Common frontend top

محمد صغیر قمر


فلسطین اے فلسطین


مجھے کشمیر سے بھی زیادہ فلسطین پیارا ہے،مجھے اپنی جان سے بھی عزیز ہے۔مجھے کرہ ارض پر موجود انسانوں میں سب سے بہترین انسان غزہ میں ملے۔میں دکھی دل کے ساتھ ایک تصویر دیکھتا رہا۔ایک معذور بوڑھا ویل چئیرپر بیٹھا،بظاہر وہ تصویر تھی لیکن مجھے یوں لگاوہ مجھ سے کہہ رہا ہے’’تمہیں شرم تو آئی تو ہوگی؟‘‘ندامت کے مارے میں پسینے میں ڈوب گیا۔وہ ایک تصویرتھی جس کے پیچھے ایک اور تصویر ‘ بوڑھے شیخ کی تصویر، جس نے ہر دل کو زخمی کر دیا ۔ اہل فلسطین پون صدی سے اقوام متحدہ کی تراسی قراردادوں کے باوجود اپنی ریاست
جمعه 13 اکتوبر 2023ء مزید پڑھیے

دستور پاکستان بقا کاضامن

جمعرات 05 اکتوبر 2023ء
محمد صغیر قمر
کیا اب بھی وقت نہیں آیا کہ اس ملک کا رُخ دستورکی طرف موڑ دیا جائے؟کیا اب بھی ہم اس بات سے ڈرتے ہیں کہ اگر اس ملک میں اسلام کے نظام کی بات کی گئی تو امریکا اوریورپ ناراض ہو جائیں گے؟ہمارا آئین ہماری ریاست کی بقا کا ضامن ہے۔ استعماری قوتوں کے غلبے کے نتیجے میں اسلامی دنیا ایک عمومی خوف اور مایوسی سے دو چار ہوچکی ہے ۔بے شک ہمیں اﷲ کے عذاب سے ڈرتے رہنا چاہیے اوران کاموں سے بچنا چاہیے، جن سے کسی قوم پر اﷲ کے عذاب کا فیصلہ مسلط ہوتا ہے لیکن
مزید پڑھیے


کشمیر کا شکوہ

جمعه 22  ستمبر 2023ء
محمد صغیر قمر
کشمیریوں نے دل وجان کے ساتھ پاکستان کے لیے ہر وہ قربانی دی جو ان کے بس میں تھی۔پاکستان میںکوئی بھی حادثہ رونما ہو جائے، اس کی پہلی چوٹ کشمیر پر پڑتی ہے۔ پاکستان کے لیے کوئی موہوم سا خطرہ بھی کشمیریوں کو بے کل کر دیتا ہے ۔بھارت اور پاکستان کے بیچ مسئلہ کشمیر پر مذاکرات کے ڈیڑھ سو سے زائد ادوار ہو چکے ہیں۔بھارت کی ہٹ دھرمی کی وجہ سے بار بارمذاکرات میں ناکامی کا سامنا کرنا پڑا،کشمیریوں کو مایوسیوں سے دوچار کیا جاتا رہا،لیکن ان کی آس ہمیشہ اس بنا پر زندہ رہی ۔ہر کشمیری کی
مزید پڑھیے


اقوام متحدہ ؟

هفته 09  ستمبر 2023ء
محمد صغیر قمر
ریاست جموں و کشمیر کا ہر شہری سوچتا ہے کہ وہ صدیوں سے غلام ‘ صدیوں سے محکوم و مجبور و فقیر ہے ۔گزشتہ پون صدی سے تو زیادہ ہی مجبور ہوئے کہ پاکستان سے محبت اور الحاق کا گہرا زخم کھا کر بھی پاکستان کے ساتھ شامل نہ ہو سکے اور اب مختلف آپشنز کی زد میں ہیں ۔ان کے آبائو اجدادناتمام حسرتوں کے ساتھ تہہ خاک جا سوئے ۔ کتنے تھے جو تاریک راہوں میں مارے گئے‘ لاکھوں بندی خانوں میں زندگی گزار آئے ۔ برسوں تک بزدلی کا طعنہ سہتے رہے کہ کشمیریوں کی طبیعت میں کبھی
مزید پڑھیے


گریبان!!

جمعرات 17  اگست 2023ء
محمد صغیر قمر
جہالت ہے،جاہلیت ہے۔ ظلم ہے جبر ہے،فسادہے،قتل و غارت گری ہے۔لو ٹ مار ہے،ڈاکہ زنی ہے،چوری ہے، مکاری ہے ،فتنے ہیں۔مہنگائی ہے،کرپشن ہے،بدنظمی ہے۔انصاف بھی نہیں عدل بھی نہیں۔ انسان انسان کو کاٹ کھانے کو دوڑ رہا ہے۔ادارے تقسیم ہیں،سیاست دان سیاست دان کا خون بہانے کے درپے ہے۔بازاروں ،چوکوں چوراہوں میں جنگ جاری ہے۔ کبھی آنکھیں بند کر کے لمبی سانس لیں اور سوچیں ہم کس معاشرے میں رہ رہے ہیں۔آپ کہیں گے یہ پاکستان کے معاشرے کی کہانی ہے۔یہ پاکستان کا نقشہ ہے۔بظاہر یہی لگتا ہے لیکن اصل میں یہ ساری کہانی باقاعدہ ترتیب دی گئی ہے۔ایک اسکرپٹ لکھا
مزید پڑھیے



