Common frontend top

BN

محمد عامر خاکوانی


حل کیا ہے ؟


سینئر صحافی، کالم نگار، اینکر محترم سجاد میر کے ساتھ ایک ٹی وی نشست میں شریک تھا۔ میر صاحب بہت محترم، سینئر لکھاری ہیں، ہمارے اساتذہ میں سے ، ٹی وی کے بھی اولین زمانے کے اینکر ہیں ، پی ٹی وی کے دنوں والے ۔ سلیم احمد جیسے لیجنڈ کے شاگرد رشید رہے،یوں ان کا عسکری صاحب سے بھی فکری سلسلہ بنتا ہے، آبائی شہر ساہی وال ہے تو مجید امجد سے عبقری کی آنکھیں بھی دیکھ رکھی ہیں۔ ان کی فکری تربیت ایسی ہوئی کہ چیزوں کو گہرائی میں جا کر دیکھتے اور سوچتے ہیں،اٹھائے سوال بھی سطحی
هفته 28 جنوری 2023ء مزید پڑھیے

سقوط مشرقی پاکستان سے ہم نے کیا سیکھا؟

جمعرات 26 جنوری 2023ء
محمد عامر خاکوانی
سقوط ڈھاکہ کے حوالے سے جناب الطاف حسن قریشی کی شاندار اور مفصل کتاب ’’مشرقی پاکستان ۔ٹوٹا ہوا تارا‘‘پر اگلے روز ایک مختصر نشست ہوئی، الطاف صاحب کے علاوہ جناب فرید پراچہ، پنجاب یونیورسٹی شعبہ ابلاغیات کے سابق پروفیسراور کالم نگار ڈاکٹر مجاہد منصوری، کالم نگار قاضی منشا اور دیگر احباب شریک ہوئے۔ الطاف صاحب نے کتاب کے حوالے سے کچھ گفتگو کی، اپنی غیر معمولی یاداشت کو کھنگالتے ہوئے بعض اہم واقعات سنائے اور سوالات کے جواب بھی دئیے۔ الطاف قریشی صاحب کی کتاب پڑھتے ہوئے بار بار احساس ہوتا ہے کہ مشرقی پاکستان کا سانحہ دراصل ہماری پوری
مزید پڑھیے


’’مشرقی پاکستان : ٹوٹا ہوا تارا‘‘۔ ایک غیر معمولی کتاب

منگل 24 جنوری 2023ء
محمد عامر خاکوانی
جناب الطاف حسن قریشی سے میرا تعلق شاگردوں والاہے۔ میرے صحافتی کیرئر کا آغاز ستائیس برس قبل اردو ڈائجسٹ لاہور سے ہوا۔ الطاف صاحب اردو ڈائجسٹ کے لیجنڈری ایڈیٹر ہیں، صحافیوں کی دو نسلوں کی انہوں نے تربیت کی۔ ساٹھ، ستر، اسی اور نوے کے عشروں میں کتنے ہی اخبارنویس ہیں جو اردو ڈائجسٹ اور ہفت روزہ زندگی میں کام کرتے رہے ۔ تین ساڑھے تین تک میں نے اردو ڈائجسٹ میں کام کیا، حق یہ ہے کہ وہ دن آج میرے ناسٹلجیا کا بہترین حصہ ہیں۔ تب مجھے دلچسپی اور اشتیاق تھا کہ جلد سے جلد کسی روزنامے کا حصہ
مزید پڑھیے


سیدھی الٹی سیاسی چالیں

هفته 21 جنوری 2023ء
محمد عامر خاکوانی
آج کل عجیب سی صورتحال ہوچکی ہے۔ صبح اخبار پڑھیں تو اکثر خبریں پڑھ کر شدید کوفت ہوتی ہے، رات کو نیوز چینل لگا کر خبریں سنیں تو وہی حال۔طبیعت مکدر ہوگئی۔ وجہ اس کی یہ ہے کہ ہر طر ف سے سیاسی چالیں چلی جا رہی ہیں، الٹی سیدھی، جائز ناجائز چالیں۔ ہر فریق چاہتا ہے کہ دوسرے کو ناک آئوٹ کر دے۔ افسوس تو یہ ہے کہ ایسا کرتے ہوئے ہر قسم کی اخلاقیات کے پرخچے اڑا دئیے گئے۔ منہ بھر بھر کر جھوٹ اگلا جا رہا ہے۔ دیکھنے والے کو کراہیت آ جائے، مگر بولنے والے نہایت
مزید پڑھیے


پاکستان کرکٹ بورڈ کو تین مشورے

هفته 14 جنوری 2023ء
محمد عامر خاکوانی
پاکستانی کرکٹ کی ذمہ داری آ ج کل نجم سیٹھی کے ہاتھ میں ہے۔ سیٹھی صاحب معروف صحافی ، اینکر اور لکھاری ہیں۔ انہیں کرکٹ بورڈ کا کرتا دھرتا بنایا گیا،وہ پہلے بھی یہ ذمہ داری نبھا چکے ہیں۔ پی ایس ایل شروع اور کامیاب کرنے کا سہرا نجم سیٹھی کے سر جاتا ہے۔ انہیں وزیراعظم شہباز شریف کا اعتماد بھی حاصل ہے ، اسی وجہ سے وہ بڑے فیصلے کرنے کی پوزیشن میں ہیں اور ایسا کرتے ہوئے اگر دھچکا لگے تو ان کی سیٹ کو خطرہ لاحق نہیں ہوگا۔ یہ پلس پوائنٹ ہے اور ساتھ ہی نہایت
مزید پڑھیے



