BN

مجاہد بریلوی



اور اب فوج میں بھی احتساب


یقینا اسے قابل ِ ستائش اور تحسین ہی قرار دیا جائے گا کہ افواج ِ پاکستان کے ترجمان جنرل آصف غفو ر نے اسکرینوں پر لائیو سینئر اور اہم عہدوں پر فائز فوجی افسران کو عمر قید اور سزائے موت جیسی کڑی سزائیں دے کر وہ سارے منہ بند کردئیے ہیں جن کا یہ بیانیہ ہوا کرتا تھا کہ صرف سیاستدان ہی قابل گردن زدنی کیوں قرار دئیے جاتے ہیں۔موضوع حساس بھی ہے ، اور ایک طول طویل تاریخ میں بھی لے جاتا ہے۔ماضی میں بھی اعلیٰ فوجی افسرا ن کی ایک پوری تاریخ ہے جو ملازمتوں سے سبکدوش
هفته 01 جون 2019ء

اب صاحبِ انصاف ہے خود طالب ِانصاف

بدھ 29 مئی 2019ء
مجاہد بریلوی
نیشنل اکاؤنٹیبلٹی بیورو یعنی نیب کے چیئرمین جسٹس (ر)جاوید اقبال سے منسوب اسکینڈل کے شوروغل سے اسلام آباد کے مقتدر اداروں کی چھتیں اڑ گئی ہیں۔ہر چند کہ بہت کچھ آچکا ہے۔مگر اسلام آباد کے سیاسی پنڈت کہہ رہے ہیںکہ ’’ابھی بہت کچھ آنا باقی ہے‘‘۔ اس بات میں قطعی دورائے نہیں کہ ہرشخص کی اپنی ایک ذاتی زندگی ہوتی ہے۔کنوارا ہو کہ شادی شدہ۔بھلے قبر میں ہی پیر لٹکے ہوں۔لیکن سیاست بڑی سفاک ہوتی ہے۔مخالفین انتقام کی آگ میں بہت دور تک چلے جاتے ہیں۔یہ جانتے ہوئے بھی کہ یہ آگ ان کے اپنے دامن تک بھی
مزید پڑھیے


?Is Party Over

هفته 25 مئی 2019ء
مجاہد بریلوی

  پاکستانی سیاست میں یہ اصطلاح بھٹو صاحب کے دور میں آئی تھی ۔اور دلچسپ بات یہ ہے کہ اس کے موجد وہ خود تھے۔جب مارچ1977ء کی قومی اسمبلی سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے پاکستان قومی اتحاد کی تحریک کا سرپرست امریکہ بہادر کو قرار دیا تھا۔ سرکاری ٹی وی پر براہ راست خطاب کرتے ہوئے امریکی سفارت خانے کے دو افسران کی گفتگو کا حوالہ دیا ۔جس میں ایک امریکی افسر ،دوسرے افسر سے پر جوش لہجے میں کہہ رہا تھا کہ "Party is over, party is over"

بھٹو صاحب نے قومی اسمبلی میں اپنے ڈیسک پر زوردار مکہ
مزید پڑھیے


Is Party Over? (2)

بدھ 22 مئی 2019ء
مجاہد بریلوی
ٰ اِدھر کوشش کے باوجود ممکن نہیں ہوپا رہا کہ جس موضوع کو چھیڑا جائے اُسے ایک ہی کالم میں سمیٹ لیا جائے۔اب ، ہمارے وزیر اعظم عمران خان نے اپنی پہلی ٹیم یعنی وزرائے کرام،مشیران کرام اور معاونین کے بیٹنگ آرڈر میں تبدیلی کرتے ہوئے۔ ۔ ۔ جس طرح ماضی کے ہر سویلین، فوجی حکومت کے گھاٹ گھاٹ کا پانی پینے والے روایتی امیر زادوں کو اپنی ٹیم یعنی وزرائے کرام،مشیرانِ کرام لگا کر اپنی ٹیم کے کھلاڑیوں کو نکالا یا تبدیل کیا ہے۔ ۔ ۔ اُس پر تو پھر تفصیل سے ان کے کوائف دینا ضروری
مزید پڑھیے


?Is Party Over

هفته 18 مئی 2019ء
مجاہد بریلوی
مارچ 1977ء کے الیکشن میں دو تہائی اکثریت حاصل کرنے کے بعد جب قائد عوام ذوالفقار علی بھٹونے سرکاری ٹی وی پر اپنی کرسی پر زور دار ہاتھ مارتے ہوئے کہا تھا کہ ’’میری کرسی مضبوط ہے،Party is not over۔تو اس وقت اپوزیشن اتحاد پی این اے کے مستقل حامیوں سے سارے ملک کے شہر دہل رہے تھے۔پی این اے کی بھٹو مخالف تحریک میں اندرون سے زیادہ بیرون ملک خاص طور پر امریکہ بہادر نے خاص طور پر سی آئی اے کے ذریعے کھلی مارکیٹ میں کس طرح بڑے پیمانے پر ڈالروں کے ڈھیر لگادئیے۔اس پر بہت کچھ
مزید پڑھیے




