خاور نعیم ہاشمی



فیض صاحب سے معذرت


العزیزیہ اور فلیگ شپ ریفرنس میں نواز شریف کے مستقبل کے بارے میں فیصلہ سامنے آجائے گا،اس سے قطع نظر کہ فیصلہ آتا کیا ہے؟ مجھے اس دن کا نواز شریف ہمیشہ یاد رہے گا جب تین چاردن پہلے وہ عدالت میں پیش ہوئے۔ انہوں نے فیصلے کا دن تبدیل کرنے کی درخواست کی جسے عدالت نے مسترد کر دیا اور انہیں کہا گیا کہ فیصلہ چوبیس دسمبر کو ہی سنایا جائے گا، عدالت سے ان کی واپسی پر باہر کھڑے ہوئے ایک صحافی نے ان سے کوئی سوال کیا، جس کے جواب میں انہوں نے فیض کی ایک مشہور
اتوار 23 دسمبر 2018ء

صحافی اور مبینہ صحافی

جمعه 21 دسمبر 2018ء
خاور نعیم ہاشمی
کشور ناہید کے نام کے ساتھ محترمہ لکھتے ہوئے بھی ڈر لگتاہے،اردو ادب کی اس لیونگ لیجنڈ کی اردو ادب کیلئے بہت خدمات ہیں،جب تک ہمت رہی ادب و ثقافت کے میدان میں اپنی تحریروں اور شاعری کے پھول برساتی رہیں، اب بھی کالم لکھ رہی ہیں ،کشور ناہید کو ہر کریڈٹ دیا جا سکتا ہے، سوائے عورت ہونے کا طعنہ دینے کے، مجھے منیر نیازی مرحوم نے ایڈوائس کیا تھا کہ جب بھی کشور سے ملو،اسے مرد سمجھ کر ملنا ورنہ کوئی سانحہ بھی وقوع پذیر ہو سکتا ہے۔ اللہ انہیں صحت مند اور سلامت رکھے۔فیض صاحب سے فراز
مزید پڑھیے


تہذیب،ثقافت اور حفیظ قندھاری

اتوار 16 دسمبر 2018ء
خاور نعیم ہاشمی
پاکستان کے معرض وجود میں آنے کے بعد ہماری سب سے بڑی اور سب سے پہلی بد قسمتی یہ ہوئی کہ اس نوزائیدہ مملکت سے وابستہ اس دھرتی کی صدیوں کی تاریخ ہم ہندوؤں کے پاس چھوڑ آئے، اپنی وراثت میں شامل نہ کیا،تہذیب و تمدن کے خزانے اور ان خزانوں کی چابیاں نہ جانے ہمارے لئے اہم نہ تھیں، متحدہ ہندوستان کی تاریخ جہاں سینکڑوں سال مسلمانوں نے حکومت کی اور ساری دنیا سے اپنے انداز حکمرانی کی داد پائی، ہم نے سائنس ،طب ،حکمت ،اور دانش کے خزینے اپنے پاس نہ رکھے، سب کچھ لٹا کے پاکستان میں
مزید پڑھیے


چہرے، کتابیں اور کہانیاں

جمعه 14 دسمبر 2018ء
خاور نعیم ہاشمی
ایک زمانہ تھا جب ڈانس پارٹیاں نہیں نائٹ پارٹیاں ہوا کرتی تھیں ۔نائٹ پارٹیوں کا مفہوم فیملی اینڈ فرینڈز گیٹ ٹو گیدر ہوتا ،یہ پارٹیاں عموماً ویک اینڈ پر ہوا کرتیں، ایسی پارٹیاں اب بھی ہوتی ہیں اور کثرت سے ہوتی ہیں، فرق یہ آ گیا ہے کہ اب لوگ دوستوں،رشتہ داروں اور مہمانوں کو گھروں کی بجائے زیادہ تر ہوٹلوں میں مدعو کرنے لگے ہیں۔ میں ایسی پارٹیوں سے بہت کچھ سیکھتا، ایسی پارٹیوں میں کم از کم ایک دو نئے چہرے ضرور ہوتے ،ان دنوں کتابیں پڑھنے کا خبط تو تھا ہی لیکن کتابوں سے زیادہ
مزید پڑھیے


شریفانہ باتیں

اتوار 09 دسمبر 2018ء
خاور نعیم ہاشمی
دو بار وزیر اعلی پنجاب اور تین بار وزیر اعظم پاکستان کے منصب پر فائزرہنے والے جناب نواز شریف خود ہی نہیں ان کا پورا خاندان مشکلات میں گھرا ہوا ہے، انہوں نے ہمیں سمجھا یا نہ سمجھا، ہم انہیں اس ملک کا برابر کا بلکہ برابر سے بھی بڑھ کر شہری سمجھتے ہیں ان کے ان مصائب کا ذمہ دار کون ہے؟ یہ سوال میں اس لئے زیر بحث نہیں لاؤں گا ، کیونکہ میرا ایمان اور میرا یقین یہی ہے کہ جو کچھ ہوتا ہے وہ منجانب اللہ ہوتا ہے اور جو ہوتا ہے بہتری کیلئے ہی ہوتا
مزید پڑھیے




