BN

عبدالرفع رسول


والدہ کی جدائی کاصدمہ


نہایت ہی صدمے کے عالم میں یہ کالم لکھ رہاہوں کہ کل مورخہ یکم مارچ 2021ء بمطابق 16رجب المرجب 1442ھ سوموارکوعین ہنگام سحر میری والدہ صاحبہ مقبوضہ کشمیرمیں داعی اجل کولبیک کہہ گئیں۔اناللہ واناالیہ راجعون ۔کئی برس ہوئے ہیں کہ جب آزادکشمیرکی طرف میں نے ہجرت کے لئے رخت سفر باندھا اس دن سے والدہ ماجدہ کی قدم بوسی کااعزازچھن گیا تھا۔ عالم یہ تھا کہ میں اپنی نظریں جھکائے اور روتے ہوئے والدہ صاحبہ کو اپنی ہجرت سے مطلع کرکے دعائوں کے ساتھ ان سے رخصت چاہتا تھا،میری والدہ صورتحال کوپوری طرح جانتی تھیں مگرشفقت مادری کے تحت
منگل 02 مارچ 2021ء

کشمیریوں کے سینے پرکھینچی گئی خونی لکیر

پیر 01 مارچ 2021ء
عبدالرفع رسول
کشمیرپربھارتی جبری قبضے کے نتیجے میں ریاست جموں و کشمیرکے درمیان جبری طورپرکھینچی گئی جنگ بندی لائن جسے کشمیری عوام خونی لکیرکے نام سے پکارتے ہیں ۔تائوبھٹ نکروسے لیکر بھمبر آزادکشمیرتک اوردوسری طرف مقبوضہ کشمیرکے کپوارہ اوربارہمولہ سے لیکرپونچھ اورراجوری پھیلی ہوئی ہے۔ 1949میں جنگ بندی لائن یایہ خونی لکیر اس پس منظر میں وجود میں آئی کہ یہ علاقے میں سٹیٹس کو ،کو اس وقت تک برقرار رکھے گی جب تک پاکستان اوربھارت کشمیر کے تنازعے کے حتمی حل کے نتیجے تک نہیں پہنچ جاتے۔ لیکن 1971 کی دونوں ممالک کے مابین جنگ ہونے کے بعدشملہ سمجھوتہ طے ہواجس
مزید پڑھیے


آسیہ اندرابی پربغاوت کامقدمہ درج

جمعه 26 فروری 2021ء
عبدالرفع رسول
دہلی کی ایک مسلم کش ہندوکورٹ نے کشمیرکی بہادرخاتون، دختران ملت کی سربراہ آسیہ اندرابی اور اس کی دو خاتون ساتھیوں کے خلاف بھارت سے بغاوت کامقدمہ درج کر نے کا حکم دیا ہے ۔ ایسا مقدمہ ہراس کشمیری مسلمان کے خلاف درج کیاجاتا ہے جوکشمیر پر بھارت کے جابرانہ قبضے کوتسلیم کرنے سے انکارکرتا ہے اور پاکستان سے محبت اور مملکت خداداد کی حمایت کرتے ہوئے بھارت سے شدید نفرت کا اظہارکرتا ہے۔ آسیہ اندرابی اورانکی دو ساتھیوں فہمیدہ صوفی اور ناہیدہ نسرین کے خلاف20 فروری2021ء کو بھارتی تفتیشی ایجنسی ’’این آئی اے‘‘ کے خصوصی ٹربیونل کے خصوصی جج
مزید پڑھیے


