BN

ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری


’’ ختم قرآن‘‘ ۔۔۔ اورداتا دربار


ماہ رمضان۔۔۔ نیکیوں کا موسم بہار ہے،اس کا نقطہ کمال اور کلائمیکس یقینا ستائیسویں شب ہوتی ہے، جس کیساتھ دینی کے علاوہ، ہماری بہت سی سماجی اور خاندانی روایات بھی وابستہ ہیں، اس خاص موقع پر مساجد میں ذوق و شوق اور دینی جوش و ولولہ عروج پہ ہوتا ہے، تراویح کے موقع پر مساجد اپنے نمازیوں سے کھچا کھچ بھرجاتی ہیں، وہ نمازی جو ابتدائی چند روز ہ تراویح کے بعد مسجد سے غائب ہوئے تھے، بڑے اہتمام کیساتھ اس شب میں دوبارہ جلوہ گر ہوجاتے ہیں، بالعموم اس خطے میں ، تراویح میں’’ختم قرآن‘‘ا سی ستائیسویں شب
جمعه 22 مئی 2020ء

’’ لُقمان حکیم اور اس کے نصائح‘‘

پیر 18 مئی 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
حِکمت و دانش کے باب میں مردِ دانا حکیم لُقمان کی حیثیت اور شخصیت ایک معتبر اور مسلمہ مقام رکھتی ہے، بعض لوگ اسے نبوت کے درجے پر فائز سمجھتے ہیں اور بعض کے نزدیک۔۔۔ وہ نبی تو نہیں ، لیکن انبیاء کے خاندان سے ہیں اور وہ انہیں حضرت ایوب ؑ کا بھانجا یا خالہ کا بیٹا قرار دیتے ہیں ۔ قرآن پاک میں ان کے نام سے ایک پوری سورۃ موجود ہے، جس میں ان کے حکیما نہ پندو موعظَت کا ذکر ہے، حضرت ابنِ عمر ؓسے روایت ہے کہ نبی اکرم ﷺ نے فرمایاکہ لُقمان نبی نہیں
مزید پڑھیے


’’ ریاستِ مدینہ‘‘۔۔۔داخلہ اور خارجہ پالیسی

جمعه 15 مئی 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
حق اور باطل کی آویزش تو اسی دن شروع ہوگئی تھی ، جس دن حضرت محمد ﷺ نے مکہ کی وادی میں اللہ تعالیٰ کی واحدانیت اور اپنی رسالت کا پر چم سر بلند کیا تھا۔ جبر و استبداد پر مبنی تیرہ سالہ مکی دور کا خاتمہ’’ہجرت مدینہ‘‘ پہ ہوا، اور مسلمانوں کو آزاد فضا میں " اقامتِ دین"اور غلبہ اسلام کیلئے موزوں ماحول میسر آگیا۔ نبی اکرمﷺ نے یہاں پر ، ابتدائی چھ ماہ میں داخلی استحکام، اندرونی دفا ع اور مسلم معاشرے کی تنظیمی بنیادوں کو مستحکم کیا ۔ مسجد نبوی کی تعمیر کی صورت میں مرکزی سیکرٹریٹ
مزید پڑھیے


’’تجارت کے اصول ‘‘

پیر 11 مئی 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
جزیرہ نما عرب جو کہ دنیا کا سب سے بڑا’’جزیرہ نما‘‘ہے، ایشیا کے جنوب مغربی کو نے میں واقع ہے،جسکا باقی دنیا سے پیوند اور چلن ہمیشہ، بڑی حد تک جدا اور مختلف رہا ہے ۔ اگرچہ اسکا محل وقو ع علیحدگی اور انقطاعی صورت لیئے ہو ئے ہے ، تاہم بین الا عظمی اعتبار سے، یہ سرزمین ایشیا، افریقہ اور یورپ کے درمیان’’ نقطہ ماسکہ‘‘(Focal Point) کی حیثیت رکھتی ہے، جس کے سبب اس مقام کو بین الاقوامی تجارتی سنگھم اور ایک اہم رابطے کی حیثیت حاصل رہی۔عرب کے تین بڑے شہر تھے، مکہ ، مدینتہ المنورہ(یثرب) اور طائف۔۔۔
مزید پڑھیے


’’ یومُ الجمعہ‘‘

جمعه 08 مئی 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
زمانہ قبل از اسلام میں جمعہ کے دن کو " یوم العروبہ" کہا جاتا تھا،نبی اکرم ﷺکے اجدادمیں قُصّی کی شخصیت بہت معروف اور معتبرہے۔۔۔ کہ انہوں نے مکہ کی شہری ریاست کو منظم کر کے اسمیں باقاعدہ انتظامی محکمے تخلیق کیے اور قریش کے اثرورسوخ کو اس بستی میں مضبوط اور مستحکم کیا۔ قصی کے پر دادا یعنی نبی اکرم ﷺ کے ساتویں دادا کعب بن لوی کی شخصیت بھی تاریخ عرب میں بہت ممتاز اور معتبر مقام کی حامل تھی، کعب وہ اوّلین ہستی ہیں، جو ہر جمعہ یعنی"یوم العروبہ" کو اپنے قبیلہــ" قریش" کو اکھٹا کرکے،خطبہ ارشاد
مزید پڑھیے



برصغیر میں مدارس دینیہ کا اولین نصاب……(4)