کشمیر پالیسی؟

بدھ 09  اگست 2023ء
محمد صغیر قمر
یہ بات اب سمجھ آچکی ہوگی کہ کشمیر پر پسپائی کی بنیاد امریکی حکمرانوں سے خوف پر جنرل مشرف نے رکھی تھی۔اس کا تسلسل ابھی تک جاری ہے۔پاکستان کے حکمرانوں کی یہ عاقبت نا اندیشی کشمیر کی تحریک آزادی کو ایک ایسے موڑ پر لے آئی ہے کہ جہاں خود پاکستان کی آزادی‘ بقا اور سا لمیت کے لیے بھی سنگین چیلنج پیدا ہوگیا ہے۔یہ بات عام وخواص کو سمجھ لینی چاہیے کہ آزادی کشمیر کی جد و جہدکے لیے جو خطرہ بالکل سر پر آ گیا ہے وہ خود پاکستان کے لیے بھی کم خطرناک نہیں ۔ تحریک
مزید پڑھیے


ٹھیکری پہرہ!

جمعرات 27 جولائی 2023ء
محمد صغیر قمر
راشد میری طرح گائوں زاد ہے۔ گزشتہ پینتیس برس سے امریکہ میں مقیم ہے‘ اپنی خو ُبدل سکا نہ روایات چھوڑ سکا ۔ ہمارا بچپن اکٹھے گزارا تھا اور بچپن کے بے شمار واقعات کی طرح اسے وہ واقعہ آج بھی یاد ہے ۔جس کا ذکر یہاں ہو رہا ہے ۔کشمیر کے دیہاتوں میں ستمبر اکتوبر میں گھاس کٹائی کا موسم ہوتا ہے ۔ جن گھروں میں مویشی زیادہ ہوتے ہیں، ان کے مالک زیادہ سے زیادہ گھاس کاٹ کر ذخیرہ کر لیتے ہیں ۔یہ وہ دن ہوتے ہیں جن کے بارے میںپہاڑی علاقوں میں یہ مقولہ عام ہے کہ
مزید پڑھیے


ایک پرانی کہانی

هفته 15 جولائی 2023ء
محمد صغیر قمر
مداری ڈگڈی بچاتا ہے، لوگ جمع ہوتے ہیں۔ایک ڈبے کے اوپر سو روپے کا نوٹ رکھتا ہے ،ڈبہ کھولتا ہے تو اندر سے چوزہ نکلتا ہے۔پھر ایک اور مداری آتا ہے کپڑا لہراتا ہے لوگ جمع ہوتے ہیں ،مداری اپنی پٹاری کھولتاہے ،اندر سے انڈے نکلتے ہیں وہ ان پر اپنا ہاتھ پھیرتا ہے اندر سے بندر نکلتا ہے۔ایسے ہی ایک اور مداری آتا ہے،ڈگدی بجاتا ہے ہجوم جمع ہوتا ہے۔مداری اپنے ہاتھ میں ایک روپے کا سکہّ پکڑ کر دوسرے ہاتھ سے کھینچتا ہے تو پانچ پانچ روپے کے دو سکّے نکال کر دکھا دیتا
مزید پڑھیے


کیپٹن عمار شہید

هفته 08 جولائی 2023ء
محمد صغیر قمر
عمار کو شہید ہوئے کچھ دن گزرے تھے ‘ ہم ان کے گھر حاضر ہوئے ۔ سراپا استقامت ان کی ماں نے کہا ‘ ’’ عمار کارگل کے محاذ پر تھا تو میں نے خواب میں اسے دیکھا۔ ہم اپنے گائوں میں ہیں اور آسمان سے لا تعداد لوگ پیرا شوٹ کے ذریعے اتر رہے ہیں ‘ ان میں عمار بھی ہے ۔ وہ بریگیڈیئر طارق محمود ( ٹی ایم ) شہید کے انداز میں پاکستان کا پرچم لہراتے ہوئے نیچے آ رہا ہے ۔ زمین پر اترتے ہی وہ میری نگاہوں سے اوجھل ہو جاتا ہے ۔ میں پریشان
مزید پڑھیے


صدیوں نے سزا پائی

پیر 03 جولائی 2023ء
محمد صغیر قمر
جموں کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے کے بعد بھارت ریاست کی آبادی کاتوازن تبدیل کرنے کی طرف پیش قدمی کر چکا ہے۔ یہ بات اپنی جگہ سوالیہ نشان ہے کہ 5 اگست 2019 سے اس وقت تک پاکستان اپنا وہ کردار ادا نہیں کر سکا، جو اسے کرنا چاہیے تھا۔محض بیان بازی اور ’’احتجاجی مراسلوں‘‘ سے بات آگے نہیں بڑھ سکی۔ہماری وزارت خارجہ ہمیشہ کی طرح گھسے پٹے بیان جاری کر کے مطمئن ہو جاتی ہے، جب کہ جموں کشمیر کے عوام اب تک سکتے میں ہیں۔انہیں سمجھ ہی نہیں آرہی کہ ان کے ساتھ
مزید پڑھیے








اہم خبریں