BN

اوریا مقبول جان



بری سے بری جمہوریت


سیکولر، لبرل اور جمہوریت پسند مسلمان سکالرز کا کمال یہ ہے کہ انہیں شدت پسندی، دہشت گردی اور امن دشمنی صرف اور صرف مسلمان معاشروں میں نظر آتی ہے اور اسکی جڑیں بھی وہ کہیں نہ کہیں سے کھینچ کھانچ کر آمریت میں نکال لیتے ہیں۔ آمریت بھی وہ جسکا سربراہ اسلام کے نام کا استعمال کرتا ہو، ورنہ مصر کا جمال عبد الناصر ہو یا پاکستان کے ایوب خان اور مشرف، انکے ادوار تو دراصل ان سکالرز کے نزدیک شدت پسندی سے جنگ کرتے ہوئے گزرے۔ ان عظیم اور جدید مسلمان سکالرز کے نزدیک جمہوریت ہی تمام دکھوں کا
منگل 28 مئی 2019ء

موسیٰ موسیٰ۔ ذاکر موسیٰ

پیر 27 مئی 2019ء
اوریا مقبول جان
جس دن دنیا بھر کے جمہوریت پرست علمائ، جدید مسلم فلاسفر اور مرنجامرنج اسلامی جدوجہد کے داعیان کے منہ پر بھارت کی بیداغ جمہوریت نریندر مودی کی صورت میں "اکثریت کی آمریت" کے زوردار طمانچے رسید کر رہی تھی، اسی دن بہتر سال سے قائم اس مسلسل بھارتی جمہوری حکومت کے سپاہی، ملت اسلامیہ کے ایک ایسے نوجوان کو شہادت کی موت سے سرفراز کرنے کے لیے گھیرے ہوئے تھے جسکا نام صدیوں تک آسمان شہادت پر جگمگاتا رہے گا۔ پچیس سالہ ذاکر موسیٰ جس نے کشمیر کی آزادی کی جدوجہد کو قوم پرستانہ شرک سے آزاد کر کے خالصتاً
مزید پڑھیے


کیا اصل نشانہ پاکستان ہے (آخری قسط)

بدھ 22 مئی 2019ء
اوریا مقبول جان
ایران اور امریکہ کے درمیان دھمکیوں، معاشی پابندیوں، سفارتی تعلقات کے خاتمے اور زبانی جنگ کا سلسلہ انقلاب ایران یعنی چالیس سال سے چل رہا ہے۔ آیت اللہ خمینی اسے شیطان بزرگ کہتے تھے اور دوسری جانب امریکہ بھی ایران کو Axis of Evil یعنی شیطان کا محور قرار دیتا رہا ہے۔ لیکن یہ جنگ کبھی بھی زبان و بیان سے آگے نہ بڑھ سکی۔ لیکن اس عرصہ میں ایران کے دو پڑوسی ممالک ، افغانستان اور عراق بدترین امریکی اور عالمی جارحیت کا شکار ہوئے۔ یعنی جنگیں شیطان کے محور کیخلاف نہیں ،اسکے آس پاس ہوتی رہیں۔ قریبی پڑوسی
مزید پڑھیے


کیا اصل نشانہ پاکستان ہے

منگل 21 مئی 2019ء
اوریا مقبول جان
کوئی یہ کہیے کہ پاکستان کے روپے کی عالمی کرنسی مارکیٹ میں کمی کا کوئی تعلق پاکستان کی اندرونی معاشی حالت سے ہے تو اس سے بڑا جھوٹ شاید کوئی نہ ہو۔ یہ صرف پاکستان کے ساتھ ہی معاملہ نہیں ہے، دنیا پر قابض بدترین سودی مالیاتی نظام نے اس کاغذی مصنوعی کرنسی کو تخلیق ہی اس لئے کیا ہے کہ جب اور جس وقت کسی بھی ملک کی مالی حیثیت کو عالمی نظروں میں برباد کر کے اسکے لیے ایک ایسا بحران پیدا کیا جائے کہ وہ معاشی طور پر برباد ہو جائے۔ آپ حیران ہوں گے کہ ایک
مزید پڑھیے


پروپیگنڈہ نہیں پراپگاندھی

پیر 20 مئی 2019ء
اوریا مقبول جان
تخلیق پاکستان سے لے کر اب تک سیکولر، لبرل اور مذہب بیزار طبقہ قائداعظم کے مقابلے میں ایک شخص کی عظمت کے گن گاتا چلا رہا ہے۔ اس شخص کا نام موہن داس کرم چند گاندھی ہے۔ یہ طبقہ ہمیشہ قائداعظم کو دبے لفظوں میں ایک منافق ثابت کرنے کی کوشش کرتا ہے اور یہ دلیل دیتا ہے کہ انکا تمام طرز زندگی مغربی تھا مگر وہ ایک ایسے ملک کے لیے جدوجہد کررہے تھے جسکی بنیاد اسلام تھا۔ قائداعظم سے یہ دشمنی یادش بخیر نیم چڑھے کیمونسٹوں کو بھی تھی اور شاید آج بھی ہے کیونکہ وہ اپنے بالشویک
مزید پڑھیے