امریکی اونٹ کس کروٹ بیٹھے گا؟

جمعرات 25 فروری 2021ء
عبدالرفع رسول
زبردست معاشی ،فوجی طاقت اوروسیع تر سیاسی اثرورسوخ کے اعتبار سے امریکہ انیسویں اور بیسویں صدی میں جب ابھرکرسامنے آیا اور دنیامیں سوویت یونین اورامریکہ کے نام پر دو بلاکوں کیمونسٹ بلاک اور سرمایہ داری یا امریکی نکتہ نظر سے لیفٹ اور رائٹ بلاکوں میں بٹ گئی۔ اس کا بہر حال ایک فائد ضرور ہوا کہا دو ؓڑی طاقتوں کے آ منے سامنے کھڑے ہونے سے دنیا میں طاقت کاتوازن قائم ہوا ۔لیکن بیسویں صدی میںاواخر میںسوویت یونین کے زوال کے بعد امریکہ دنیاکی واحد سپر طاقت کے طورپر ابھر کر سامنے آیا اور دنیا پھر امریکی جھولی میں جا
مزید پڑھیے


چین کے ساتھ بھارت کے خجالت آمیزمذاکرات

منگل 23 فروری 2021ء
عبدالرفع رسول
بھارت نہایت پسپائی اورشرمندگی کے ساتھ بالآخرچین کی شرائط پرمقبوضہ کشمیرکے صوبہ لداخ میںچین کے سامنے ٖڈھیرہوگیااوراس نے صوبہ لداخ کے کئی علاقوں پرچین کاحق تسلیم کر کے چین کے ساتھ سمجھوتہ کرلیا ہے ۔ چین کے ساتھ بھارت کے خجالت آمیزمذاکرات کے بعدجو سمجھوتہ طے پایا اس کا بغور جائزہ لیا جائے تو یہ بات پوری طرح سے الم نشرح ہوجاتی ہے کہ بھارت نے مقبوضہ کشمیرکے صوبہ لداخ میں پسپائی اختیار کرکے اس خطے میں 60 کلو میٹر کا علاقہ چین کو دے دیا ۔ مشرقی لداخ کی بات کریں تو پینگیانگ جھیل کے شمالی اور جنوبی کناروں
مزید پڑھیے



بھارتی مسلمان پھرسے سڑکوں پرہونگے

اتوار 21 فروری 2021ء
عبدالرفع رسول
چنددنوں کی بات ہے کہ آپ دیکھیں گے ایک بارپھربھارتی مسلمان سڑکوں پرہونگے ۔ شہریت ترمیمی قانون کے متعلق بھارتی ایوان بالا راجیہ سبھا میں بھارتی وزیر داخلہ امیت شاہ نے بتایا ہے کہ: شہریت ترمیمی ایکٹ CAA2020 کے تحت قانون سازی جاری ہے، یہ ایکٹ یکم اکتوبر 2019ء سے بھارت میں موثر ہوچکا ہے، اب اس کے تحت تیاریاں ہورہی ہیں، ہندوستانی پارلیمنٹ نے اس ایکٹ کو مرتب و عملی شکل دینے کیلیے 9 اپریل سے9 جولائی2021ء تک کا وقت دیا ہے، امیت شاہ کاکہنا تھاکہ یہ قانون تو بن چکا ہے اس کے نفاذ کی تیاریاں کی
مزید پڑھیے


الٹی ہوگئیں مودی کی سب تدبیریں

هفته 20 فروری 2021ء
عبدالرفع رسول
مختلف ممالک سے تعلق رکھنے والے24رکنی سفیروں کا ایک وفد 17فروری 2021ء بدھ کو مقبوضہ جموںوکشمیر کے دو روزہ دورے پر سری نگر پہنچا۔ ایک پورادن سری نگر میں گزارنے کے بعد یہ وفد 18فروری جمعرات کوجموں وارد ہوا لیکن مقبوضہ کشمیر سے متعلق مودی اینڈ کمپنی کی سب تدبیریں واضح طور پر الٹی ہوگئیں کیونکہ اسلامیان کشمیر نے فقید المثال ہڑتال کر کے دنیاکوپیغام پہنچایا کہ بھارت جس چکمہ بازی سے کام لی کرغیرملکی سفرا ء کو سری نگر لے آیا ہے کہ کشمیری بھارت کی غلامی پر رضا مند ہیںوہ صریحاجھوٹ ہے۔ دراصل بھارت اس طرح کی مکروہ
مزید پڑھیے


