BN

افتخار گیلانی


ٹرمپ کا فلسطین پلان ، اوسلو اکارڈ کو دفنانے کا سامان


حیفہ کے پاس سمندر سے صاف پانی کشید کرنے کا دنیا کا سب سے بڑا پلانٹ لگا کر پانی کے معاملے میں پہلے ہی اسرائیل اس تک خود کفالت اختیار کر چکا ہے کہ وہ اب اردن کو بھی پانی سپلائی کرتا ہے۔ اسرائیل نے اب اردن اور مصر کو گیس کی ترسیل شروع کر دی ہے۔ اس وقت مصر کو اسرائیل سے 85ملین کیوبک میٹر گیس فراہم ہورہی ہے جس سے اسرائیل سالانہ 19.5بلین ڈالر کماتا ہے۔ ستم ظریفی یہ ہے بس چند سال قبل تک اسرائیل ، مصر سے تیل و گیس خریدتا تھا۔ حیفہ سے
بدھ 05 فروری 2020ء

ٹرمپ کا فلسطین پلان ، اوسلو اکارڈ کو دفنانے کا سامان

منگل 04 فروری 2020ء
افتخار گیلانی
ناروے کی سمندری حدود میں جب 1979 ء میں پیٹرولیم کے ذخائر نکالنے کا کام شروع ہوا ،تو یورپ و امریکہ کے متعددمسیحی اور یہودی اداروں نے اوسلو حکومت پر دباوٗ دیا کہ یہ تیل اسرائیل کو ارزاں نرخ پر یا مفت مہیا کرایا جائے۔ ان کی دلیل تھی، چونکہ تیل کی دولت سے مالامال عرب ممالک اسرائیل کو تیل فراہم نہیں کرتے ہیں اور ایران میں مغرب نواز رضا شاہ پہلوی حکومت کا تختہ پلٹنے سے انرجی کی فراہمی اور زیادہ مشکل ہوگئی ہے، اسلئے ناروے کو اپنے وسائل یہودی ریاست کی بقا ء کیلئے وقف
مزید پڑھیے


بھارت، پاکستان تجارت کی معطلی : کس کو ہوا نقصان

منگل 28 جنوری 2020ء
افتخار گیلانی
داخلی محاذ پر جارحانہ تیور دکھاتے ہوئے وزیرا عظم نریندری مودی اپنی دوسری مدت حکومت میں سفارتی سطح پر بھارت کو اس خطے میں ایک سپر پاور کے بطور منوانے کی حکمت عملی پر گامزن ہے ۔ اس کے حصول کیلئے چانکیہ کی تجویزکی ہوئی صدیوں پرانی پالیسی سام (گفتگو) دھام (لالچ)، ڈھنڈ ( سزا) اور بھید (بلیک میل) پر عمل پیرا ہے۔ اگر ایک حساس پڑوسی کی حیثیت سے اور استعماری قوتوں کے خلاف محاذ کے لیڈر کی حیثیت سے بھارت خطے میں اپنے آپ کو پیش کرتا، تو شاید پس و پیش کی نوبت ہی نہ آتی۔
مزید پڑھیے


دیوندر سنگھ سے اوتار سنگھ تک

جمعرات 23 جنوری 2020ء
افتخار گیلانی
22 ویں راشٹریہ رائفلز کے میجر رام موہن رائے نے ان کے شوہرپر اذیتوں کی انتہاکردی۔ ان کے پوشیدہ اعضاء پر بجلی کے جھٹکے لگائے گئے، سر عام گالیاں دی گئیں اور بے عزتی کی گئی، حالانکہ ان کا قصور صرف اتنا تھا کہ وہ ایک عام انسان کی طرح زندگی بسر کرنا چاہتے تھے‘‘۔ سکیورٹی فورسز والے افضل کو اکثر اٹھا کر اپنے کیمپوں میں لے جایا کرتے تھے، جہاں انہیں ٹارچر کیا جاتا اور بلا وجہ مارا پیٹا جاتا تھا۔ بعد میں یہ کام جموں و کشمیر کے اسپیشل آپریشن گروپ یعنی ایس او جی نے سنبھال
مزید پڑھیے


دیوندر سنگھ سے اوتار سنگھ تک

منگل 21 جنوری 2020ء
افتخار گیلانی
بھارتی دارالحکومت نئی دہلی میں اپنے 27سالہ صحافتی کیریئر کے دوران میں نے نہ صرف وقائع نگار کی حیثیت سے کشمیر یا بھارت اور پاکستان کے حوالے سے رونما ہونے والے متعدد اعلانیہ یا پس پردہ واقعات کا مشاہدہ کیا،بلکہ نہ چاہتے ہوئے بھی بسا ا وقات حالات و حوادثات کا کردار بن گیا۔ پچھلے ہفتے جب خبر آئی کہ جموں و کشمیر پولیس نے اپنے ہی ایک ڈپٹی اسپرنٹنڈنٹ دیوندر سنگھ کو دو عسکریت پسندوں کو جموں لے جاتے ہوئے گرفتار کیا، تو میرے لئے اچنبھے کی بات نہیں تھی۔ پچھلے 30برسوں میںکشمیر میںمتعدد ایسے واقعات رونما ہوئے، جو
مزید پڑھیے



