BN

ہارون الرشید


سیّدہ زینبؓ کی بیٹیاں


اللہ کی ان پہ لاکھوں رحمتیں ہوں، تو یہ سیّدہ زینبؓ کی بیٹیاں ہیں؟ جو شہید ہوئے، وہ شہید ہوئے۔ اب یہ ان کی مشعل بردارہیں۔ جنرل اختر عبد الرحمٰن کے صاحبزادوں، ایک کے بعد دوسرے نے جب اپنی دادی امّاں کی کہانی سنائی تو مجھے ماں جی یاد آتی رہیں، نانی امّاں۔ سارا دن تخت پر بیٹھی جو تسبیح اور نوافل پڑھا کرتیں اور ایک حکمران کی طرح فیصلے صادر کرتیں۔ جنرل عبد المجید ملک نے اپنی والدہ محترمہ کا ذکر چھیڑا تو سامع نے حیرت سے کہا: دو ایسی محترم خواتین اور بھی تھیں۔ جہاندیدہ آدمی نے سر
منگل 23 جون 2020ء

جنرل محمد ضیاء الحق

پیر 22 جون 2020ء
ہارون الرشید
ضیاء الحق اتنے اچھے تھے، جیسا کہ ان کے مداحین کہتے ہیں اور نہ اتنے برے، جیسا کہ ان کے مخالفین دعویٰ کرتے ہیں لیکن ایک انتہائی دیانت دار، مکمل محب وطن اور انسان دوست۔ تبریٰ کرنے والوں پر حیرت ہے۔ مخالفین کے نزدیک جنرل پاکستانی معاشرے میں زوال کا تنہا ذمہ دار ہے۔ بہت سے لکھنے والے یہ تاثر دیتے ہیں اور اصرار کے ساتھ۔ وقت گزرنے کے ساتھ یہ تاثر گہرا ہوتا جا رہاہے۔ اس لیے کہ ضیاء الحق کا دفاع کرنے والا کوئی نہیں۔ جنرل کی وفات کے بعد برسوں نواز شریف ضیاء الحق کے مزار پہ جاتے
مزید پڑھیے


کبھی بحیلۂ مذہب، کبھی بنامِ وطن

جمعرات 18 جون 2020ء
ہارون الرشید
تعلیم و تربیت کی ضرورت ہوتی ہے، معاشروں کو تعلیم و تربیت کی، ورنہ وہی ریوڑ کے ریوڑ۔ صدیوں پہلے جو کبھی بادشاہوں اور پادریوں کا مارایورپ تھا، جو آج ہم ہیں۔ ڈاکٹر یاسمین راشد نے، کورونا کے باب میں اہلِ لاہور کی لاپرواہی کی شکایت کی تو کچھ لوگ ناراض ہوگئے۔ یہی گلہ وزیرِ اعظم سے ہوااور بلاول بھٹو نے تو یہاں تک کہہ دیا کہ عوام کو جاہل کہنے والوں کو الیکشن میں مزہ چکھایا جائے گا۔ مطلب یہ کہ ہم انہیں بھڑکانے کی کوشش کریں گے۔عوام کے جذبات سے کھیلیں گے۔ ڈاکٹر یاسمین راشد
مزید پڑھیے


نظامِ نو

بدھ 17 جون 2020ء
ہارون الرشید
اس فرسودہ نظام او راس نا اہل قیادت کے ساتھ ہم دلدل میں ہی پڑے رہیں گے۔ صحرا ہی میں بھٹکتے رہیں گے۔ ایک کے بعد دوسرے اور پھر تیسرے دوست سے عرض کیا: عمران خان کے تجزیے پر وقت ضائع کرنے کی اب کوئی ضرورت نہیں اور نہ مشورہ دینے کی۔غور و فکر مستقبل کے بارے میں ہونا چاہئیے۔اجتماعی نظام میں خرابی کہاں ہے اور کس طرح اس کی جڑکاٹی جا سکتی ہے۔ خان نے اس دن ہار مان لی تھی، جب روایتی سیاستدانوں اور اسٹیبلشمنٹ کی مدد سے اقتدار میں آنے کی ٹھان لی تھی۔ تیس اکتوبر2011ء کے تاریخی
مزید پڑھیے


خدا کے لیے!

منگل 16 جون 2020ء
ہارون الرشید
سنبھل جاؤ، اللہ کے بندو، اب بھی سنبھل جاؤ۔ کورونا کوئی مرض ہی نہیں ہے، مکمل احتیاط اگر روا رکھی جائے مگر یہ آتش فشاں ہے، اگر خود کو حالات کے حوالے کر دیا جائے۔ کیا وائرس کے خلاف اپنی جنگ ہم ہار رہے ہیں؟ اسد عمر کے مطابق چند ہفتوں میں مریضوں کی تعداد 12لاکھ ہو سکتی ہے۔ آغا خان یونیورسٹی کراچی کے سیمینار میں ماہرین نے کہا کہ اموات کی تعداد دو لاکھ ہو سکتی ہے۔ ہفتے کے روز امپیریل کالج لندن کے سروے میں بتایا گیا کہ خدانخواستہ پاکستان میں 22لاکھ انسان شکار ہو سکتے ہیں۔
مزید پڑھیے



