواہ کتنا ذہین کیوں نہ وہ اس شعور سے نا بلد ہو تو وہ خود اپنی ہی ذہانت کے جال میں پھنس کر تباہ ہو جاتا ہے،13 جولائی 1931کو سنٹرل جیل سری نگر کے احاطے میں قربان ہونیو الے کشمیر یوںکے پاک نفوس نے اپنے لہو سے واضح طور لوح ایام پر یہ باب رقم کر دیا تھا کہ
مزید پڑھیے


بھارت کی شکست پرمقبوضہ کشمیرمیں جشن

جمعه 12 جولائی 2019ء
عبدالرفع رسول
ملت اسلامیہ کشمیرہرمحاذپراورہر صورت میں بھارت کوشکست میں لت پت دیکھناچاہتے ہیں ۔کرکٹ ورلڈکپ میں پاکستان اوربھارت کاآمناسامناہویابرصغیر کی ان دونوں روایتی حریف کرکٹ ٹیموں کے مابین میچ ہوتو مقبوضہ کشمیر میں اس کا بے صبری سے انتظار کیا جا تاہے۔ پاکستان کے ہاتھوںبھارتی کرکٹ ٹیم کوشکست ملے یاپھرکسی اورملک کی کرکٹ ٹیم کے ذریعے سے بھارٹی ٹیم ہارجائے تواسلامیان کشمیرنہال ہوجاتے ہیں اوران کے مجروح دلوں پرمرہم پڑجاتاہے۔11جولائی 2019ء بدھ کوآئی سی سی کرکٹ ورلڈکپ کے پہلے سیمی فائنل میں نیوزی لینڈ نے بھارت کا غرور خاک میں ملا دیا۔بھارت کی ٹیم نیوزی لینڈ کے ہاتھوں بد ترین شکست
مزید پڑھیے


کشمیرکی بہادربیٹی آسیہ اندرابی کاگھرسربمہر

جمعرات 11 جولائی 2019ء
عبدالرفع رسول
بھارت کی تفتیشی ایجنسی (NIA)نے شرمناک اقدام اٹھاتے ہوئے سری نگرکے معروف علاقے صورہ میں کشمیرکی بہادربیٹی،خواتین کشمیرکی تنظیم دختران ملت کی چیئرپرسن آسیہ اندرابی کے آبائی گھرکوضبط کرلیا۔تہاڑ جیل میں محبوس آسیہ اندرابی کے گھرپرنوٹس چسپاں کردیاگیا۔ جس پرلکھاگیاہے کہ اس گھرکو(NIA)کی تفتیش پرضبط کیاگیاہے ۔اس لئے اب یہ گھرحکومتی تحویل میں ہے ۔واضح رہے کہ بھارت کی تفتیشی ایجنسی (NIA)نے اس سے قبل شبیراحمد شاہ اورغلام محمدسوپوری کے گھروںکوبھی سربمہرکردیا ہے۔ 4جنوری 2018ء کوآسیہ اندابی کواس وقت گرفتارکرلیاگیاجب وہ کئی ماہ جیل میں گزارکررہاہوچکی تھیں۔گرفتاری کے بعدانہیں سری نگرسینٹرل جیل منتقل کیاگیاجبکہ6جولائی 2018ء جمعہ کودہلی کی تفتیشی ایجنسی (NIA)نے
مزید پڑھیے


برہان وانی !عزم نوکا امین

پیر 08 جولائی 2019ء
عبدالرفع رسول
آج 8جولائی ہے اورآج یوم شہاد ت برہان وانی ہے۔خیال رہے کہ 8جولائی 2016ء جمعہ کوکمانڈربرہان وانی اپنے دوجانبازساتھیوں سمیت بھارتی فوج کے ساتھ ایک خونریزمعرکے میں شہید ہوئے۔ کمانڈربرہان وانی عزم واستقامت کاکوہ گراں اورجرا ت و بے جگری کااستعارہ تھا۔ انہوں نے عملی جدوجہدکی تاریخ میںایک قابل رشک اور ناقابل فراموش باب لکھا۔مجاہدکمانڈربرہان اپنی چھ سالہ مجاہدانہ زندگی میں کشمیریوں کی بہادری کی علامت تھا ،عملی جہادکا یہ موثرداعی دہلی کے قلعوں کولرزا تارہااوراسکی فصیلوں پردراڑیں ڈالتارہا۔ 22سالہ برہان نے کشمیرجہادکواس وقت ایک ولولہ انگیز رخ دیاتھاکہ جب دنیاکے میڈیاسے اوجھل تحریک آزادی کشمیرکوانہوں نے سوشل میڈیاکے ذریعے
مزید پڑھیے




امرناتھ یاترا۔۔۔ہندوصیہونیت

جمعه 05 جولائی 2019ء
عبدالرفع رسول
گزشتہ سات عشروں سے بھارت کشمیرپرفوجی جارحیت کے ساتھ ساتھ مقبوضہ کشمیرپرمسلسل تہذیبی جارحیت کابھی ارتکاب کررہاہے۔ ہندو مت کی بنیادجن دیومالائی کہانیوںپرہے ان میںسے ہندئووں نے ایک کہانی یہ بھی گھڑ لی ہے کہ کشمیرکے جنوبی ضلع اسلام آباد میں انکے گروشیودیوکی رہائش گاہ تھی۔سرینگر سے جنوب کی جانب 88کلومیٹر پر واقع مشہور سیاحتی مقام پہلگام ہے۔ وہاں سے 45کلومیٹر کی دوری ، فلک بوس پہاڑی سلسلوں کے درمیان سطح سمندر سے 3888فٹ کی بلندی پر واقع ایک حجرہ نما غار ہے۔اس گھپا کو امرناتھ گھپا کے نام سے جانا جاتا ہے۔ علاقے میں موسم ٹھنڈا ہونے کی
مزید پڑھیے


