٩٢ کے نام


غریب تعلیم سے محروم کیوں؟

پیر 20 جولائی 2020ء
مکرمی! تعلیم ہر بچے کا بنیادی حق ہے۔لیکن بدقسمتی سے پاکستان میں آج بھی بچوں کی ایک بڑی تعدادصرف اس لئے اسکول نہیں جاپاتی کہ اُنہیں سارا دن محنت مزدوری کرکے اپنا اور اپنے ماں باپ کا پیٹ پالنا پڑتا ہے۔اور اِن بچوں میں ایک بڑی تعداد اُن کی ہے جو اسکول توجانا چاہتے ہیں لیکن ان کے معاشی حالات اِس قدر اُلجھے ہوئے ہیں کہ ان کے پاس محنت مزدوری کے علاوہ کوئی دوسرا راستہ بچتا ہی نہیں۔چونکہ پاکستان اس وقت شدید معاشی بحران کا شکار جس کی وجہ سے مہنگائی کی شرہ تاریخ کی بلند ترین سطح
مزید پڑھیے


جرائم

پیر 20 جولائی 2020ء
مکرمی!دنیا میں جرائم کی بڑی وجہ جہالت، معاشرتی و اقتصادی پسماندگی ہے۔ جب سر پر بھوک منڈلائے اور بنیادی ضروریات پورا کرنے کے لیے معقول وسائل نہ ہوں تو خوشحال زندگی کسی دیوانے کا خواب معلوم ہوتی ہے۔ پاکستان کے کئی مسائل میں سے ایک بڑا مسئلہ غربت ہے جس سے دیگر کئی مسائل جنم لیتے ہیں۔ غربت انسانی زندگی سے خوشیاں اور سکون کسی دیمک کی طرح چاٹ جاتی ہے۔ غربت زدہ معاشرے کا سب سے مظلوم طبقہ بچے ہیں جو زندگی کی بنیادی ضروریات اور والدین کی عدم توجہ کے باعث شخصیت سازی سے محروم رہ
مزید پڑھیے


کہاں گئی گندم اور آٹا

پیر 20 جولائی 2020ء
مکرمی! ڈھونڈو گے ملکوں ملکوں ملنے کو نہیں ہیں ہم نایاب یہ محاورہ عموما کسی قدر آور شخصیت کے بارے میںلکھا پکارا جاتا ہے آج میرے زرعی ملک میں آٹے کے حصول کے لیے عوام کے منہ سے یہی الفاظ نکل رہے ہیں کیو نکہ آٹا اچانک غائب ہو گیا ہے حالانکہ میرے ملک میں 60 لاکھ میٹرک ٹن گندم کی پیداوار ہوئی ہے اب تو وفاقی فوڈ سیکورٹی کے وزیر فخر امام صاحب نے قومی اسمبلی میں برملا اظہار کر دیا ہے کہاں گئی 60 لاکھ میٹرک ٹن گندم محکمہ خوراک حکومت پنجاب کی جانب سے انتباہ کا اشتہار
مزید پڑھیے


اورنگ زیب عالمگیر: حالات و کردار

پیر 20 جولائی 2020ء
تاریخ برصغیر اور تاریخ عہد مغلیہ کابالخصوص مطالعہ کرنے سے معلوم ہوتا ہے کہ سلطنتِ مغلیہ جہاں اندرونی شورشوں اور بغاوتوں کا شکار تھی، وہیں اسلامی اقدار سے ناواقف بادشاہوں کے ہاتھو ں زوال پذیر ہوتی رہی جس میں جلال الدین اکبرایک بڑی مثال ہے جس کے خود ساختہ نئے دین ’ دین اکبری‘ نے اسلامی شناخت کو مٹانے کی کوئی کسر نہ چھوڑی تھی۔ اس کے برعکس نظامِ اسلامی کے نفاذ کے لئے جدوجہد کرنے والے مجد د، علما، صوفیاء اور امراء و سلاطین کی صف میں ایک نمایاں نام ابوالمظفر، محی الدین،غازی اورنگ زیب عالمگیر کا ہے جو
مزید پڑھیے


پرائیویٹ سکولز کو تباہی سے بچائیں

اتوار 19 جولائی 2020ء
مکرمی! اعلیٰ حکام کی توجہ مشکلات و بحرانوں کا شکار پرائیویٹ تعلیمی اداروں کی طرف دلانا چاہتا ہوں جہاں زیادہ تر غریب لوگوں کے بچے تعلیم حاصل کرتے ہیں۔ کم فیس کے ساتھ بھی یہ ادارے بورڈ کے امتحان میں 80 تا 100 فیصد رزلٹ دیتے ہیں۔ میں ایک ہائی سکول چلا رہا ہوں۔ طلبہ کی کل فیس 3,60,000 روپے ہے۔ 30 افراد پر مشتمل سٹاف کی تنخواہ 3 لاکھ ہے۔ یوٹیلٹی بل کرایہ بلڈنگ اس کے علاوہ ہیں لیکن اپریل تا جولائی کرونا وائرس کے باعث سکول بند ہونے کی وجہ سے فیس وصولی کی شرح ایک فیصد سے
مزید پڑھیے



عوام دوست پولیس ہی جرائم پر قابو پاسکتی ہے!