پھر کیا ہوگا؟

جمعرات 11 جون 2020ء
ہارون الرشید
اقتدار آج ہے، کل نہیں ہوگا۔ پھر کیا ہوگا؟ اسحق خاکوانی غیر معمولی سوجھ بوجھ اور توازن کے آدمی ہیں۔ کبھی کسی کو صدمہ پہنچے تو اخبا رنویسوں میں سے کسی کو پیغام بھیجتے ہیں۔ آج دو کلپ انہوں نے ارسال کیے اور لکھا: ہو سکے تو دادرسی کے لیے کسی سے بات کرو۔ صرف تحریکِ انصاف ہی نہیں، خاکوانی ملک کے بہترین سیاستدانوں میں سے ایک ہیں۔ وہ آدمی، جس کے وعدے پر اعتبار کیا جا سکتاہے اور ہمیشہ جس سے شائستگی کی امید کی جاتی ہے۔ بے تکلفی ہے؛چنانچہ جب وہ بات کررہے تھے تو مزاحاً کہا: آپ
مزید پڑھیے


آغاز بھی رسوائی، انجام بھی رسوائی

بدھ 10 جون 2020ء
ہارون الرشید
آغاز نہ سہی انجام تو رسوائی ہی رسوائی ہے منگل کے سوا بارہ بجے میاں شہباز شریف نیب کے صدر دفتر میں داخل ہوئے۔ تفتیش کے کمرے میں سات افراد ان کے منتظر تھے۔ انہوں نے وہی کیا جس کی توقع تھی۔مطالبہ یہ تھا کہ کیمرہ بند کر دیا جائے۔اس پر ان سے کہا گیا کہ آپ کی پارٹی کے ایک لیڈر ٹی وی پر مباحثے کی دعوت دیتے رہتے ہیں۔ ’’جی ہاں‘‘انہوں نے کہا ’’ٹی وی پر بحث ہو سکتی ہے‘‘۔ اس پر ان کی خدمت میں عرض کیا گیا لیکن تفتیش ٹی وی پر نہیں ہوتی۔ ناراض ہو کر وہ
مزید پڑھیے


بدلتی ہوئی دنیا

منگل 09 جون 2020ء
ہارون الرشید
ابھی سے یہ نہیں کہا جا سکتا کہ امریکی غلبے کا خاتمہ قریب ہے۔ ہاں اگر روس اور چین ایک نئی عالمی کرنسی پر متفق ہو گئے؟ ثبات ایک تغیر کو ہے زمانے میں زمیں زیر وزبر ہے اور لگتا ہے کہ آنے والے برسوں میں بھی طوفانوں کی زد میں رہے گی۔ کورونا کا مسئلہ عالمی معیشت کو جس نے ادھیڑ کر رکھ دیا ہے۔ ایسی ویکسین جب تک ایجاد نہیں ہو جاتی دنیا بھر کے تمام لوگوں کو جو مہیا کی جا سکے‘ بحالی کا عمل شروع نہ ہو سکے گا۔ کون جانتا ہے کہ ابھی اس کے
مزید پڑھیے


آئیے ہاتھ اٹھائیں ہم بھی

پیر 08 جون 2020ء
ہارون الرشید
بے چارگی سی بے چارگی ہے۔ دعا کے لئے ہاتھ اٹھانے کے سوا کوئی راہ نہیں، التجا کے سوا کوئی چارہ نہیں۔ رحم فرما، یارب رحم فرما۔ رحمتہ للعالمینؐ کی امت پہلے ہی کتنی مفلس ہو گئی۔ کہیں کہیں کوئی چراغ جلتاہے، بارِ الہا اسے جلتا رکھ۔ تاریکی بہت گھنی اور گہری ہے، بہت گھنی اور گہری۔ آئیے ہاتھ اٹھائیں ہم بھی ہم جنہیں رسمِ دعا یاد نہیں کوئی شاہانہ مسہری وہاں نہیں اور نہ اس پہ کوئی بیمار شہزادہ۔اپنے لاڈلے فرزندہمایوں کی زندگی سے ظہیر الدین بابر مایوس ہوگیا۔ بابر جو بہادری، سخت جانی، مستقل مزاجی، بے ساختگی اور صدق
مزید پڑھیے


اک عمر ہونے آئی ہے

جمعرات 04 جون 2020ء
ہارون الرشید
صدارتی نظام نہ سہی، کوئی دوسرا طریق وضع کرنا ہوگا۔سیاسی پارٹیاں ناکام ہیں اور اسٹیبلشمنٹ بھی۔ ہاتھ پہ ہاتھ دھرے، کب تک قوم انتظار کرتی رہے گی؟ کوئی پکاروکہ اک عمر ہونے آئی ہے فلک کو قافلہ ٔ روز و شام ٹھہرائے شہباز شریف نیب کے ہاتھ نہ لگ سکے۔ لال مسجد والے مولانا عبد العزیز کے ساتھ ضلعی انتظامیہ کے مذاکرات جاری ہیں کہ کسی طرح فساد کو روکا جا سکے۔ بیچ میں ثالث پڑے ہیں کہ حکومت کی بات مولوی صاحب نہیں مانتے اور مولوی صاحب پہ حکومت کو بھروسہ نہیں۔ کم از کم 52اضلاع میں ٹڈی دل کی
مزید پڑھیے