BN

عبداللہ طارق سہیل



صادق و امین کرپشن


معاشی میدان میں تبدیلی سرکار کی محیر العقول کامیابیوں نے ایک دنیا کی عقول کو متحیر کر کے رکھ دیا ہے۔ ایک ایسی ہی کامیابی کا ذکر سابق وزیر خزانہ مفتاح اسمٰعیل نے کیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ تبدیلی سرکار بجلی کے میدان میں ہر روز کئی کروڑ روپے کا گردشی قرضہ بڑھا رہی ہے۔ درآنحالیکہ اس نے بجلی اور گیس‘ دونوں کے نرخ بڑھا دیے ہیں۔ منطق کہتی ہے کہ بجلی اور گیس کی زائد بلوں کی وصولی کے بعد یومیہ گردشی قرضہ کم ہونا چاہیے تھا۔( نواز دور میں گردشی قرضہ 480ارب روپے یکمشت کرنے کے بعد
جمعرات 21 مارچ 2019ء

اپنی اپنی تعبیر

بدھ 20 مارچ 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
لیاقت بلوچ نے پی ایس ایل کے کے کامیاب انعقاد پر مبارکبادی پیغام میں کہا ہے کہ باقی سب تو ٹھیک لیکن اختتامی تقریب میں جو خرافات کی گئیں، وہ نہ ہوتیں تو اچھا تھا۔ یہ ریاست مدینہ کے دعوئوں سے لگا نہیں کھاتیں۔ خرافات بشمول نچ پنجابن اور ازقسم ڈسکو دیوانے۔ کراچی کے ایک اخبار کی مرکزی سرخی بھی اسی قسم کے اختلافی نوٹ کا اظہار تھی، یہ کہ ’’شہدا کے سوئم پر ڈسکو دیوانے کا راج‘‘ خبر کے متن میں بہت کچھ ناقابل اشاعت بھی چھپ گیا ہے۔ پتہ نہیں کیسے قابل اشاعت ہو گیا۔ بہرحال یہ سب تشریح
مزید پڑھیے


چیخیں دبا دی جائیں گی

منگل 19 مارچ 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
نیوزی لینڈ میں دہشت گردوں کے ہاتھوں پچاس نمازیوں کی شہادت کا سوگ ساری دنیا میں منایا گیا۔ یہاں تک کہ پاکستان میں بھی اگرچہ یہاں سوگ کم، پی ایس ایل زیادہ منایا گیا۔ سٹیڈیم میں دسیوں ہزار تماشائی تھے اور تحریک انصاف کا رہنما نچ پنجابن نچ مجاجن قسم کے نغمے سنا رہا تھا۔ ایسا نہیں تھا کہ سٹیڈیم میں کسی کو شہدائے نیوزی لینڈ کی یاد نہیں آئی۔ ایک منٹ کا ’’سکوت غم‘‘ بھی کیا گیا۔ مرنے والے شہید تھے، انہیں دعا کی کیا ضرورت ایک منٹ کی خاموشی کافی تھی۔ ویسے بھی شہداء میں پاکستانی تھے ہی
مزید پڑھیے


مسلمان غیر مسلم ملکوں میں

پیر 18 مارچ 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
یورپ اور یورپی نژاد براعظموں میں اسلاموفوبیا اور زینوفوبیا Xeno phobia مسلمانوں کی حد تک ہم معنے ہو گئے ہیں۔ اسلاموفوبیا یعنی ہر اس شخص سے نفرت جو مسلمان ہو چاہے وہ یورپی نژاد ہی کیوں نہ ہو اور زینو فوبیا یعنی ہر غیر ملکی شخص سے نفرت چاہے وہ مسلمان ہو یا ہندو۔ نائن الیون کے بعد ان دونوں امراض میں اضافہ ہوا ہے لیکن جتنا زیادہ ہم سمجھ رہے ہیں اتنا نہیں۔ جو لوگ نفرت کے مرض میں مبتلا ہیں، ان کی تعداد بہت کم ہے اور سچی بات یہ ہے کہ یہ امراض دنیا کے ہر ملک
مزید پڑھیے


بلاول کا دعویٰ

جمعه 15 مارچ 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
بلاول بھٹو زرداری کی نواز شریف سے ملاقات بسلسلہ عیادت پر وزیر اطلاعات نے جو تبصرہ کیا‘ اس پر عوام کا فوری ردعمل وہی تھا جو گزشتہ روز بلاول نے دیا۔ وزیر اطلاعات نے فرمایا‘ بلاول نے صدی کا سب سے بڑا یوٹرن لیا۔ فوری عوامی تبصرہ یہ تھا کہ گویا فواد صاحب نے بلاول کو صدی کا سب سے بڑا لیڈر مان لیا کہ یہ فارمولا انہی کے قائد کا ہے کہ جتنا بڑا یوٹرن اتنا بڑا لیڈر۔ یہی بات بلاول نے ازراہ مزاح اپنے تبصرے میں کر دی۔ ازراہ مزاح اس لئے کہ ازراہ طنز جواب میں تو
مزید پڑھیے




