BN

عبداللہ طارق سہیل



لیلیٰ اور کدّو


وزیر اعظم کا خطاب نیم شبی رات کے اندھیرے میں ایک نئی تاریخ رقم کر گیا۔ ایک تاریخ 25جولائی کو بھی رقم ہوئی تھی۔ لیکن وہ نیم شب کا مرحلہ آنے سے پہلے پہلے ہی رقم ہو گئی تھی اور اسے خاں صاحب نے رقم نہیں کیا تھا۔ خیر یہ خطاب بشبی ایسا تاریخی تھا کہ مخالفوں نے تو خیر کرنا ہی تھا۔ ان کے اپنے چاہنے والے بھی عش عش کر اٹھے۔ کہا جاتا ہے کہ وزیر اعظم نے یہ نادر روزگار خطاب محض گیارہ عدد اطلاعات مشیروں کی مدد سے کیا۔ عبقریت کی حد ہو گئی۔ خطاب نے لوگوں
جمعه 14 جون 2019ء

بکرا فرینڈلی چھرا

جمعرات 13 جون 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
حکومتی وزیروں کا یہ دعویٰ تو بالکل درست نکلا کہ بجٹ’’غریب فرینڈلی‘‘ ہو گا قصائی سے بکرے نے پوچھا یہ تمہارے ہاتھ میں کیا ہے ؟ اس نے کہا ’’بکرا فرینڈلی چھری‘‘ ہے۔ بکرا خوشی خوشی اس فرینڈلی چھری سے ذبح ہونے کو تیار ہو گیا۔ یہ سچ بات ہے کہ لیکن المیہ یہ ہے کہ سچ کا اعتراف کرنے والے زیادہ نہیں ہیں۔ ایک نامعقول پڑوسی نے کہا لوگو دیکھو ہتھوڑا گروپ کی حکومت آ گئی۔ کوئی پوچھے کیا ہتھوڑا گروپ ’’فرینڈلی ‘‘ نہیں ہو سکتا۔ ضیاء الحق کے دورمیں یہ ’’غریب فرینڈلی‘‘ گروپ سرگرم ہوا تھا۔ فٹ پاتھوں
مزید پڑھیے


غداروں کا گھیرا تنگ

بدھ 12 جون 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
لگتا ہے غدار آخری محاصرے میں آ چکے اور اب ان کے بچنے یا بھاگ نکلنے کے راستے بند ہو چکے۔ بلوچ رہنما اختر مینگل کی ’’ریسرچ‘‘ کے مطابق، جس کا حوالہ گزشتہ روز جناب عارف نظامی نے بھی اپنے کالم میں دیا۔ ملک کی 80فیصد آبادی غدار ہے۔ بیس فیصد بقایا میں محب وطن بھی ہیں اور گرے لسٹ والے بھی۔ حیرت ہے، ملک کی اتنی زیادہ آبادی، کم و بیش تمام کی تمام غدار ہے اور پھر بھی کسی طرف سے ملک کا نام بدلنے کی تجویز سامنے نہیں آ رہی۔خیر، یہ تو جملہ معترضہ زبردستی بیچ میں
مزید پڑھیے


تحریک چلنے دو!

منگل 11 جون 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
بجٹ کے بعد اپوزیشن کسی تحریک کا اعلان کرتی ہے یا نہیں‘ ابھی یہ معاملہ واضح نہیں ہے لیکن نیب نے اپنی ذمہ داری ادا کرنے کے لئے تیاری پکڑ لی ہے۔ اخباری اطلاعات کے مطابق نیب نے اپوزیشن کے خلاف پری امپٹو’’pre emtive‘‘حملے کے خدو خال بنا لئے ہیں۔ اپوزیشن کے 80ارکان پارلیمنٹ کو بدعنوانی کے حوالہ سے نوٹس بھجوانے کا فیصلہ ہو گیا ہے۔ خبر کے مطابق دیگر ادارے بھی حرکت میں آئیں گے اور ماضی میں ان ارکان پر درج دیگر اقسام کی شکایات پر بھی ایکشن ہو گا۔ ٭٭٭٭٭ حکومت اپنا حق استعمال کرنے میں برحق ہے لیکن
مزید پڑھیے


عید کے سنگ ہائے میل

پیر 10 جون 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
پانچ دن پہلے جو عید آئی وہ ایک نہیں چار چار سنگ میل گاڑتی گزر گئی اور یوں خود بھی ایک سنگ میل بن گئی پہلا سنگ میل یوں کہ اس بار‘ ملکی تاریخ میں پہلی بار عید کی خریداری میں 20ارب روپے کی کمی ہوئی۔ اب تک کی روایت تو یہی تھی کہ ہر آنے والی عید پر پچھلی عید سے زیادہ خریداری ہوتی تھی لیکن روایت شکن اور روایت ساز حکومت نے یہ نقش کہن بھی مٹا دیا اور نئی روایت بنائی۔ طویل عرصے کے بعد اس بار یہ بھی پہلی مرتبہ ہوا کہ والدین کی اچھی خاصی
مزید پڑھیے