میں ہوں، میری تنہائی

جمعه 07 دسمبر 2018ء
خاور نعیم ہاشمی
میری زندگی کا ایک بھی لمحہ ایسا نہیں جسے میں بھول گیا ہوں یاجسے میں نے اسے فراموش کر دیا ہو، کوئی ایک بھی شخص ایسا نہیں جو میرے ساتھ جڑا ہو اور میری یادداشت سے محو ہوگیا ہو، شکلوں اور شکوئوں،اور محبتوں اور سوچوں سے لبریز میرا دماغ بوجھل ہوجانے کے باوجود اپنا وزن ہلکا کرنے کو تیار نہیں، میں میرا دل اور میرا دماغ علیحدہ علیحدہ سمتوں پر گامزن رہتے ہیں،ایک دوسرے سے نبرد آزما ہیں کوئی بھی حصہ دوسرے کی حاکمیت قبول کرنے کو تیار نہیں، تینوں کے مابین کشمکش ہے کہ بڑھتی ہی چلی جا رہی
مزید پڑھیے


ڈالر اور محبوبائیں

اتوار 02 دسمبر 2018ء
خاور نعیم ہاشمی
ڈالراب ایک سو پچاس کی حد سے زیادہ دورنہیںاس حقیقت اور کھلے سچ کے اقرار سے فرار اب ممکن نہیں،وزیر اعظم ہوں یاوزیر خزانہ اس حوالے سے پریشان نہیں، ان کا کہنا ہے کہ یہ وہ سچ ہے جسے وقوع پذیر ہونا ہی تھا، ن لیگی حکومت نے معیشت کو مصنوعی سہارا دے رکھا تھا ،اور اس جھوٹے سہارے کو ٹوٹنا ہی تھا، غیر جانبدار ماہرین معاشیات و اقتصادیات حکومتی موقف کے حامی ہیں، اور جو جانبدار ہیں وہ خاموش ہیں، اس اہم ترین ایشو پر کوئی کسی کو مناظرے کا چیلنج نہیں دے رہا، عمران خان کہتے ہیں کہ
مزید پڑھیے


مائی نیم از خان

جمعه 30 نومبر 2018ء
خاور نعیم ہاشمی
ماضی میں ایک فلم بنائی تھی سیف الدین سیف صاحب نے، نام تھا کرتار سنگھ، علاؤالدین کی حقیقت سے قریب تر اداکاری اور اداکارہ لیلیٰ اور بہار پر فلمائے گئے گیت، ’’دیساں دا راجہ میرے بابل دا پیارا، امڑی دے دِل دا سہارا‘‘نے اس فلم کو کامیابی سے ہمکنار کیا تھا، اور اب ایک فلم بنائی ہے ہمارے وزیر اعظم عمران خان نے، کرتار پور بارڈر،اس فلم نے پاکستان اور بھارت میں سرحدی لکیروں پر بنائی جانے والی ماضی کی تمام فلموں کو مات دیدی ہے، مزید تڑکہ لگانے کیلئے پروڈیوسر عمران خان نے ہندوؤں کی سیاسی دیوی سشما سوراج
مزید پڑھیے


بالآخر

اتوار 25 نومبر 2018ء
خاور نعیم ہاشمی
بائیس نومبر کوجب بھارت سے خبر سامنے آئی کہ انڈین کابینہ نے کرتارپوربارڈر کھونے کی اجازت دیدی ہے تو کون ہے جو اس بھارتی فیصلے پر حیران نہ ہوا،یہ منظوری کسی وزیر یا وزیر اعظم کی طرف سے نہیں بھارتی کابینہ نے دی،کرتار سنگھ بارڈر کھولنے کی بات ،تجویز یا پیشکش پاکستان کے سپہ سالار جنرل قمر جاوید باجوہ نے عمران خان کی بحیثیت وزیر اعظم حلف برداری کی تقریب میں کی تھی، یہ وہ لمحہ تھا جب آرمی چیف نے عمران خان کی دعوت پر اسلام آباد آئے ہوئے سابق کرکٹر اور ایکٹر سدھو کو گلے لگایا تھا،
مزید پڑھیے


تلخیاں اور جدائیاں

جمعه 23 نومبر 2018ء
خاور نعیم ہاشمی
میرے لئے پاکستان کیلئے ایک طویل عرصہ بعد خوشی کی خبر یہ ہے کہ وزیر اعظم عمران خان نے آئی ایم ایف کی کڑی شرائط ماننے سے انکار کیا اور اس کے نتیجے میں مذاکرات ناکامی سے دوچار ہوگئے،اس کے ساتھ اطلاع یہ بھی ہے کہ اگلے سال پندرہ جنوری تک مذاکرات کے دوسرے راؤنڈ میں عالمی مالیاتی فنڈ سے معاہدہ ممکن ہے، اگر اگلے دو ماہ سے پہلے پہلے ہمیں عالمی سود خور سے مدد ملنے کا کوئی امکان ابھی تک موجود ہے تو کن شرائط پر؟ بتانے والے یہ ہمیں نہیں بتا رہے، قرضوں کی فضا میں زندہ
مزید پڑھیے