پیر 04 مئی 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
سلطان محمود غزنوی کے نصاب میں فقہ کی تدریس کے لئے صرف ’’ہدایہ‘‘ شامل نصاب رہا جب کہ سکندر لودھی کے نصاب میں ان کے ساتھ ’’شرح وقایہ ‘‘کا بھی اضافہ ہوا۔سلطان محمود غزنوی کے دور کے نصاب میں ’’اصول فقہ ‘‘کی تدریس کے لیے دو کتابیں تھیں جبکہ سکندر لودھی کے نصاب میں ان کے ساتھ’’تلویح‘‘ کا اضافہ کر کے کتب مقررہ کی تعداد تین کی گئی۔ چار مضامین(تفسیر‘ حدیث‘تصوف اور ادب) کے کتب مقررہ میں کوئی اضافہ نہیں کیا گیا‘ چنانچہ دونوں نصابوں میں ان مضامین کے لئے کتب مقررہ یکساں رہیں۔ سکندر لودھی کے نصاب میں
مزید پڑھیے


’’ روزہ‘‘۔۔۔۔ اور اس کے تدریجی احکام

پیر 27 اپریل 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
عرب کی معاشرت اور کلچر میں مکہ کو مرکزی حیثیت حاصل تھی ۔مکہ حضرت ابرہیم ؑ نے آباد فرمایا اور نسل اسمعیل سے فروغ پذیر ہوا، ۔۔۔۔۔قریش حضرت اسمعیل کی اولاد تھے،اورمشرکانہ رسوم و رواج کے باوجودخود کو دینِ ابرہیم پر تصورکرتے، ان کے سارے ماحول میں کعبہ کو مرکزیت میسر تھی، روز مرہ کی کوئی مصروفیت نہ ہونے کے سبب، کعبہ کے گرد اپنی نشستیں آراستہ کر کے بیٹھنا ہی ان کا محبوب عمل تھا ، طواف کعبہ کو بھی انہوں نے انتہائی قبیح رسم و رواج سے پراگندہ کررکھا تھا، اس میں ان کا رویہ انتہائی گھنائونا تھا
مزید پڑھیے


یہی ہے عبادت، یہی دین وایماں

جمعه 24 اپریل 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
مولانا روم نے لکھا تھا کہ ساری انسانیت ایک دوسرے کیساتھ اسی طرح وابستہ اور نتھی ہے،جسطرح جسمانی اعضائ، انسانی جسم کیساتھ۔۔۔کہ انکا"جوہر" ایک ہے،شیخ سعدی نے بھی اسی فکر کو آگے بڑھایا کہ انسانیت کے باہم مربوط ہونے کا "بنیادی وصف" حضرت آدم ؑ کی نسبت سے ایک ہی ہے، نبی اکرم ﷺ نے فرمایا:اَلْخَلْقُ عَیَالُ اللہ یعنی مخلوق اللہ کا کنبہ ہے۔گزشتہ ہفتے لاہور میں ایسٹر کی مرکزی تقریب میں ، مُسلم، کرسچین، سِکھ، ہِندو سمیت دیگر مذاہب کے ماننے والوں نے اپنی بے بسی اور بے کسی کا معاملہ اس کائنات کے پالنہار کے آگے پیش کرتے
مزید پڑھیے


ملک گیر مشاورت…اور ’’رمضان فارمولا‘‘

پیر 20 اپریل 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
صدر اسلامی جمہوریہ پاکستان کی سربراہی میں پیش آمدہ ماہ رمضان 1442ھ کے امور بالخصوص’’نماز تراویح‘‘ کی بابت‘ ایک جامع اور اعلیٰ مشاورت کے بعد ’’متفقہ اور مشترکہ اعلامیہ‘‘ ڈاکٹر عارف علوی ‘ صدر پاکستان نے قوم کا عطا کر دیا‘ جو کہ یقینا اطمینان بخش امر ہے‘ ایک روز قبل‘ ایوان صدر میں منعقدہ اس اجلاس میں‘ ویڈیو لنک کے ذریعے چاروں صوبائی دارالحکومت کے ساتھ‘ صدر آزاد کشمیر سردار مسعود احمد خان اور گورنر گلگت بلتستان بھی اپنے صوبے کے اکابر علماء اور دینی شخصیات کے ساتھ اس میں شریک تھے۔ لاہور سے گورنر پنجاب کی سربراہی میں
مزید پڑھیے


دنیا کوہے اس مہدی برحق کی ضرورت

جمعه 17 اپریل 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
سیّدنا امام محمد المھدی علیہ السلام کے حوالے سے مختلف اعتقادی فتنے ہماری تاریخ میں پیدا ہوتے رہے ہیں۔ جن میں ایک یہ بھی تھا کہ امام محمد المہدی ۔ نام کی کوئی معین شخصیت نہ ہے، بلکہ ہر دور میں ایک امام مہدی ہوتا ہے، جولوگوں کی راہنمائی کا فریضہ سرانجام دیتارہا ہے۔ اس خیال اور نظریے کے پیشِ نظر بہت سے لوگ اپنے آپ کو تاریخ کے مختلف ادوار میں ’’المھدی‘‘ خیال کرتے رہے۔ جبکہ دوسری طرف کثیر احادیث، جن میں متواتر اور مرفوع درجے کی بھی شامل ہیں۔ حضرت شاہ ولی اللہ محدثِ دھلوی نے ’’التفہیمات الالٰہیہ‘‘
مزید پڑھیے