کشمیر!خالی قبریں

بدھ 17 فروری 2021ء
عبدالرفع رسول
سری نگرکامزارشہداء کشمیرکے بڑے قبرستانوں میں سے ایک ہے۔یہ شہدائے کشمیرکاسب سے بڑا شہر خموشاں آباد ہے ۔ جہاں کشمیرکے بڑے اور نامور مجاہدین آسودہ جنت ہیںاس مزار شہداء کے سائین بورڈ پرجلی حروف سے یہ عبارت لکھی ہوئی ہے ۔’’ہم نے اپناآج تمہارے کل پرقربان کردیا‘‘ لیکن اس شہرخموشاں میں ایسی دوقبریں بھی موجودہیں جو خالی پڑی ہیں۔ان خالی قبر وں پرنصب کتبے ان کی کہانیاں خودسنارہی ہیں۔ایک قبرپرلگے کتبے پرشہیدمقبول بٹ کانام کندہ ہے جبکہ دوسری قبرپرنصب کتبے پرشہیدافضل گوروکا نام اندراج ہے ۔کشمیرکے ان دونوںعظیم ہیروزکودہلی کی تہاڑ جیل میں پھانسی دے کرشہیدکردیاگیا۔ شہید
مزید پڑھیے


سیلاب بلا کے آگے بندھ باندھیں

اتوار 14 فروری 2021ء
عبدالرفع رسول
اپنی تہذیب سے بیگانگی کا ہی یہ نتیجہ ہے کہ ہم مغربی تہذیب میں لت پت ہورہے ہیں جس کے باعث ہمارامعاشرہ اس کی فتنہ سامانیوں کا شکار ہو چکاہے۔عہدشباب میں اگر نوجوانوں کو رہنمائی نہ ملی توقوم وملت کواس کے عواقب ونتائج اوربھگتنا پڑتے ہیں۔ایک نوجوان کے عہدشباب میں ہمت ،قوت ،طاقت،عزم ، ارادے ، جذبے اور توانائی اپنے عروج پہ ہوتے ہیں ۔اگران جذبوں اور توانائی سے قوم و ملک فائدہ نہ اٹھا سکیں تو یہ انتہائی بڑا نقصان ہے۔اس لئے نقصان سے بچنے کے لئے ضرورت اس امر کی ہے کہ ہمارے نوجوانوں کے سامنے اچھائیوں اور
مزید پڑھیے


تحریک آزادی کشمیر کے ہیرو

جمعه 12 فروری 2021ء
عبدالرفع رسول
کئی برسوں سے لگاتار کشمیری مسلمان تحریک آزادی کشمیرکے نامورہیروزافضل گورواورمقبول بٹ کی یاد میں 9تا11،اپریل کوعالمی ضمیرکوجھنجوڑنے کے لئے کشمیربندمناتے ہیں ۔کشمیرکاہرشہیدتحریک آزادی کشمیر کے ناقابل فراموش ہیرو اور ایک ایسے روشن چراغ کے مانندہیں کہ جواپنی شہادت سے قبل اپنی لوسے بے شمارچراغ روشن کر جاتا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ آج 2021ء تک سرزمین کشمیرپربھارتی جبروقہر کے باعث ایک کے بعد ایک چراغ گل ہوتاچلاجارہاہے لیکن یہ چراغ ختم نہیں ہورہے۔اگرچہ کشمیرکے ہرشہیدکی شہادت کی الگ الگ کہانی ہے لیکن سب ایک ہی عظیم مقصد ’’کشمیرکی آزادی ‘‘کے لئے اپنے جانوں کانذرانہ پیش کرچکے ہیں۔ چندیوم
مزید پڑھیے