نئے سال کو کیسے مفید بنائیں ؟

بدھ 11 جنوری 2023ء
محمد عامر خاکوانی
میرے خیال میں ہر سال کی ابتدا میں نیوائیر ریزولیوشن ضرور بنانا چاہیے۔ سال میں جو کرنے والے کام ہیں، ان کے حوالے سے عہد کیا جائے اور اپنی طرف سے عمل درآمد کی ہر ممکن کوشش کی جائے۔ اپنے گزشتہ کالم میں ذکر کیا کہ نئے سال میں دیکھیں کہ زندگی کے اہم ترین چار پانچ شعبوں میں کیا بہتر ہوسکتا ہے؟ کیرئر ، صحت اور ریلیشن شپ یعنی تعلقات(بیوی بچوں، خاندان)پر بات ہوچکی۔ آج دو مزید اہم شعبوں پر بات کرتے ہیں۔ ان میں سے ایک دوست یا سماجی تعلقات ہیںجبکہ دوسرا اپنی اصل یعنی اخروی زندگی کے
مزید پڑھیے


نیا سال :کیا کرنے کی ضرورت ؟

جمعه 06 جنوری 2023ء
محمد عامر خاکوانی
آج چھ جنوری ہے، نئے سال کا چھٹا دن۔ پچھلا سال گزر گیا، نئی امیدیں لئے نیا سال آ گیا ہے۔اگلے روز ایک دلچسپ میم سوشل میڈیا پر دیکھا کہ کسی اجنبی سیارے کی مخلوق (ایلینز)آپس میں باتیں کر رہے ہیں، ایک نے ٹیلی سکوپ سے دنیا میں جشن مناتے لوگوں اور آتش بازی کو دیکھا اور دوسرے سے پوچھا کہ یہ لوگ اتنے ایکسائٹیڈکیوں ہیں؟، کیا اس لئے کہ ان کے سیارے نے اپنا ایک چکر پورا کرلیا ہے، اس میں اتنا خوش ہونے والی کیا بات ہے ؟ دوسرا طنزاً کہتا ہے، میں تو پہلے کہتا تھا کہ
مزید پڑھیے


2022: فکشن جس نے متاثر کیا

هفته 31 دسمبر 2022ء
محمد عامر خاکوانی
رواں سال کا آج آخری دن ہے ۔ سال کے ابتدا میں عہد کیا تھا کہ اس سال سوشل میڈیا سے تھوڑا وقت کم کر کے کتابوں کو دینا ہے اور ہر ہفتے ایک کتاب یامہینے میں کم از کم دو کتابیں ضرور پڑھنی ہیں۔ پہلے چھ ماہ میں زیادہ عمل نہیں ہوا،آخری تین چار ماہ میں البتہ کسر نکالنے کی کوشش کی اور زیادہ برا سکور نہیں رہا۔ فکشن میں چند اچھی کتابیں پڑھنے کو ملیں، اس لئے پہلے ان کا تذکرہ ۔ سال کے آخر میں مشہور اطالوی فکشن نگار ماریو پوزو کے شہرہ آفاق ناول ’’گاڈ فادر‘‘کا
مزید پڑھیے


2022 : کیسے گزرا۔زندگی،سفر، مطالعہ

جمعه 30 دسمبر 2022ء
محمد عامر خاکوانی
یہ سال کچھ ایسی تیز رفتاری کے ساتھ گزرا کہ حیرت ہے۔ ابھی چند دن پہلے ہی جنوری دو ہزار بائیس تھا اوریہ کالم پڑھتے وقت سال کا صرف ایک دن باقی ہوگا۔اتوار کو ان شااللہ ہم سب نئے سال کا سورج دیکھیں گے۔ رواں سال ایک طرح سے پوسٹ کورونا تھا۔ موزی مرض کی تباہ کاری کے بعد کا سال۔ ویکسینیشن شدہ عوام کا خوف اور دہشت کی فضا سے باہر آکر چین اور سکھ کے ساتھ پہلے جیسی زندگی بسر کرنے کی کوشش۔ ذاتی تجربہ تو یہ ہے کہ جنہیں کورونا کا مرض لاحق ہوا،ان کی زندگیاں پہلے
مزید پڑھیے


کرکٹ : بھونڈے پن کی انتہا ہوگئی

بدھ 28 دسمبر 2022ء
محمد عامر خاکوانی
پاکستانی کرکٹ ایک بار پھر زوردار دھچکے سے دوچار ہوئی ہے۔ اس بار معاملہ کرکٹ ٹیم اور کھلاڑیوں سے زیادہ مینجمنٹ سے متعلق ہے، اگرچہ کھلاڑیوں پر بھی کہیں نہ کہیں کچھ اثر پڑے گا ضرور۔چار پانچ روز قبل پاکستان کرکٹ بورڈ کا چیئرمین تبدیل ہو گیا اور ساتھ ہی پوری مینجمنٹ کے تبدیل ہونے کی ہوا چل پڑی ہے ۔اس کی پہلی قسط کے طور پر چیف سلیکٹر کو نہایت ہی غیر ذمہ دارانہ اور افسوسناک انداز میں برطرف کر دیا گیا۔ ہمارے ہاں اکثر کام نہایت بھونڈے اور بے تکے طریقے سے کئے جاتے ہیں، افسوس کہ اس بار
مزید پڑھیے








اہم خبریں