پھر شہباز صبر بھی کر لیں گے اور شکر بھی

جمعرات 14 مارچ 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
نواز شریف کی بیماری پر مسلم لیگ کے لیڈر پہلے تو چپ رہے‘ پھر ایک ایک کر کے بولنے لگے اور اب سنا ہے کہ وہ بھی بولنے والے ہیں جو اب تک چپ تھے۔ اب تو دوسری جماعتیں بھی تشویش اور ہمدردی ظاہر کرنے لگی ہیں۔ شہباز شریف اور ان کے صاحبزدے البتہ (بعض لوگوں کے نزدیک پراسرار طور پر) خاموش ہیں اور امکان ہے کہ خاموش ہی رہیں گے۔ ایک آدھ بیان انہوں نے ضرور دیا لیکن علامتی طور پر اور احتیاط کی ساری شرطیں پوری کرتے ہوئے ۔ افواہیں تو ایک مدت سے ہیں کہ ان کی ’’معاملہ
مزید پڑھیے


اردو کو ختم نہیں کر سکتے

بدھ 13 مارچ 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
کہا جا رہا ہے کہ بی جے پی الیکشن جیت گئی تو آئین میں ترمیم کر کے سیکولر بھارت کو ہندو دیش بنا دے گی اور ابھی تک کے آثار یہ ہیں کہ وہ جیت رہی ہے۔ حالیہ واقعات کو اس نے کامیابی سے اپنی مضبوطی کے لئے استعمال کیا ہے۔ اصولی طور پر کوئی اعتراض اس بات پر بنتا نہیں ہے۔ کسی بھی ملک کے لوگ اپنے ملک کو اپنے مذہب کی حکمرانی میں لانا چاہیں تو لا سکتے ہیں۔ جمہوریت بھی یہی کہتی ہے۔ لیکن فرق کیا پڑے گا؟ عملاً بھارت پہلے ہی ہندو ورش ہے۔ اسٹیبلشمنٹ مسلمانوں کو
مزید پڑھیے


پیروی کرنے کا انتظار

منگل 12 مارچ 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
ماضی میں دو ٹرینوں کا شہرہ سنا۔ ایک کی کہانی تو مشہور مزاح نگار شوکت تھانوی مرحوم نے اپنے افسانے ’’سودیشی ریل‘‘ میں لکھی۔ اور یہ مرحوم کے مشہور ترین افسانوں میں سے ایک ہے۔ برسبیل تذکرہ راقم نے بہت سے احباب کو ’’ھو‘‘ کا لفظ ’’جَو‘‘ کے وزن پر پڑھتے بولتے سنا۔ اس طرح تو سودیشی ریل کے معنے سو ملکوں کی ریل کے ہو جائیں گے۔ اصل میں یہ لفظ سَو ہے یعنی وائو پر زبر کے ساتھ اور اس کے معنے اپنا یا اپنی کے ہیں چنانچہ سودیشی سے مراد ہے وہ ٹرین جو اپنے ملک کی
مزید پڑھیے


خلوص کی کتاب کا نیا باب

پیر 11 مارچ 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
یوم خواتین پر اسلام آباد اور لاہور میں ایلیٹ کلاس کی خواتین نے مظاہرے کئے۔ جو نعرے لگائے گئے اور جو سلوگن کتبوں پر لکھے گئے ان میں پانچ فیصد ایسے تھے جنہیںنقل کیا جا سکتا ہے‘ مثلاً ہاںمیں آوارہ ہوں‘ ہاںمیں بدچلن ہوں قسم کے۔ لیکن پچانوے فیصد کا نقل کرنا تو دور کی بات ‘ باہمی مجالس میں انہیں دہرایا بھی نہیں جا سکتا، ایسے سلوگن سُن کربوڑھے مردوں کے کان بھی سرخ ہو جائیں۔ خالی دماغ شیطان کا کارخانہ ہوتے ہیں ایسے فقرے تو امریکہ اور برطانیہ کی کوئی خاتون بھی نہیں لکھ سکتی۔ ہاں‘ فرانس اور
مزید پڑھیے


نئے دور کا راون

جمعه 08 مارچ 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
پیپلز پارٹی کی سینیٹر کرشنا کماری نے بھارتی پردھان منتری نریندر مودی کو نئے دور کا راون قرار دیا ہے۔ نادر مگر بامعنی خطاب ہے کیونکہ انجام کار مودی اور ان کے سنگ پریوار کی سیاست کاری ہندو دھرم کو نقصان دے گی اور ہندو سماج کو تو اس نے ابھی سے بکھیرنا شروع کر دیا ہے۔ مودی جی راون تو ہیں پر اس طرح کے کہ اپنی لنکا گجرات سے اٹھا کر دہلی لے آئے ہیں۔ حیرت تو ان پر ہے جو اس راون کی زنار کے دانے بن گئے ہیں، اگلے ماہ الیکشن ہے اور یہ چند ہفتے بھارتی
مزید پڑھیے