جنرل سلیمانی : طلسماتی شخصیت یا جنگی مجرم

منگل 14 جنوری 2020ء
افتخار گیلانی
امریکی ڈرون حملوں میں ایرانی ملٹری کمانڈر میجر جنرل قاسم سلیمانی اور عراق میں برسرپیکار شیعہ عسکری گروپ الحشد الشعبی کے نائب سربراہ ابو مہدی المہندس کی ہلاکت اور اسکے جواب میں عراق میں موجود دو امریکی اڈوں پر ایرانی میزائلوں کی بارش نے مشرق وسطیٰ کو ایک بڑی جنگ کے دہانے پر کھڑا کرکے رکھ دیا تھا۔ اب لگتا ہے کہ فی الحال جنگ کے باد ل چھٹ گئے ہیں، مگر دونوں فریق ایک طویل خفیہ اور اعصابی جنگ لڑنے کیلئے پر تول رہے ہیں۔ یوکرائن کے مسافر بردار طیارہ کو نشانہ بنانے اور اسکے مسافروں کی ہلاکت نے
مزید پڑھیے


بھارت : پہلے کمانڈر انچیف کی تقرری اور خدشات

بدھ 08 جنوری 2020ء
افتخار گیلانی
شاید جنرل سنگھ کے حکومت کے ساتھ اختلافات چیف آف ڈیفنس کے عہدے کی تقرری پر اثر انداز نہیں ہوتے، مگر جنوری 2012ء کی ایک دھند بھری رات کو خفیہ اداروں نے وزیرا عظم کو جگا کر بتایا کہ فوج کی اسٹرائک کور کی چند یونٹیںمتھرا، آگرہ، حصار اور بھرت پور سے کوچ کرکے دہلی کی طرف رواں ہیں۔ وزیرا عظم نے جب وزیر دفاع کو فون کیا تو معلوم ہوا کہ فوج کی اس حرکت کے بارے میں ان کو کوئی علم نہیں ہے۔ دہلی یا اسکے اطراف میں فوجی نقل و حرکت کیلئے وزارت دفاع سے منظوری لینی
مزید پڑھیے


بھارت : پہلے کمانڈر انچیف کی تقرری اور خدشات

منگل 07 جنوری 2020ء
افتخار گیلانی
بھارت میں جہاں اسوقت متنازعہ شہریت قانون کے خلاف جاری احتجاج نے وزیر اعظم مودی اور اسکے حواریوں کی چولیں ہلا کر رکھ دی ہیں، وہیں دوسری طرف حکومت نے فوج کے حوالے سے دورس عوامل کے ایک فیصلہ کو عملی جامہ پہنا کر ، ملک میں ایک نئے طاقت کے مرکز کی داغ بیل ڈالی دی ہے۔ جو بھارت کی تاریخ اور اسکے اقدار کیلئے ایک سنگ میل ثابت ہوسکتا ہے۔ فوج سے حال ہی میں ریٹائرڈ ہونے والے سربراہ جنرل بیپن راوت ، ملک کی دفاعی سروسز کے پہلے کمانڈر انچیف ہونگے۔ 1947ء تک برطانوی دور اقتدار میں
مزید پڑھیے


پولیس کی ہرزہ سرائی: مسلمانوں کے لئے پاکستان یا قبرستان

منگل 31 دسمبر 2019ء
افتخار گیلانی
بھارت کی مشرقی ریاست بہار میں 2015کے اسمبلی انتخابات کی کوریج کے دوران، میں دربھنگہ ضلع سے نیپال کی سرحد سے ملحق علاقہ مدھوبنی کی طرف رواں تھا کہ راستے میں ایک پولیس ناکہ پر گاڑی کو رکنے کا اشارہ کیا گیا۔ انتخابات کی مہم کے دوران الیکشن کمیشن کی ہدایت پر باہر کی گاڑیوں کی خاص طور پر چیکنگ ہوتی ہے تاکہ ووٹروں کو لبھانے یا انکو رشوت دینے کیلئے کیش اور شراب کی ترسیل کو روکا جاسکے۔ پولیس والے جب تک گاڑی کی تلاشی لے رہے تھے، میں سڑک کنارے ایک ڈابھا کی طرف چل پڑا اور چائے
مزید پڑھیے


بھارت اور پاکستان کا نظام: احتساب، استحکام و انتقام(2)

بدھ 25 دسمبر 2019ء
افتخار گیلانی
چیف جسٹس کے عہدے کے وقار کا بھی بھارت کے نظا م میں کس قدر خیال رکھا جاتا ہے کہ جب 2000میں اسوقت کے وزیر قانون رام جیٹھ ملانی نے بنگلور میں ایک تقریب کے دورن چیف جسٹس آدرش سین آنند کے رویہ کی بغیر ان کا نام لئے بالواسطہ شکایت کی تو وزیراعظم اٹل بہاری واجپائی نے بذریعہ فیکس فوراً ان سے استعفیٰ مانگا۔ جب تک و ہ واپس دہلی آجاتے، واجپائی نے ان کو وزارت سے الگ کرکے نیا وزیر قانون مقرر کر دیا تھا۔ گو کہ واپسی پر جیٹھ ملانی ، جو خود بھی معروف قانون دان
مزید پڑھیے