BN

عبداللہ طارق سہیل



اپریل فولز ڈے


اپریل فول کچھ اچھی رسم نہیں، جس نے ایجاد کی ستم ہی ڈھایا۔ مغربی ملکوں میں پھر بھی حدود کا خیال رکھتے ہیں لیکن ہمارے ہاں تو ہر شے ہی حد سے نکل جاتی ہے۔ ایسے ایسے بے رحم مذاق کئے جاتے ہیں کہ بس اوپر والے ہی کی پناہ۔ گزشتہ روز کا ماجرا دیکھئے، اپریل فول کی سہ پہر وزیر خزانہ اسد عمر اخبار نویسوں کے سامنے نمودار ہوئے اور فرمایا مہنگائی 2008 ء اور 2013ء کے مقابلے میں کم ہے۔ بظاہر وہ سنجیدہ تھے لیکن نفس مضمون بتا رہا تھا کہ وزیر موصوف نے اپریل فول منانے کا
بدھ 03 اپریل 2019ء

عوام دوست اضافہ

منگل 02 اپریل 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
کبھی کبھی ذرائع بھی تیزی دکھا جاتے ہیں۔ جس روز یہ خبر ٹی وی پر چلی کہ اوگرا نے تیل کی قیمت گیارہ روپے لٹر بڑھانے کی سفارش کی ہے۔ اسی روز‘ چند ہی گھنٹوں کے بعد یعنی پیچھے پیچھے ذرائع کی یہ خبر بھی ٹویٹر پر چلی کہ حکومت نے نرخ چھ روپے فی لٹر بڑھانے کا فیصلہ کیا ہے اور اوگرا سے کہا ہے کہ تم گیارہ روپے کی سفارش کرنا۔ ہم یہ عوام دشمن سفارش مسترد کر دیں گے اور حدف عوام دوست اضافہ منظور کریں گے۔ پھر ایسا ہی ہوا۔ عوام کو نرخوں میں عوام دوست
مزید پڑھیے


منصور کے پردے میں…!

پیر 01 اپریل 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
خاں صاحب بہت کچھ بھول جاتے ہیں بلکہ اکثر تو سب کچھ لیکن آموختہ نہیں بھولتے۔ گھوٹکی میں بھی نہیں بھولے۔ للکار کر پڑھا‘ نہیں چھوڑوں گا۔ نواز زرداری کو بالکل نہیں چھوڑوں گا۔ زور نواز کے نام پر تھا‘ مطلب یہ کہ زرداری کو چھوڑنے کا کڑوا گھونٹ تو شاید بھر لوں لیکن نواز ؟ اسے تو کبھی نہیں چھوڑوں گا۔ آموختے میں اس بار ایک نئی بات تھی۔ ترمیمی نوٹ کہہ لیجیے۔ فرمایا لوٹا ہوا پیسہ واپس کر دیں تو چھوڑوں گا۔ یعنی وہ معاملہ کر لوں گا جسے عرف عام میں یا تکنیکی طور پر پلی بارگین کہتے
مزید پڑھیے


بکریاں بھی دیں گے

جمعه 29 مارچ 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
ایک دن کے وقفے کے بعد قوم سے پھر خطاب فرمایا۔ برسبیل تذکرہ ‘ ریاست کا ہر خطاب نماز ہی کے وقت کیوں ہوتا ہے؟مطلب نماز سے آدھ گھنٹہ پہلے شروع ہوتا ہے اور اتنے ہی وقت کے بعد ختم ہوتا ہے۔ بیچ میں سننے والوں کی نماز بھی لاپتہ ہو جاتی ہے۔ شاید کوئی باطن حکمت ہو۔ اس بار غربت کے خاتمے کا پروگرام عنوان تھا۔ پروگرام کا خلاصہ یہ تھا کہ انڈے دیں گے‘ بچے دیں گے‘ مرغیاں دیں گے‘ بکریاں دیں گے۔ باقی کا اعلان تو وہ کئی ماہ پہلے بھی کر چکے۔ اس بار بکریوں کا اضافہ
مزید پڑھیے


’’زیرو ‘‘کا ٹرین مارچ

جمعرات 28 مارچ 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
سٹیٹ بنک کی تازہ رپورٹ کا ایک فقرہ ملاحظہ فرمائیے‘ کہا ہے کہ مہنگائی ہدف سے زیادہ ہو گئی۔ ہدف تو اپنا اپنا ہے بھائی۔ ممکن ہے سٹیٹ بنک نے کسی اور ہدف کا سوچا ہو جس سے مہنگائی بڑھ گئی ہو لیکن اصل بات تو اس ہدف کی ہے جو خاں صاحب نے طے کیا ہے اور حالات سے لگتا ہے کہ ابھی کہاں‘ ابھی تو ہدف کا پندرہ بیس فیصد ہی حاصل ہوا ہے۔ ساڑھے چار سال کے حساب سے ستر اسی فیصد ہدف تو ابھی باقی ہے۔ ریاست مدینہ کا ایک حامی گزشتہ روز بتا رہا تھا کہ
مزید پڑھیے