اتوار 19 جولائی 2020ء
مکرمی !کسی بھی مہذب معاشرے میں پولیس کا کردار بہت اہم اور بہت قابل احترام ہوتا ہے کیونکہ پولیس معاشرے میں جرائم کی روک تھام اور امن قائم کرنے کا عہد اٹھاتی ہے لیکن اسکے بر عکس کراچی جو دنیا کے بڑے شہروں میں شمار ہوتا ہے جو ہمارے ملک کو ستر فیصد ریونیو فراہم کرتا ہے لیکن اس شہر کی بدقسمتی سے پولیس جو اپنا کا م صحیح طریقے سے انجام دینے سے قاصر ہے۔ ہمارے یہاں پولیس محکمے کا کردار اور رویہ ناقابل ستائش ہے ۔ہمارا پولیس کا قانون ایکٹ 1934پر اگر د س فیصد بھی عمل
مزید پڑھیے


غریبوں کی حالت زار پر توجہ کی ضرورت

اتوار 19 جولائی 2020ء
مکرمی! وطن عزیز کی قسمت کے مالک اکثر اس کارنامے پر خوش ہیں کہ ہم نے لاک ڈائون اور کرفیو نہ لگا کر معیشت کو بچا لیا ہے۔ اگر زندگی نہ رہی یا گھر کے 10 آدمیوں سے 5 خدا کو پیارے ہو گئے تو 5 کا راشن بچ گیا کوئی دو چار لاکھ بزرگ شہری مجھ جیسے مر گئے تو معیشت بہتر ہو جائیگی ۔خدا را انسانی زندگی کی کوئی قیمت نہ ہے لیکن ایسا معلوم ہو رہا ہے کہ زیادہ تر غریب مزدور بھی اس بیماری کا شکار ہو رہے ہیں وہ لوگ کیسے گھر بیٹھیں جس کے
مزید پڑھیے


غیر محفوظ سٹریٹ لائٹس

اتوار 19 جولائی 2020ء
مکرمی !شہر کراچی میں جہاں بہت سی چیزوں میں بدانتظامی نظر آتی ہے، وہیں بجلی کے پول پر خطرناک طریقے سے لگائی جانے والی ا سٹریٹ لائٹس اور ان کے سو ئچز ہیں، جو اکثر اوقات کرنٹ کی صورت میں قیمتی انسانی جانوں کے زیاں کا سبب بنتے ہیں۔ بجلی کے پول پر غیر محفوظ طریقے سے نصب کیئے گئے یہ سوئچزبارشوں میں کرنٹ پھیلانے کی وجہ بھی بنتے ہیں۔ بجلی فراہم کرنے والے ادارے کو اکثر ان غیر قانونی سوئچز کا خاتمہ کرتے دیکھا گیا ہے، مگر اب بھی بڑی تعداد میں ان کی موجودگی کسی خطرے سے
مزید پڑھیے


چلڈرن پارکس کی تباہ حالی

اتوار 19 جولائی 2020ء
مکرمی! ٹائون شپ یوسی 232 کے مکینوں نے ڈائریکٹر جنرل پی ایچ اے سے پرزور اپیل کی ہے کہ انکے علاقہ میں چلڈرن پارکوں کی تباہ حالی کا نوٹس لیا جائے، پارکوں میں سہولیات فراہم کی جائیں اور انہیں سرسبز شاداب بنایا جائے۔ 232 یوسی ٹائون شپ میں اس وقت 24 چلڈرن پارکس اور 2 گرین بلٹس ہیں ان کی دیکھ بھال کیلئے صرف 4 مالی ہیں جو کہ اتنے بڑے علاقہ کیلئے ناکافی ہیں۔ روڈز پر قائم گرین بیلٹس اور پارکوں کی بحالی جاری ہے لیکن اندرونی پارکوں کی تباہ حالی پر کوئی توجہ نہیں دی جار رہی
مزید پڑھیے


تعمیراتی پیکج برائے رئیل اسٹیٹ

اتوار 19 جولائی 2020ء
مکرمی !کورونا وائرس نے قومی اور عالمی معیشت کو بے تحاشہ نقصان پہنچایا ہے۔ لاک ڈاؤن کے درمیان لاکھوں افراد اپنا روزگار کھو چکے ہیں۔ تاہم، تعمیرا تی انڈسٹری ایک ایسی صنعت ہے جو وبائی مرض کے بعد بھی مزیدمضبوط اور مستحکم ہوسکتی ہے۔ اپریل میں، وفاقی حکومت نے ایک تعمیراتی پیکیج کا اعلان کیا جس کا مقصد سرمایہ کاروں کا اعتماد بڑھانا اور معیشت کو ترقی دینا ہے۔ وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ جو لوگ تعمیراتی شعبے میں سرمایہ کاری کرتے ہیں ان سے ان کی آمدنی کے ذرائع کے بارے میں سوالات نہیں پوچھے جائیں
مزید پڑھیے