میاں نواز شریف کا کلّہ۔ ۔ ۔ (2

بدھ 15 مئی 2019ء
مجاہد بریلوی
بدقسمتی سے پاکستانی سیاست 70ء کے پہلے بالغ رائے دہی کے انتخاب کو چھوڑ کر ہمیشہ شخصی یا فرد ِ واحدکی بنیاد پر تقسیم ہوتی رہی۔شخصیت پرستی کی جڑ یں بہر حال برصغیر پاک و ہند میںہی نہیں۔ ۔۔ اس پورے ریجن میں بڑی گہری رہی ہیں اور اس سے بھی زیادہ افسوسناک امر یہ ہے کہ عوام کی اکثریت نظریہ سے زیادہ ان کی اسیر بھی رہی۔حتیٰ کہ جس سیکولر بھارت کو دنیا کی سب سے بڑی جمہوریہ کہا جاتا ہے ،وہاں بھی سیاسی تقسیم کی بنیاد لیڈر شپ ر ہی اور نہرو خاندان نے 50سال بھارتی سیاست پر
مزید پڑھیے


ـ ’’میاں نواز شریف کا کلّہ بہت مضبوط ہے‘‘

هفته 11 مئی 2019ء
مجاہد بریلوی
چار دہائیاں تو ہو ہی گئیں ۔اس اعتبار سے سابق جنرل ضیاء الحق کا کہا یہ جملہ ہر اعتبار سے تاریخی ہی کہلایا جائے گا کہ ایک سادہ گریجویٹ ،چہرے سے بھولے بھالے ابھرتے ہوئے بزنس مین کے بارے میں جس وقت جنرل نے یہ پیشنگوئی کی تھی اُس وقت کوئی تصور بھی نہیں کرسکتا تھا کہ شریف خاندان کا یہ سپوت سب سے بڑے صوبے پنجاب کادوبار وزیر اعلیٰ ،تین بار وزیر اعظم کے عہدہ ٔ جلیلہ پر فائز ہوگا۔اور سونے کا چمچہ نہیںایک پوری دیگ سے عیش و آرام کی زندگی سے سیراب ہونے کے بعد جیل
مزید پڑھیے


سوری جسٹس قاضی۔ ۔ ۔

بدھ 08 مئی 2019ء
مجاہد بریلوی
’’آئین کو پامال اور معطل کرنے والے شخص کو محفوظ راستہ پاکستانی عوام کے ساتھ بڑی ناانصافی ہے۔آئین سے مسلسل ٹیمپرنگ ،بے سمت سیاسی تجربات نے نئے پرانے نظام کی ساخت کو متاثر کیا ہے۔‘‘ سپریم کورٹ کے قابل احترام جج جسٹس قاضی فائز عیسیٰ یقینا اپنے حق اور انصاف پہ مبنی فیصلوں اور اپنے ذاتی اور خاندانی پس منظر کے سبب قابل صد احترام برادر ججوں کی صف اول میں آتے ہیں۔حالیہ دنوں میں جس جرأت و بے باکی سے انہوں نے عدالتی فیصلے دئیے ہیں ،خاص طور پر کوئٹہ میں سال ِ گزشتہ خود کش
مزید پڑھیے


18ویں ترمیم۔۔۔

هفته 04 مئی 2019ء
مجاہد بریلوی
18ویں ترمیم کا ذکر کرتے ہوئے ۔ماضی کی بھول بھلیوں میں بھٹک گیا اور یہ ہونا بھی تھا کہ آئین میں کی گئی ہر ترمیم کے پیچھے وہ سیاسی عوامل تھے جو حکمراں اپنے اپنے مفادات میں اس 73ئکے متفقہ آئین میں کرتے رہے ۔جسے نہ صرف قیام پاکستان کے 23سا ل بعد تمام مکاتب فکر کی پارٹیوں نے طویل مباحث کے بعد منظور کیا تھا اور جس پر بچے کھچے پاکستان کے عوام نے سکھ کا سانس بھی لیا۔مگر بدقسمتی سے اس کا آغاز خود آئین کے خالق پارٹی کے قائد نے کیا جس کا ذکر میں
مزید پڑھیے


18ویں ترمیم (3)

جمعرات 02 مئی 2019ء
مجاہد بریلوی
بانی پیپلز پارٹی مرحوم ذوالفقار علی بھٹو کے دورِحکومت کا ذکر کرتے ہوئے جب ان کی مطلق العنان پالیسیوں کا ذکر کرتا ہوں تو افسردگی اور افسوس غالب آجاتا ہے۔ آج بھی معتبر مورخین لکھتے اورکہتے ہیں کہ بانی پاکستان قائد اعظم محمد علی جناح کے بعد ذوالفقارعلی بھٹو جیسا سحر انگیز ، محب وطن ، جرات مند لیڈر پاکستان کو نہیں ملا … پاکستان کو ایٹمی قوت بنانے کیلئے اْن کی انتھک محنت، پہلی اسلامی سربراہی کانفرنس، بھارت سے 93ہزار قیدیوں کی رہائی۔۔۔پھر پاکستان کی پہلی اسٹیل مل۔۔۔ اس سے بھی بڑھ کر مشرقی پاکستان پر بھارتی جارحیت اور
مزید پڑھیے