کیا وقت آن پہنچا ہے

بدھ 15 مئی 2019ء
اوریا مقبول جان
آج سے ٹھیک سولہ ماہ قبل امریکی افواج کے ہیڈکوارٹر پینٹاگون میں گفتگو کرتے ہوئے امریکی وزیر دفاع نے امریکی جنگی جنون کے لیے ایک نیا راستہ متعین کیا۔سترہ سال تک امریکہ اور یورپ کے جنگی دماغوں پر صرف اور صرف دہشت گردی کے خلاف جنگ چھائی ہوئی تھی، لیکن جیمزمیٹس نے کہا کہ اب ہماری اولین ترجیح روس اور چین کی بڑھتی ہوئی طاقت کو روکنا ہے۔ گزشتہ تیس برسوں میں پوری دنیا پر تنِ تنہا حکومت کرنے والا امریکہ اور یورپ کا اتحاد اب اپنی قوت کھو رہا ہے۔ جنوب میں بسنے والے کمزور و ناتواں ملک بھی
مزید پڑھیے


شہر کیوں سائیں سائیں کرتا ہے

منگل 14 مئی 2019ء
اوریا مقبول جان
ہنستے بستے اور پررونق شہر جب اجڑے ہوئے دیار محسوس ہونے لگیں تو سمجھو کہ بستی کے مکینوں پر ایسا بہت کچھ بیت چکا ہے کہ وہ اب بہار میں خزاں کی اداسی اوڑھ لیتے ہیں اور سرسبز و شاداب شہر بھی انہیں ریت کے بگولے جیسے نظر آتے ہیں۔ ایسی ادا، دکھ اور کرب یوں تو پوری بستی کا المیہ ہوتا ہے لیکن شاعر اس کرب کی زبان بنتا ہے کہ بقولِ اقبال وہ دیدہ بینائے قوم ہوتا ہے۔ ایسے ہی کربناک ماحول کو ناصر کاظمی نے خوب پیش کیا ہے دل تو میرا اداس ہے ناصر شہر
مزید پڑھیے


عمران خان کی ریاست مدینہ، پینسلوینیا ایونیو میں داخل

پیر 13 مئی 2019ء
اوریا مقبول جان
آخر کار وہی ہونے جارہا ہے جس کا ڈر تھا، ڈر نہیں بلکہ یقین تھا۔ پاکستان کے منظر نامے پر چھائے ہوئے معیشت دان، جنہوں نے اپنی تعلیم کے آغاز سے ہی ایڈم سمتھ (Adam Smith) کے افکار کی لوریاں سنی ہوں، جان مینارڈ کینز (John Maynard keynes) کے معاشی تصورات سے علم حاصل کیا ہو اور ملٹن فریڈمین(Milton friedman) کے مالیاتی نظام کی چھتری تلے سوچنا سیکھا ہو، وہ سب کے سب پاکستان جیسے غریب، پسماندہ اور دست نگر ملک کی معیشت کو مغربی استعمار اور کارپوریٹ معاشرت کے تخلیق کردہ ورلڈ بینک اور آئی ایم
مزید پڑھیے


پاکستانی معیشت پر منڈلاتے ہوئے گدھ

بدھ 08 مئی 2019ء
اوریا مقبول جان
افریقہ کے کسی کے قحط زدہ ملک کی ایک تصویر اس قدر خوف ناک اور دل دہلا دینے والی ہے کہ کسی بھی صاحب دل شخص کی آنکھ میں آنسو لرزنے لگیں۔ تصویر میں بھوک سے نڈھال بچہ تقریباً بے ہوش پڑا ہے اور اس سے تھوڑے فاصلے پر ایک گدھ اسکی موت کا انتظار کر رہا ہے۔ جدید سودی بینکاری نظام وہ گدھ ہے جو قرضوں کے میٹھے زہر سے حکومتوں کو معاشی موت کا شکار کرتا ہے۔ ایک ایسی موت جس کے بعد آئی ایم ایف کے انجکشن سے معیشت کو اس مقصد کے لیے زندہ کیا جاتا
مزید پڑھیے


امریکہ نہیں عالمی برادری کی شکست

منگل 07 مئی 2019ء
اوریا مقبول جان
ایسے تبصرے‘ گفتگو، مضامین اور تجزیے اس وقت سننے اور دیکھنے کو ملتے ہیں جب جنگ تقریباً ختم ہو چکی ہو اور یہ فیصلہ کرنا اب مشکل نہ ہو کہ کون جیتا اور کون ہارا ہے۔ امریکہ‘ برطانیہ‘ جرمنی‘ فرانس‘ آسٹریلیا یہاں تک کہ اس ’’اینٹی طالبان اتحاد‘‘ کے کسی بھی ملک کے اخبارات و رسائل اٹھا لیں آپ کو صرف ایک ہی بحث نظر آئے گی۔’’ہماری شکست کیوں ہوئی‘‘ ابھی امریکہ کے چودہ ہزار ریگولر فوجی اور ہزاروں کرائے کے سپاہی افغان سرزمین پر موجود ہیں۔ ابھی افغان کٹھ پتلی فوج کو سیٹلائٹ ٹیکنالوجی اور امریکی ایئر فورس کی
مزید پڑھیے