زائرہ وسیم کی توبہ

منگل 02 جولائی 2019ء
عبدالرفع رسول
کشمیری بچیوں کایہ تعارف نہیں جس کے ذریعہ سری نگرسے تعلق رکھنے والی انیس سالہ اداکارہ زائرہ وسیم نے اپنی شناخت کروائی تھی۔عفت مآب کشمیری بچیوں اورخواتین کشمیر کی داستان عزیمت پرایک پوراباب میری زیرطبع کتاب ’’کشمیرعزیمتوںکی سرزمین‘‘میں پڑھاجاسکتا ہے اور جسے پڑھ کرخواتین کشمیرکااصل تعارف اورانکی اصل شناخت کاپتاچل جاتاہے ۔کشمیر کی مسلمان خواتین روزاول سے اپنے مردوں کے شانہ بشانہ رہ کر کشمیرپربھارتی جابرانہ قبضے اورجارحانہ تسلط کوہمیشہ للکارتی رہیں اوربھارت کو نفرت کی نگاہ سے دیکھتی رہی ہیں۔بھارت کے لئے ان کے قلوب واذہان میں غم وغصہ پایاجارہاہے کیونکہ بھارت نے ان کے شوہروں،انکے بیٹوں اورانکے
مزید پڑھیے


امیت شاہ کے دورہ کشمیرپرحریت کانرم گوشہ چہ معنی دارد؟

پیر 01 جولائی 2019ء
عبدالرفع رسول
گزشتہ تیس برسوں کے دوران جب بھی کوئی بھارتی حکمران یابھارت کاکوئی اعلیٰ عہدے دارسری نگرواردہوا توملت اسلامیان کشمیرنے فقیدالمثال ہڑتال اوربلیک ڈے سے اس کااستقبال کیا۔لیکن گزشتہ تین دہائیوں پرمحیط کشمیری کی عسکری جدوجہد کے دوران یہ پہلاموقع تھاکہ حریت کانفرنس نے کسی بھارتی اعلیٰ عہدے دار کی سری نگرواردہونے پرہڑتال کی کوئی کال نہیں دی ۔ اتوار22جون کوبھارتی گورنر ستیہ پال ملک نے سرینگر میں ایک تقریب کے دوران یہ دعویٰ کیا کہ حریت کانفرنس مذاکرات کے لیے تیار ہے۔میرواعظ عمر فاروق کی قیادت میں قائم حریت دھڑے نے اس اعلان کو مثبت تبدیلی سے تعبیر کرتے ہوئے کہا
مزید پڑھیے


کشمیری قیدیوں کی حالتِ زار

جمعه 28 جون 2019ء
عبدالرفع رسول
بھارت اسیران کشمیرکوجسمانی اور ذہنی اذیتیںپہنچا کرانتقام گیری کی جس راہ پر گامزن ہے اس سے یہ بات منقح ہو رہی ہے کہ جان بوجھ کر اسیران کو ایک نفسیاتی اور اعصابی دبائومیں لانے کی کوشش کی جارہی ہے ۔ ایمنسٹی انٹرنیشنل سمیت حقوق انسانی کی تمام تنظیمیںہمیشہ اسیران کشمیر کی حالت زارپراپنی تشویش ظاہرکرتی رہیں جبکہ سری نگر ہائی کورٹ باربھی بارہا اس معاملے کواٹھاتی رہی لیکن اسیروں کی سنگین مشکلات کاازالہ ہوسکا نہ ہی ان پر حراستی تشدد میں کوئی کمی محسوس کی گئی ۔دراصل بھارت کشمیریوں کی کنپٹی پر بندوق رکھ کر انہیںاپنے نصب العین
مزید پڑھیے


اخوان اورعربستان

پیر 24 جون 2019ء
عبدالرفع رسول
گزشتہ سال مجھے اپنے ایک دوست کی دعوت پرمتحدہ عرب امارات جاناپڑا۔دبئی ائیرپورٹ پرمجھے اخوان المسلمون کاحامی ہونے کی شک پر روکاگیا۔میرے سوٹ کیس کی تلاشی لی گئی تواس میںکشمیرسے متعلق اردومیگزین ’’ماہنامہ محاذکشمیر‘‘کے کچھ شمارے برآمدہوئے ۔ان میں سے ایک شمارے کے سرورق پراخوان المسلمون کے خلاف مصر ی فوج کے کریک ڈائون کی تصویراوراس پرعرب حکمرانوں کے ظالمانہ طرزپرمبنی کیپشن پرمجھے سخت سرزنش کی گئی ۔لیکن مقام شکرہے کہ یہ شمارہ دسمبر 2013کاتھا۔ امیگریشن اہلکاروں نے نہایت تلخ لہجے میںمجھ سے کہاآپ کویہ معلوم نہیں کہ عرب امارات میں اخوان المسلمون کالعدم قرارپاچکی ہے اورکسی بھی پیرائے میںاس
مزید پڑھیے