ہمارے زمانے کی عید

بدھ 05 جون 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
خدا سب کو آج کی عید مبارک کرے، سب کے لیے آسانیاں پیدا کرے۔ آج کی عید ہمارے زمانے کی عید سے کتنی مختلف ہو گئی اور زمانہ کیسے بدل گیا، یہ سوچ کر حیرت بھی ہوتی ہے اور حسرت بھی۔ پہلے یہ بتا دینا مناسب ہے کہ ’’ہمارے زمانے‘‘ سے کیا مراد ہے۔ ہر نسل کا ’’ہمارا زمانہ‘‘ الگ ہوتا ہے۔ بالعموم بچپن،لڑکپن اور جوانی کا عہد ’’ہمارا زمانہ‘‘ بناتا ہے۔ ادھیڑ عمری میں آدمی اپنے ’’ہمارے زمانے‘‘سے نکل کر صیغہ ماضی کا سفر شروع کرتا ہے اور آہستہ آہستہ پورے کا پورا ماضی میں چلا جاتا ہے اور
مزید پڑھیے


ابوالبرکات وزیر

منگل 04 جون 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
خاں صاحب نے اسلامک کانفرنس میں خطاب کے دوران سامعین کو ایک سے زیادہ بار مبہوت کر کے اپنی خطابت اور عالمی امور پر اپنی دسترس کی دھاک بٹھا دی۔ فرمایا‘ گولان کی پہاڑیاں واپس فلسطین کو دی جائیں۔ ان کے اس مطالبے پر خاص طور سے شام‘ فلسطین اور اسرائیل مبہوت رہ گئے ہوں گے اور فلسطین کی مبہوتیت کا تو کوئی ٹھکانہ ہی نہیں رہا ہو گا۔ غنیمت ہے کہ وہ عرب امور پر چند فقرے کہہ کر آگے بڑھ گئے ورنہ وہ یہ مطالبہ بھی کر سکتے تھے کہ ترکی مقبوضہ بیت المقدس کو خالی کر کے
مزید پڑھیے


مثالی کفایت شعاری

پیر 03 جون 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
چیئرمین نیب کی آڈیو ویڈیو کلپس نشر ہونے کے بعد یوں لگا تھا کہ بہت طوفان مچے گا لیکن دو چار دن کی پریس کانفرنسوں‘ بیانات اور تجزیہ کاریوں کے بعد خاموشی چھا گئی ہے یہاں تک کہ خود انہیں بھی خاموشی نے اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے۔ کہاں وہ دن کہ ہر آئے دن پریس کانفرنس کرتے تھے‘ اپوزیشن کو للکارتے تھے اور نہیں چھوڑوں گا کا طرح مصرع اپنے سروں میں الاپتے تھے اور کہاں یہ دن کہ اتنے دن ہو گئے۔ عوام کو ان کے غزل سرا ہونے کا انتظار ہے۔ ہر کوئی کہتا ہے کہ
مزید پڑھیے


دعائے خلیل ؑ

جمعه 31 مئی 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
وداعِ رمضان ہے۔ گنتی کے چار پانچ روزے رہ گئے۔ دنیا بھر کی مسجدیں پہلے سے زیادہ پرہجوم ہیں اور سب سے زیادہ رونق حرمین میں ہے۔ کیا مسجد حرام اور کیا مسجد نبوی‘ اللہ کے خوش قسمت بندوں سے بھری ہوئی ہیں۔ کل ایک ویڈیو مسجد حرام کی دیکھی لیکن خیال مسجد سے باہر کی سرزمین کی طرف چلا گیا کہ کعبتہ اللہ کے قیام کے لئے اس سرزمین کا انتخاب بجائے خود ایک معجزہ نمائی ہے۔ آج بھی مکہ مکرمہ سے باہر کا سارا علاقہ‘ دور دور تک بنجر اور خشک ہے‘ ماضی میں تو اس کے ویران
مزید پڑھیے


ایسی ستھرائی…!

جمعرات 30 مئی 2019ء
عبداللہ طارق سہیل
چند روز پہلے جیل میں نواز شریف سے حضرت ناصح کے جس خصوصی نمائندے کی بات ہوئی تھی‘ اس نے خصوصیت کے ساتھ جو مشورے دیے تھے ان میں سے یہ ایک’’بالخصوص‘‘ مشورہ تھا کہ کٹھ پتلی صاحب پر تنقید نہ کی جائے اور کی جائے تو ’’ھولا ہتھ ‘‘ رکھا جائے لیکن مریم نواز نے یوم تکبیر پر جو خطاب کیا‘ اس سے لگتا ہے کہ حضرت ناصح کے پند نامے کو چنداں وقعت نہیں دی گئی۔ مریم نے نہ صرف کٹھ پتلی صاحب کو آڑے ہاتھوں لیا بلکہ انہیں ’’تم‘‘ کہہ کر بھی مخاطب کیا۔ دیکھیے اب ’’پردہ
مزید پڑھیے