پھر درست فرمایا

بدھ 27 مارچ 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
وزیر اعظم نے یہ بہت اچھی روایت قائم کی ہے کہ وہ تقریباً ہر دوسرے روز قوم سے خطاب کر ڈالتے ہیں۔ پہلے کی طرح اب قوم سے خطاب کے لئے خصوصی انتظامات اور پی ٹی وی آنے کی ضرورت نہیں۔ تقریب کچھ تو بہر ’’خطابات‘‘ چاہئے، کے طور پر کسی بھی موقع کو کیمروں کے سامنے آنے کے لئے استعمال کر لیا جاتا ہے۔ یوں قوم سے خطاب ہو جاتا ہے‘ قوم اداس نہیں ہوتی کہ دیکھو تین روز ہو گئے‘ وزیر اعظم نے خطاب نہیں کیا۔ گزشتہ روز تین دنوں میں وزیر اعظم نے ایڈیٹروں، سینئر صحافیوں سے دوسری
مزید پڑھیے


محب وطن طاقتیں اور لاڈاں والی سرکار

منگل 26 مارچ 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
بلاول بھٹو کے ٹرین مارچ پر بحث ہو رہی ہے‘ دوسری طرف خبر ہے کہ نیب نے آصف زرداری کے خلاف ایک اور ریفرنس تیار کر لیا ہے۔ محب وطن حلقے تقریباً مطمئن ہیں کہ زرداری گرفتار ہو کر رہیں گے۔ وہ بعض بڑی ہستیوں کا ذکر کرتے ہیں جن کا کہنا ہے کہ اس بار ہم نے طے کر لیا ہے کہ نہیں چھوڑنا۔ زرداری کی اربوں کھربوں کی کرپشن پکڑی جا چکی ہے’ناقابل تردید ثبوت آ چکے ہیں۔ ایک محب وطن ریٹائرڈ بزرگوار فرما رہے تھے کہ اب کوئی بھی زرداری کو نہیں بچا سکتا۔ بجا فرمایا۔ لیکن اگر
مزید پڑھیے


جماعت اسلامی۔ وقت دعا ہے

پیر 25 مارچ 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
ہفتہ رفتہ میں کئی واقعات ہوئے۔ مثلاً کابینہ نے اہم اقتصادی فیصلوں کی منظوری دی جن میں سرفہرست وزیراعظم کے طیارے کی تزئین و مرمت کے لیے 45 کروڑ روپے مخصوص کرنے کا فیصلہ تھا۔ پچاس کروڑ کی منظوری بھی دی جا سکتی تھی لیکن اس نے سادگی اور بچت مہم کا سنگ میل بھی تو گاڑنا تھا، اس لیے صرف 45 کروڑ منظور کئے۔ اس ہفتے 23 مارچ تھی گزرا۔ اس روز قرار داد لاہور منظور ہوئی تھی جس کے سولہ برس بعد پاکستان کے پہلے آئین کی منظوری کے بعد اسے یوم جمہوریہ قرار دیا گیا۔ یہ دن
مزید پڑھیے


بلاول نامہ

جمعه 22 مارچ 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
نیب میں بلاول بھٹو کی پیشی پر کمال کی دھمال ہوئی۔ سینکڑوں جیالوں نے عشروں پہلے کی سیاست یاد کرا دی۔ بلاول اور ان کے پاپا پر سندھ میں کیس بنائے گئے ہیں لیکن پیشی اسلام آباد میں ہوئی۔ کارکنوں نے اکٹھے ہو کر نعرے لگائے‘ مظاہرہ کیا اور حکومت کو ہواس باختہ کر دیا۔ کمال کی بات ہے کہ تیس منٹ کی اس دھمال سے وہ حکومت پریشان ہوئی جس نے 2014ء میں نوے روز تک کمبھ میلہ سجایا تھا۔ تین مہینے کے غل غپاڑے پر یہ تیس منٹ کی قوالی بازی لے گئی۔بلاول نے اس موقع پر ٹویٹ
مزید پڑھیے


صادق و امین کرپشن

جمعرات 21 مارچ 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
معاشی میدان میں تبدیلی سرکار کی محیر العقول کامیابیوں نے ایک دنیا کی عقول کو متحیر کر کے رکھ دیا ہے۔ ایک ایسی ہی کامیابی کا ذکر سابق وزیر خزانہ مفتاح اسمٰعیل نے کیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ تبدیلی سرکار بجلی کے میدان میں ہر روز کئی کروڑ روپے کا گردشی قرضہ بڑھا رہی ہے۔ درآنحالیکہ اس نے بجلی اور گیس‘ دونوں کے نرخ بڑھا دیے ہیں۔ منطق کہتی ہے کہ بجلی اور گیس کی زائد بلوں کی وصولی کے بعد یومیہ گردشی قرضہ کم ہونا چاہیے تھا۔( نواز دور میں گردشی قرضہ 480ارب روپے یکمشت کرنے کے بعد
مزید پڑھیے